உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Lakshadweep: لکشدیپ بنےگاہندوستان کا پہلامکمل ویکسین شدہ یونین ٹیریٹری، 99.2فیصداہل آبادی ویکسین سےمستفید

    لکشدیپ بنےگاہندوستان کا پہلامکمل ویکسین شدہ یونین ٹیریٹری، 99.2فیصداہل آبادی ویکسین سےمستفید

    لکشدیپ بنےگاہندوستان کا پہلامکمل ویکسین شدہ یونین ٹیریٹری، 99.2فیصداہل آبادی ویکسین سےمستفید

    وزارت صحت (Health Ministry) کے ریاست وار کووڈ۔19 ویکسینیشن کے اعداد و شمار کے مطابق اب تک لکشدیپ میں ویکسین کی کل 1,01,759 خوراکیں دی گئی ہیں۔ اس میں پہلی خوراک کے طور پر 55,144 شاٹس اور دوسری خوراک کے طور پر 46,615 شاٹس شامل ہیں۔

    • Share this:
      ملک کی تمام ریاستوں اور مرکز کے زیر انتظام (UT) علاقوں میں لکشدیپ (Lakshadweep) اپنی اہل آبادی کی مکمل ویکسینیشن کوریج حاصل کرنے والا پہلا یو ٹی بن سکتا ہے۔ ایک ذریعہ نے بتایا کہ یو ٹی نے دونوں خوراکوں کے ساتھ 99.2 فیصد اہل آبادی کو ٹیکہ لگا دیا ہے۔

      وزارت صحت (Health Ministry) کے ریاست وار کووڈ۔19 ویکسینیشن کے اعداد و شمار کے مطابق اب تک لکشدیپ میں ویکسین کی کل 1,01,759 خوراکیں دی گئی ہیں۔ اس میں پہلی خوراک کے طور پر 55,144 شاٹس اور دوسری خوراک کے طور پر 46,615 شاٹس شامل ہیں۔

      دریں اثنا ہندوستان کی بڑے پیمانے پر ویکسینیشن مہم نے ہفتہ کو 108,18,66,715 ویکسینیشن حاصل کرتے ہوئے 108 کروڑ کا سنگ میل عبور کر لیا ہے۔ وزارت صحت کی رپورٹ کے مطابق ہندوستان میں اب تک دی جانے والی پہلی خوراک کی مجموعی تعداد 739322908 ہے، جب کہ دوسری خوراک کی کل تعداد 342543807 ہے۔

      وزارت نے پہلے کہا تھا کہ ہندوستان کی 78.7 فیصد بالغ آبادی کو کووڈ۔19 ویکسین کی کم از کم ایک خوراک ملی ہے۔ تمام ریاستوں اور مرکز کے زیر انتظام علاقوں میں نو نے تمام 18 سے زیادہ آبادی کو پہلی خوراک دی ہے- مرکزی وزیر صحت منڈاویہ Union Health Minister Mandaviya نے اس سے قبل ریاستوں کے وزرائے صحت کے ساتھ ایک میٹنگ میں ان پر زور دیا کہ وہ تمام اسٹیک ہولڈرز کے ساتھ مل کر مقامی سطح کے منصوبے بنائیں تاکہ ان لوگوں کو ویکسین لگائی جا سکے جن کی خوراک ختم ہو چکی ہیں۔

      واضح رہے کہ عالمی ادارہ صحت WHO کے تکنیکی مشاورتی گروپ نے ایک اہم ہندوستان ویکسین کوویکسین Covaxin کو ہنگامی استعمال کے لیے اپنی منظوری دے دی ہے۔ جسے بھارت بائیوٹیک Bharat Biotech نے تیار کیا ہے۔ عالمی ادارہ صحت کا ٹیکنیکل ایڈوائزری گروپ اپنے ہنگامی استعمال کی فہرست (EUL) emergency use listing کے لیے ویکسین کو لائسنس دیتا ہے۔ اس نے 26 اکتوبر 2021 کو بھارت بائیوٹیک سے ای یو ایل کے لیے کوویکسین کی منظوری دینے سے قبل اضافی ڈیٹا طلب کیا تھا۔ اس پیشرفت سے واقف سرکاری ذرائع نے بتایا کہ کمپنی نے گزشتہ ہفتے ڈیٹا جمع کرایا تھا۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: