உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Hubbali Eidgah Maidan Case: ہبلی عیدگاہ گراونڈ پر ہی ہوگا گنیش اتسو، کرناٹک ہائی کورٹ نے مخالفت کرنے والی عرضی کو کیا خارج

    کرناٹک ہائی کورٹ نے سنایا فیصلہ، عیدگاہ گراونڈ پر ہی ہوگا گنیش اتسو

    کرناٹک ہائی کورٹ نے سنایا فیصلہ، عیدگاہ گراونڈ پر ہی ہوگا گنیش اتسو

    Karnataka Hubballi Eidgah: کرناٹک ہائی کورٹ نے اپنے فیصلے کو برقرار رکھتے ہوئے عید گاہ میدان میں پوجا کی اجازت دینے کے حکم کو چیلنج دینے والی عرضی کو خارج کردیا ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Karnataka, India
    • Share this:
      بنگلورو: کرناٹک ہائی کورٹ میں ہبلی دھاڑواڑ کے عید گاہ میدان سے متعلق منگل کے روز دیر شب سماعت ہوئی۔ اس سے پہلے آج دوپہر کی پوجا کے لئے دی گئی منظوری کو صحیح مانا تھا اور انجمن اسلام کے ذریعہ دائر عرضی کو خارج کر دیا تھا۔ اس پر سپریم کورٹ میں بنگلورو کے عیدگاہ میدان پر دیئے گئے فیصلے کے بعد ہبلی کی انجمن اسلام تنظیم نے ایک بار پھر ہائی کورٹ کا دروازہ کھٹکھٹایا۔ سماعت جسٹس اشوک ایس کناگی کے چیمبر میں ہوئی۔

      karnataka-high-court-refuses-to-stay-ganesh-chaturthi-celebrations-at-idgah-ground-at-hubbali-ns

      سماعت کے دوران ریاست کی طرف سے اے جی دھیان چنپا نے کہا، بنگلورو کے معاملے میں جو چیلنج دیا تھا وہ حکومت کا حکم تھا۔ وہاں تنازعہ اس لئے تھا کیونکہ وقف بورڈ وہاں اپنے دعوے کو درست ثابت نہیں کرپایا۔ اس معاملے میں ویسا کوئی تنازعہ نہیں ہے۔ اس معاملے میں جو تنازعہ تھا وہ کافی لمبے وقت پہلے دائر کیا گیا تھا۔

      یہ بھی پڑھیں۔

      Bangalore Eidgah Maidan Case: بنگلورو میں عیدگاہ میدان میں نہیں ہوگا گنیش اتسو 

      یہ بھی پڑھیں۔

      Karnataka Eidgah Maidan Case: عید گاہ میدان میں گنیش پوجا کے اعلان سے تنازعہ، 1600 پولیس اہلکار موجود

      اے جی دھیان چنپا نے کہا کہ یہاں مالکانہ حق اور قبضے سے متعلق کوئی تنازعہ نہیں ہے۔ یہاں رمضان المبارک کے بعد عید (عیدالفطر) اور عیدالاضحیٰ صرف دو دن نماز پڑھنے کا اختیار ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ پہلی اپیل کے سوال کا عدالت نے یہ کہتے ہوئے جواب دیا ہے کہ کیا یہ زمین وقف بورڈ کی ہے؟ عدالت نے دائر عرضی کو خارج کردیا ہے۔ یہاں میونسپل کارپوریشن کے ذریعہ دیئے گئے حکم کو بھی پڑھا جانا چاہئے۔ اجازت دی جاتی ہے، لیکن صرف تین دنوں کے لئے۔ کرناٹک ہائی کورٹ نے ہبلی دھارواڑ کے عید گاہ میدان میں گنیش چترتھی رسوم کی اجازت کو چیلنج دینے والی عرضی کو خارج کردیا ہے۔

      ریاستی حکومت نے دی تھی پوجا کی اجازت

      اس معاملے سے متعلق سب سے پہلے کرناٹک ہائی کورٹ کی سنگل بینچ نے پہلے میدان میں جوں کی توں صورتحال برقرار رکھنے کا حکم دیا تھا، لیکن ڈویژن بینچ نے حکومت کو پوجا کی اجازت مانگ رہے لوگوں کی درخواست پر غور کرنے کو کہا تھا۔ اس کے بعد ریاستی حکومت نے 31 اگست سے یکم ستمبر تک پوجا کرنے کی اجازت دے دی تھی۔ ہائی کورٹ میں سماعت کے دوران کرناٹک وقف بورڈ نے جگہ کو اپنی جائیداد بتاتے ہوئے کہا تھا کہ وہاں سالوں سے عید کی نماز ہو رہی ہے۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: