உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    چچا سے پیسہ وصول کرنے کے لئے چچا زاد بھائی کا اغوا، 25 لاکھ روپئے کا کیا مطالبہ

    چچا سے پیسہ وصول کرنے کے لئے چچا زاد بھائی کا اغوا، 25 لاکھ روپئے کا کیا مطالبہ

    چچا سے پیسہ وصول کرنے کے لئے چچا زاد بھائی کا اغوا، 25 لاکھ روپئے کا کیا مطالبہ

    ممبئی کے ہنجے واڑی علاقے راجہ چیتوڈیا نامی شخص نے اپنے بھائی دیگمبر چٹودیا (عمر 32 سال) کو اغوا کرلیا۔ اپنے چچا کے پاس جائیداد کے بہت سارے پیسے آتے ہوئے دیکھ کر، اپنے والد کے پرانے پیسے کی وصولی کے لئے پولیس نے ان پانچ کو گرفتار کیا، جنہوں نے دوستوں کی مدد سے اپنے چچا کے لڑکے کا اغوا کر کے 25 لاکھ روپئے تاوان کا مطالبہ کیا۔

    • Share this:
    ممبئی: اپنے چچا کے پاس جائیداد کے بہت سارے پیسے آتے ہوئے دیکھ کر، اپنے والد کے پرانے پیسے کی وصولی کے لئے پولیس نے ان پانچ کو گرفتار کیا، جنہوں نے دوستوں کی مدد سے اپنے چچا کے لڑکے کا اغوا کر کے 25 لاکھ روپئے تاوان کا مطالبہ کیا۔ یہ معاملہ پونے کے ہنجے واڑی علاقے کا ہے، جہاں راجہ چیتوڈیا نامی شخص نے اپنے بھائی دیگمبر چٹودیا (عمر 32 سال) کو اغوا کرلیا۔ لاپتہ ہونے کی خبر ملتے ہی پولیس نے تھانے میں گمشدگی کی شکایت درج کی۔ اسی دن کی شام گمشدہ نوجوان دیگمبر کے موبائل سے اس کے گھر والوں کو فون آیا، جس پر انجان شخص بات کرتے ہوئے دھمکیاں دیتا ہے کہ اگر آپ کو اپنا بھائی زندہ چاہئے تو 25 لاکھ روپئے تیار رکھو اور فون کاٹ دیا۔

    پولیس کو اس پورے معاملے کی اطلاع دی گئی، جس کے بعد پولیس نے مغوی نوجوان کی زندگی کو خطرے کے پیش نظر خبریں لیک کئے بغیر بڑی احتیاط کے ساتھ مختلف ٹیمیں تیار کیں اور شہر میں پھیلا دیا۔ دوسرے دن پھر راجہ کو اسی شخص کا فون آتا ہے اور اسے پیسے لے کر پونے ریلوے اسٹیشن آنے کو کہتا ہے، لیکن بعد میں وہ منسوخ کر دیتا ہے۔

    پولیس ٹیم نے آگے پیچھے جال بچھا دیا، پھر مختلف جگہوں پر ہائی وے پر گاڑی کو اغوا کار نے دیئے گئے پتے پر تلاش کیا۔ اسی دوران ایک ٹیم نے اس کار کو دیکھا، جس میں پانچ افراد تھے۔
    پولیس ٹیم نے آگے پیچھے جال بچھا دیا، پھر مختلف جگہوں پر ہائی وے پر گاڑی کو اغوا کار نے دیئے گئے پتے پر تلاش کیا۔ اسی دوران ایک ٹیم نے اس کار کو دیکھا، جس میں پانچ افراد تھے۔


    پولیس نے پونے اسٹیشن پر اپنا جال بچھایا تھا، لیکن اغوا کار نے بعد میں پلان بدل دیا۔ دوسرے دن ایک بار پھر اغواکار نے راجہ کو فون کیا اور کہا کہ وہ پونے ممبئی ہائی وے پر پیسوں کے ساتھ موٹر سائیکل سے اکیلے آئے۔ پولیس نے اس بارے میں معلومات دیتے ہوئے پونے سے ممبئی کے تمام تھانوں میں جال بچھا دیا اور مغوی نوجوانوں کی گاڑی کا نمبر دے کر تفتیش شروع کر دی۔ پولیس ٹیم نے آگے پیچھے جال بچھا دیا، پھر مختلف جگہوں پر ہائی وے پر گاڑی کو اغوا کار نے دیئے گئے پتے پر تلاش کیا۔ اسی دوران ایک ٹیم نے اس کار کو دیکھا، جس میں پانچ افراد تھے۔

    پولیس نے منصوبہ بندی کے ساتھ کارکو گھیرلیا۔ 5 ملزمین کو پکڑنے کے بعد انکشاف ہوا کہ اغوا کار ان کا رشتہ دار ہے۔ ملزم نے مغوی نوجوان کو ایک کمرے میں قید کر رکھا تھا، جسے پولیس نے بحفاظت رہا کرا لیا۔ پولیس نے اس واقعہ میں پانچ ملزمین کو گرفتارکیا ہے۔ تفتیش کے دوران ملزم نے بتایا ہے کہ والد کو چچا سے پرانے اکاؤنٹ کی رقم لینی تھی، اسی لئے اس نے یہ کام کیا ہے۔
    Published by:Nisar Ahmad
    First published: