உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Hijab Row: سپریم کورٹ میں حجاب پابندی معاملہ میں پیر کو ہوگی سماعت، جانئے کیا ہے پورا معاملہ

    سپریم کورٹ (Supreme Court)

    سپریم کورٹ (Supreme Court)

    Hijab Row: حجاب پر پابندی کو برقرار رکھنے والے کرناٹک ہائی کورٹ کے پندرہ مارچ کے فیصلے کو چیلنج دینے والی عرضیوں کو پچھلے سی جے آئی این وی رمنا کی مدت کار کے دوران لسٹیڈ نہیں کیا گیا تھا، حالانکہ مختلف وکیلوں کے ذریعہ عرضیوں کی فوری پوسٹنگ کا مطالبہ کیا گیا تھا ۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Delhi | New Delhi | New Delhi | Karnataka
    • Share this:
      نئی دہلی : سپریم کورٹ میں کرناٹک میں تعلیمی اداروں میں حجاب پہننے پر پابندی کو چیلنج کرنے والی عرضی کو پیر کو لسٹیڈ کیا گیا ہے ۔ حجاب پر پابندی کو برقرار رکھنے والے کرناٹک ہائی کورٹ کے پندرہ مارچ کے فیصلے کو چیلنج دینے والی عرضیوں کو پچھلے سی جے آئی این وی رمنا کی مدت کار کے دوران لسٹیڈ نہیں کیا گیا تھا، حالانکہ مختلف وکیلوں کے ذریعہ عرضیوں کی فوری پوسٹنگ کا مطالبہ کیا گیا تھا ۔

      جسٹس ہیمنت گپتا اور جسٹس سدھانشو دھولیا کی بینچ حجاب پابندی کو چیلنج کرنے والی 23 عرضیوں پر پیر کو سماعت کرے گی ۔ مسلم طالبات کیلئے حجاب پہننے کے حق کی مانگ کرتے ہوئے عرضیاں سپریم کورٹ میں دی کی گئی ہیں ۔

       

      یہ بھی پڑھئے : بلقیس بانو اجتماعی آبروریزی معاملے میں مجرمین کورہاکئے جانے پر وجاہت حبیب اللہ کا بڑابیان


      دو اگست کو سینئر ایڈووکیٹ میناکشی اروڑہ نے اس وقت کے سی جے آئی این وی رمنا کے سامنے معاملہ کا تذکرہ کیا تھا، جنہوں نے تب جلد ہی ایک بینچ تشکیل کرنے کی یقین دہانی کرائی تھی ۔

       

      یہ بھی پڑھئے: ٹوئن ٹاور کے آس پاس 200 سے زیادہ ملازمیں صفائی کے کاموں میں مصروف، دیکھئے PHOTOS


      13 جولائی کو ایڈووکیٹ پرشانت بھوشن نے معاملہ کو فوری لسٹیڈ کرنے کا تذکرہ کرتے ہوئے کہا تھا کہ مارچ سے عرضیوں کو لسٹ نہیں کیا گیا ہے اور طلبہ کو پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے ۔ سی جے آئی تب معاملہ کو اگلے ہفتہ لسٹ کرنے متفق ہوئے تھے ۔

      یہ عرضیاں کرناٹک ہائی کورٹ کے ذریعہ پاس پندرہ مارچ کے فیصلہ کے خلاف دائر کی گئی ہیں، جس میں سرکاری آرڈر مورخہ ۔۔۔۔ کو برقرار رکھا گیا ہے ، جس میں عرضی گزاروں اور ایسی دیگر مسلم طالبات کے اپنے پری یونیورسٹی کالجوں میں ہیڈ اسکارف پہننے پر پابندی لگا دی گئی تھی ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: