உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    کرتارپور گلیارے پرخوشگوار ماحول میں میٹنگ ہوئی

    میٹنگ کےبعد جاری مشترکہ بیان میں کہا گیا ہے کہ دونوں ممالک کے افسران نے خوشگوار ماحول میں ملاقات کی۔

    میٹنگ کےبعد جاری مشترکہ بیان میں کہا گیا ہے کہ دونوں ممالک کے افسران نے خوشگوار ماحول میں ملاقات کی۔

    میٹنگ کےبعد جاری مشترکہ بیان میں کہا گیا ہے کہ دونوں ممالک کے افسران نے خوشگوار ماحول میں ملاقات کی۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:
      پاکستان کے نوروال میں واقع گردوارہ کرتارپور صاحب کے درشن کرنے کے لئے جانے والے عقیدت مندوں کے لئے بنائے جارہے کرتار گلیارے پر طریقہ کار اور سمجھوتے کےمسودے پر جمعرات کو ہندوستان اور پاکستان کے افسران نے یہاں خوشگوار ماحول میں بات چیت کی۔
      میٹنگ کےبعد جاری مشترکہ بیان میں کہا گیا ہے کہ دونوں ممالک کے افسران نے خوشگوار ماحول میں ملاقات کی۔ ہندوستان کی جانب سے میٹنگ میں وفد کی قیادت وزارت داخلہ میں جوائنٹ سکریٹری ایس ایل داس نےکی جبکہ پاکستانی وفد کی قیادت وزارت خارجہ کے ڈائرکٹر جنرل ڈاکٹر محمد فیصل نے کی۔

      پلوامہ میں 14 فروری کو مرکزی ریزرو پولس فورس (سی آر پی ایف) کےقافلے پر دہشت گرد تنظیم جیش محمد کے حملے میں 40 سے زیادہ جوانوں کے شہیدہونےاور اس کےبعد ہندوستان کی جانب سے پاکستان کےبالاکوٹ میں دہشت گردانہ کیمپ پر ہوائی حملے سے دونوں ممالک کے درمیان رشتے بہت ہی تلخ ہوگئے تھے۔ اس کےبعد دونوں ممالک کے درمیان کسی معاملے پر یہ پہلی میٹنگ ہوئی ہے۔

      بیان میں کہا گیا ہے کہ مجوزہ سمجھوتے کے مختلف پہلوؤں اور التزاموں پر تفصیلی اور مثبت بات چیت ہوئی۔ دونوں فریق کرتار پور صاحب گلیارے کےکام کو تیزی سے مکمل کرنے پر راضی ہوئے۔

      دونوں جانب سے تکنیکی ماہرین نےبھی مجوزہ گلیارے اور ا س سےمنسلک دیگر مسائل پر غوروفکر کیا گیا۔ دونوں فریق اگلی میٹنگ 2 اپریل کو واگہہ میں کرنے پر راضی ہوئے ہیں۔اس سے پہلے 19 مارچ کو تکنیکی ماہرین کی میٹنگ ہوگی۔
      First published: