ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

لال قلعہ تشدد معاملہ میں ملزم دیپ سدھو گرفتار، دہلی پولیس نے رکھا تھا ایک لاکھ کا انعام

Kisan Tractor Rally : یوم جمہوریہ کے دن کسان ٹریکٹر ریلی کے دوران لال قلعہ پر تشدد معاملہ میں ملزم دیپ سدھو کو گرفتار کرلیا گیا ہے ۔

  • Share this:
لال قلعہ تشدد معاملہ میں ملزم دیپ سدھو گرفتار، دہلی پولیس نے رکھا تھا ایک لاکھ کا انعام
لال قلعہ تشدد معاملہ میں ملزم دیپ سدھو گرفتار، دہلی پولیس نے رکھا تھا ایک لاکھ کا انعام

نئی دہلی : 26 جنوری کے دن کسان ٹریکٹر ریلی کے دوران لال قلعہ پر تشدد معاملہ میں ملزم دیپ سدھو کو گرفتار کرلیا گیا ہے ۔ دیپ سدھو پر دہلی پولیس نے ایک لاکھ روپے کا انعام رکھا ہوا تھا ۔ سدھو کو اسپیشل سیل نے گرفتار کیا ہے ۔ لال قلعہ تشدد کے معاملہ میں نام آنے کے بعد سے دہلی پولیس کرائم برانچ کی کئی ٹیمیں دیپ سدھو کی تلاش کررہی تھیں ۔


News18 India کے نامہ نگار آنند تیواری نے جانکاری دی ہے کہ اسپیشل سیل کے ڈی سی پی سنجیو یادو نے سدھو کی گرفتاری کی تصدیق کردی ہے ۔ یادو نے کہا کہ منگل کو دن میں دہلی پولیس ایک پریس کانفرنس کرکے گرفتاری کے بارے میں جانکاری دے گی ۔



بتادیں کہ تشدد کے بعد سے ہی سدھو الگ الگ مقامات سے فیس بک لائیو کررہا تھا ۔ اس نے کسان لیڈروں پر بھی سنگین الزامات عائد کئے تھے ۔ News18 India کے نامہ نگار کے مطابق اس معاملہ میں سدھو کے فیس بک لائیو میں ٹیکنیکل ہیلپ ایک خاتون دوست کرتی تھی ، جو ملک سے باہر رہتی ہے ۔ اس کا بھی انکشاف دہلی پولیس اپنی پریس کانفرنس میں کرسکتی ہے ۔ فیس بک لائیو کے دوران کسی قسم کے الیکٹرونک سرویلانس سے بچنے کیلئے سدھو بیرون ملک میں بیٹھی اپنی خاتون دوست کی مدد لیتا تھا ۔ جانچ ایجنسیاں سدھو کی خاتون دوست کے رول کی بھی جانچ کریں گی ۔

غور طلب ہے کہ مرکز کے تین نئے زرعی قوانین کو واپس لینے کے کسان تنظیموں کے مطالبہ کی حمایت میں 26 جنوری کو کسانوں نے ٹریکٹر پریڈ نکالی تھی اور اس دوران کسانوں اور پولیس کے درمیان جھڑپ بھی ہوگئی تھی ۔ اس دوران بہت سے مظاہرین ٹریکٹر چلاتے ہوئے لال قلعہ تک پہنچ گئے تھے اور انہوں نے وہاں کی فصیل پر ایک مذہبی جھنڈہ لہرا دیا تھا ۔

خیال رہے کہ دیپ سدھو نے کچھ دنوں پہلے ہی فیس بک لائیو کے ذریعہ کسان لیڈروں کو کھلی وارننگ دی تھی ۔ خود کو غدار کہے جانے سے ناراض سدھو نے کسان لیڈروں کو دھمکی دی تھی کہ اگر انہوں نے اپنا منہ کھولا اور کسان آندولن کی اندر کی باتیں بتانی شروع کیں ، تو ان لیڈروں کو بھاگنے کا راستہ بھی نہیں ملے گا ۔ دیپ سدھو نے کہا تھا کہ میری بات کو ڈائیلاگ نہ سمجھیں ، یہ بات یاد رکھنا ، میرے پاس ہر بات کی دلیل ہے ۔ ذہنیت تبدیل کرو ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Feb 09, 2021 09:19 AM IST