ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

کورونا وائرس: مسجدوں، مدرسوں، درگاہوں اور قبرستانوں میں احتیاطی تدابیر اختیار کی جائیں : کرناٹک ریاستی اقلیتی کمیشن

  • Share this:
کورونا وائرس: مسجدوں، مدرسوں، درگاہوں اور قبرستانوں میں احتیاطی تدابیر اختیار کی جائیں : کرناٹک ریاستی اقلیتی کمیشن
کورونا وائرس : مسجدوں، مدرسوں، درگاہوں اور قبرستانوں میں احتیاطی تدابیر اختیار کی جائیں

کورونا وائرس کی روک تھام کیلئے کرناٹک میں ایک جانب حکومت نے کئی اقدامات کئے ہیں تو دوسری طرف ریاستی اقلیتی کمیشن نے بھی بیداری مہم شروع کی ہے۔ خاص طور پر مسجدوں، دینی مدرسوں، درگاہوں اور قبرستانوں کیلئے اقلیتی کمیشن نے خصوصی اپیل جاری کی ہے۔ بنگلورو میں اقلیتی کمیشن کے سکریٹری انیس سراج کی موجودگی میں کمیشن کے چیئرمین عبدالعظیم نےمیڈیا سے خطاب کیا ۔ عبدالعظیم نے کہا کہ کئی مسجدوں میں وضو کیلئے حوض کا استعمال کیا جاتا ہے۔ لیکن موجودہ حالات کے پیش نظر حوض کا استعمال ہرگز نہ کیا جائے۔ حوض کی بجائے نلوں کے ذریعہ وضو کا انتظام کیا جائے۔ اس سلسلے میں مسجد کمیٹیاں فورا اقدامات کریں۔


اقلیتی کمیشن کے چیئرمین نے کہا کہ مسجدوں میں طہارت خانے اور بیت الخلا کی صاف صفائی پرخاص توجہ دی جائے ۔ نمازوں سے قبل پانچ مرتبہ بیت الخلا کی صفائی ہونی چاہئے۔ عبدالعظیم نے کہا کہ وضو خانوں میں تولیہ کا مشترکہ طورپر استعمال بند کیا جائے ۔ مسجدوں میں نمازوں کی ادائیگی کیلئے ٹوپیاں بھی رکھی جاتی ہیں ۔ ٹوپیوں کا بھی مشترکہ استعمال نہ کیا جائے۔ مسجد آنے والے مصلی بھی ان تمام باتوں کا خیال رکھیں۔


کرناٹک اقلیتی کمیشن نے درگاہوں سے بھی اپیل کی کہ وہ کورونا وائرس کی وبا ختم ہونے تک احتیاطی اقدامات اٹھائیں ۔عرس کے موقع پرجلوس برآمد نہ کریں ۔ جلسوں اور میلوں کا انعقاد نہ کریں۔ مختصرطورپر سادگی کے ساتھ عرس کی تقریبات انجام دیں۔قبرستانوں میں بھی پاکی صفائی کا خاص خیال رکھیں ۔ تدفین کے وقت ایک جگہ زیادہ لوگوں کو اکھٹا ہونے نہ دیں ۔ قبرستانوں میں ہجوم کو روکنے کیلئے اقدامات کریں۔اقلیتی کمیشن کے چیئرمین عبدالعظیم نے دینی مدارس سے بھی کہا ہے کہ وہ بچوں کیلئے چھٹیوں کا اعلان کردیں ۔ مدرسوں میں اگر بیرون ریاستوں کے طلبہ زیرتعلیم ہیں تو انہیں کورونا وائرس کی وبا کے کم ہونے تک سفر پر روانہ نہ کریں ۔ عبدالعظیم نے کہا کہ بنگلورو کے زیادہ ترمدارس میں بہار، مغربی بنگال، آسام اور چند دیگر ریاستوں کے طلبہ زیرتعلیم ہیں۔ ان طلبہ کیلئے اپنے اپنے گھروں کولوٹنے کیلئے دو سے تین دنوں تک کا سفر کرنا پڑتا ہے۔ موجودہ حالات میں لمبا سفر اختیار کرنے سے گریزکرنے کی ضرورت ہے۔


عبدالعظیم نے مقدس سرزمین مکہ مکرمہ اور مدینہ منورہ میں کورونا وائرس سے نمٹنے کیلئے اٹھائے گئے اقدامات کی ستائش کی ۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان میں علما ، ملی تنظیمیں مسجدوں اور مدرسوں میں احتیاطی تدابیر اختیار کرنے کیلئے پہل کریں۔ کرناٹک اقلیتی کمیشن کے چیئرمین عبدالعظیم سابق پولیس افسراور ماضی میں رکن کونسل بھی رہے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ جان لیوا کورونا وائرس سے آج پوری دنیا متاثر ہوئی ہے۔ دنیا کے 155 ممالک میں یہ مرض پایا گیا ہے ۔ اس لحاظ سے کورونا وائرس کا یہ خطرناک مرض تیسری عالمی جنگ کی طرح ہے۔
First published: Mar 17, 2020 10:38 PM IST