کلبھوشن پرپاکستانی وزارت خارجہ کا بیان :دوبارہ نہیں دی جائے گی سفارتی رسائی

پاکستان نے کلبھوشن جادھو کو دوسری بارقونصلررسائی دینے سے انکارکردیاہے۔ وزارت خارجہ کے ترجمان محمد فیصل نے ایک بیان جاری کیا۔جس میں انہوں نے صاف کیا ہے کہ کلبھوشن کو دوبارہ قونصلر ایکسس نہیں دی جائے گی

Sep 12, 2019 03:31 PM IST | Updated on: Sep 12, 2019 03:31 PM IST
کلبھوشن پرپاکستانی وزارت خارجہ کا بیان :دوبارہ  نہیں دی جائے گی سفارتی رسائی

كلبھوش جادھو۔(تصویر:نیوز18)۔

کھسیانی بلی کھمبا موچے۔ کشمیر پر پاکستان کی حالت ان دنوں ایسی ہی ہے۔سفارتی سطح پر پاکستان کو ہرمحاذ پرمنہ کی کھانی پڑی ہے۔اس کے بعد اس نے انتہائی بزدلانہ قدم اٹھایاہے۔اس نے کلبھوشن جادھو کو دوسری بارقونصلررسائی دینے سے انکارکردیاہے۔ وزارت خارجہ کے ترجمان محمد فیصل نے ایک بیان جاری کیا۔جس میں انہوں نے صاف کیا ہے کہ کلبھوشن کو دوبارہ قونصلر ایکسس نہیں دی جائے گی۔پاکستان کی جانب سے 2 ستمبر کو کلبھوشن کو سفارتی رسائی دی گئی تھی۔عالمی عدالت کے فیصلے کے بعد پاکستان نے کلبھوشن جادھو سفارتی رسائی دی تھی۔

پاکستان کی جیل میں بند ہندوستانی شہری کلبھوشن جادھو سے 2 ستمبر کو اسلام آباد میں ہندوستان کے ڈپٹی ہائی کمشنر گورو اہلووالیہ نے ملاقات کی ۔ اس ملاقات کے بعد ہندوستان کی جانب سے کہا گیا ہے کہ پاکستان کلبھوشن جادھو پرغلط دعوؤں کو برقرار رکھنے کیلئے غلط بیانی کرنے کیلئے کافی دباو ڈال رہا ہے ۔

Loading...

وزارت خارجہ نے کہا کہ اس معاملہ میں ہمیں تفصیلی رپورٹ کا انتظار ہے ، لیکن ایک بات واضح ہے کہ کلبھوشن جادھو پر پاکستان کافی دباو ڈال رہا ہے ۔ ایم ای اے نے کہا کہ تفصیلی رپورٹ آنے کے بعد ہم آئی سی جے کے حکم کے مطابق آگے کی کارروائی سے متعلق فیصلہ کریں گے ۔ جانکاری کے مطابق وزارت خارجہ نے جادھو سے ہوئی بات چیت کے بارے میں ان کی ماں کو بھی اطلاع دی ہے ۔آپ کو بتادیں کہ یہ ملاقات پاکستان کے ذریعہ پیر کو جادھو کو قونصلر رسائی کی اجازت دئے جانے کے بعد عالمی عدالت کے حکم کے مطابق ہوئی ۔ سال 2016 میں حراست میں لئے جانے کے بعد جادھو تک ہندوستان کی پہلی قونصلررسائی ہے ۔

Loading...