ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

تلنگانہ :ٹی آرایس کی مسلم دوستی پرایک مرتبہ پھراٹھے سوالات، جانیں کیاہے اصل وجہ

بی جے پی کے خطرہ کے بہانے ٹکٹوں کی تقسیم میں مسلم کارکنوں کے ساتھ وہی سلوک کیا گیا جو اسمبلی الیکشن میں کیا گیا تھا ۔

  • Share this:
تلنگانہ :ٹی آرایس کی مسلم دوستی پرایک مرتبہ پھراٹھے سوالات، جانیں کیاہے اصل وجہ
تلنگانہ کے وزیراعلیٰ کے چندرشیکھرراؤ۔فائل فوٹو-پی ٹی آئی

محمد صدام حسین کا تعلق تلنگانہ کے ضلع کومرم  بھیم آصف آباد سے ہے ۔انہوں نے کاغذ نگر میونسپل الیکشن میں  ٹی آر ایس کے ٹکٹ   پر کونسلرامیدوار کی حیثیت سے کامیابی حاصل کی اور پھر انہیں کاغذ نگر میونسپل کے چئیر مین کی حیثیت سے منتخب کیا گیا ۔صدام حسین تلنگانہ راشٹرا سمیتی کے ان دوخوش قسمت  مسلم کونسلز میں سے ایک ہیں جنھیں چیرمین کا عہدہ نصیب ہوا ۔دوسری  خوش قسمت  روبینہ بیگم ہیں جو  ضلع سنگا ریڈی کے نارائن  کھیڑ  میونسپل   کونسل کی چیئرمین بن چکی ہے۔


تلنگانہ میونسپل الیکشن میں زبردست کامیابی نے جہاں تلنگانہ راشٹرا سمیتی کی لیڈر شپ کو خوشی سے سرشار کیا ہے۔ وہیں میونسپلز اور کارپورشن کے عہدوں کی تقسیم کے بعد ٹی آر ایس کے ضلعی سطح کے مسلم لیڈرس اور کارکن مایوس ہیں ۔تلنگانہ میں منعقدہ میونسپل الیکشن میں تلنگانہ راشٹرا سمیتی نے120میونسپل کونسلز میں سے112میں اور اسطرح ریاست کے 10 میونسپل کارپوریشن میں منعقد ہوئے انتخابات میں بھی کامیابی کا پرچم لہرایاہے۔لیکن ان میں صرف 2میونسپل کونسلز کاغذ نگر اور ناراین کھیڑ میں ہی مسلمانوں کو بطور چیئرمین نامزد کروایاگیا۔


صدام حسین۔ بومنتخبہ چیئرمین،کاغذ نگر میونسپلٹی
صدام حسین۔ بومنتخبہ چیئرمین،کاغذ نگر میونسپلٹی


مسلمانوں کیلئے سماجی انصاف اور آبادی کےاعتبارسے تحفظات کی بات کرنے والی ٹی آر ایس سے یہ امید کی جا رہی تھی کہ اسمبلی اور پارلیمانی انتخابات میں جیتنے کی صلاحیت کے بہانے مسلم امیدواروں کو ٹکٹ نہ دینے کی کمی ۔مجا لس مقامی کے انتخابات میں پوری کرے گی ۔لیکن یہاں پر بی جے پی کے خطرہ کے بہانے ٹکٹوں کی تقسیم میں مسلم کارکنوں کے ساتھ وہی سلوک کیا گیا جو اسمبلی الیکشن میں کیا گیا تھا ۔تلنگانہ کے میونسپل الیکشن میں ٹی آر ایس نے زبردست کامیابی حاصل کی جس کا اندازہ اس بات سے لگایا جا سکتا ہے کہ جملہ ایک 123 میونسپلٹیز اور کا رپورشنوں میں اس نے کل ملا کر ایک 122 میں کامیابی حاصل کی لیکن ٹی آر ایس نے ان میں سے صرف دو میونسپلٹز پر ہی مسلمانوں کو چئیر مین کےعہدے کے لیے نامزد کیاہے۔

نارائن کھیڑ میونسپلٹی کے نومنتخبہ چیئرپرسن کی حیثیت سے حلف لیتے ہوئےروبینہ بیگم
نارائن کھیڑ میونسپلٹی کے نومنتخبہ چیئرپرسن کی حیثیت سے حلف لیتے ہوئےروبینہ بیگم


ترجمان تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی شجاعت علی نے کہا کہ تلنگانہ راشٹرا سمیتی کی طرف سے ہر وعدہ انتخابات میں کامیابی کو مد نظر رکھ کر کیا جاتا ہے خواہ مسلمانوں کو 12 فیصد ریزرویشن ہو یا اقلیتی بہبود کے بجٹ میں اضافہ کی بات ہو۔ ان کے وعدے کبھی پورے نہیں ہوتے اب ان کے پاس یہ بہانہ ہوگا کہ بی جے پی کے بڑھتے اثر کی وجہ سے وہ مسلمانوں کو زیادہ چیئر مینس کے عہدے نہیں دے سکتے ۔تلنگانہ میں مسلمان 12 فیصد ہیں ۔یہاں مسلمانوں کا زیادہ تناسب شہری علاقوں میں بستا ہے سمجھا جاتا ہے کہ مجلس مقامی پنچایت اور میونسپل انتخابات میں نوجوان سیاسی لیڈرس کیلئے آگے بڑھنے کا مضبوط ذریعہ ثابت ہوتا ہے، جیتنے کی صلاحیت کے بہانے دوسرے انتخابات میں ٹکٹ سے محروم کئے جانے والے ٹی آر ایس کے مسلم لیڈروں و کارکنوں کو یہ امید تھی کہ انہیں قابل لحاظ تعداد میں نمائندگی ملے گی ۔پہلے تو میونسپل انتخابات میں انھیں وارڈس کی سطح پر کم ٹکٹ دیے گئے اور پھر الیکشن میں منتخب مسلم نمائندوں کو بھی عہدے دینے میں وہ پیمانہ اختیار نہیں کیا گیا جسکا ٹی آر ایس گزشتہ 20سال سے پرچار کر رہی ہے۔

 ترجمان تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی شجاعت علی ۔(تصویر: شجاعت علی، فیس بک)۔

ترجمان تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی شجاعت علی ۔(تصویر: شجاعت علی، فیس بک)۔


سوشل ایکٹوسٹ لبنیٰ ثروت کا ماننا ہے کہ ٹی آر ایس کو اب یہ کہنے کا با لکل اخلاقی حق نہیں ہے کہ وہ دستوری کی طرف سے رکاوٹ کی وجہ سے مسلمانوں کو وعدہ کے مطابق ریسروشنس نہیں دے سکتے ان کا سوال ہے کہ خود ٹی آر ایس پارٹی لیڈرشپ میں کتنے عہدوں کیلئے مسلمانوں کو نامزد کیا گیا ؟۔یاد رہے تلنگانہ کے میونسپل الیکشن کے ذریعہ کونسلرز اور کا رپوریٹرس چنے جاتے ہیں اور یہی کونسلرز اور کارپورٹرس چیئرمین اور میئرس کا انتخاب کرتے ہیں۔ کسی میونسپل یا کارپوریشن میں جیتی ہوئی پارٹی سے چیئرمین یا میئر کی نا مزدگی کا اختیار پارٹی ہائی کما ن اپنے ہاتھ میں رکھتا ہے اوراس بات کا شدید احساس ہے کہ ٹی آر ایس نے مسلمانوں سے انصاف کیلئے اس موقع پر اس اختیار کا استعمال نہیں کیا ۔

سوشل ایکٹوسٹ لبنیٰ ثروت۔(تصویر: لبنیٰ ثروت، لنگڈ ان)۔
سوشل ایکٹوسٹ لبنیٰ ثروت۔(تصویر: لبنیٰ ثروت، لنگڈ ان)۔


تلنگانہ کے120 میونسپلز کے انتخابات میں ٹی آر ایس کے 2 اور مجلس اتحاد المسلمین کے 2مسلم وارڈکونسلرزنے چیئر مین کے عہدے حاصل کرنے میں کامیابی حاصل کی جبکہ10 میونسپل کا رپورشنوں میں سے ایک میں بھی مسلم کا رپورٹیر کو میئر کا عہدہ حاصل نہیں ہوا ۔
First published: Jan 30, 2020 06:09 PM IST