ہوم » نیوز » عالمی منظر

لداخ تعطل: ہندوستانی اورچینی فوجی حکام کے درمیان میٹنگ کا آغاز

دونوں ممالک کے لیفٹیننٹ جنرل سطح کے عہدیداروں کی یہ میٹنگ چین کے چشول مولڈو میں واقع بارڈر پرسنل میٹنگ پوائنٹ میں ہورہی ہے، جو اس طرح کی میٹنگوں کے لئے طے شدہ دو مراکز میں سے ایک ہے۔

  • Share this:
لداخ تعطل: ہندوستانی اورچینی فوجی حکام کے درمیان میٹنگ کا آغاز
وی ایچ پی کے جنرل سکریٹری ملند پرانڈے نے کہا کہ چین کے پرتشدد حملے میں 20 ہندوستانی فوجیوں کی موت سے پورا ملک رنجیدہ اور مشتعل ہے۔

نئی دہلی:  مشرقی لداخ سیکٹر میں لائن آف کنٹرول پر گزشتہ ایک مہینے سے جاری فوجی تعطل کو حل کرنے کے لئے ہنوستان اور چین کے سینئرفوجی حکام کے درمیان آج ایک اعلی سطحی میٹنگ ہو رہی ہے۔ لیفٹیننٹ جنرل سطح کے عہدیداروں کی یہ میٹنگ چین کے چشول مولڈو میں واقع بارڈر پرسنل میٹنگ پوائنٹ میں ہورہی ہے، جو اس طرح کی میٹنگوں کے لئے طے شدہ دو مراکز میں سے ایک ہے۔


اس میٹنگ میں ہندوستان کی نمائندگی لیہہ میں 14 ویں کور کے کمانڈر لیفٹیننٹ جنرل ہرندر سنگھ کر رہے ہیں جبکہ چین اور جنوبی شیانگ ملٹری ڈویژن کور کے کمانڈر میجر جنرل لن کی ہیں۔ میجر جنرل کو چین سے سے دو دن قبل یہ نئی ذمہ داری ذمہ داری سونپی گئی تھی۔ اس میٹنگ سے ایک روز قبل ، جمعہ کے روزدونوں ممالک کی وزارت خارجہ میں جوائنٹ سکریٹری سطح کی بات چیت میں صورتحال کو معمول پر لانے کے لئے مثبت اشارے دیئے گئے تھے۔


وزارت خارجہ میں جوائنٹ سکریٹری (مشرقی ایشیاء) نوین شریواستو اور چین کی وزارت خارجہ کے ڈائریکٹر جنرل وو چیانگاؤ کے درمیان ویڈیو کانفرنسنگ کے بعد جاری کردہ ایک بیان میں ہندوستان اور چین کے مابین پرامن ، مستحکم اور متوازن تعلقات عالمی تناظرمیں استحاکم کیلئے انتہائی اہم ہیں۔


چینی میڈیا کی ہندوستان کو واضح وارننگ

وہیں ہندوستان اور چین کے درمیان لداخ سرحد پرکشیدگی جیسے ہی کم ہوتی نظر آئے، ویسے ہی چینی پینترے بازی پھر سامنے آگئی ہے۔ دونوں ممالک کے درمیان اس تنازعہ کو حل کرنے کے لئے ہفتہ کو فوج کے لیفٹیننٹ جنرل رینک کے افسران کی میٹنگ ہو رہی ہے۔ اس میٹنگ سے ٹھیک قبل چینی میڈیا (Chinese Media) نے ہندوستان پر مشورہ کے انداز میں دباو بنانے کی کوشش کی ہے۔ چینی حکومت کا اہم ترجمان کہے جانے والے ’گلوبل ٹائمس’ (Global Times) نے لکھا کہ ہندوستان کو یہ خدشہ ہوگیا ہے کہ چین کے خلاف اسے اسٹریٹجک سبقت حاصل ہے۔ ہندوستان میں کچھ لوگوں کو لگتا ہے کہ چین سرحدی تنازعہ پر پیچھے ہٹ سکتا ہے۔ واضح رہے کہ ہندوستان اور چین کے درمیان لداخ سرحد پر گزشتہ کئی دنوں سے تنازعہ بڑھ گیا ہے۔ دونوں ممالک کی افواج آمنے سامنے ہیں۔ پہلے وہاں پر بڑی تعداد میں چینی فوجی جمع ہوگئے تھے۔ اس کے جواب میں ہندوستان نے بھی اپنے فوجیوں کی تعداد میں اضافہ کردیا ہے۔ یہ بھی کہا جارہا ہے کہ ہندوستان کی انتقامی کارروائی کے بعد چینی فوج دو کلو میٹر پیچھے ہٹی ہے۔ اب ہفتہ کو دونوں ممالک کے درمیان اس مسئلے پر بات ہوگی۔

نیوز ایجنسی یو این آئی ان پٹ کے ساتھ۔
First published: Jun 06, 2020 01:56 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading