உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    حیدرآباد دکن کے تاریخی و ثقافتی مقامات پر مبنی دستاویزی کتاب Hyderabad Deccan: Illustrated کا رسم اجرا

    اس کتاب میں دکن کے 52 سے زائد اہم اور تاریخی مقامات کے الیشٹریشن اور اس کی تاریخ موجود ہے۔

    اس کتاب میں دکن کے 52 سے زائد اہم اور تاریخی مقامات کے الیشٹریشن اور اس کی تاریخ موجود ہے۔

    ۔Hyderabad Deccan: Illustrated کتاب میں حیدرآباد کے ثقافتی مقامات کے السٹریشن پر مبنی تصاویر اور اس کی تاریخ کو بڑے ہی خوبصورت انداز میں پیش کیا گیا۔ پروفیسر جنتا گنیش نے اس کتاب کو دکن کے تاریخی مقامات سے متعلق ایک اہم اور قابل مطالعہ ڈاکیومنٹ قرار دیا ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Share this:
    حیدرآباد دکن کے تاریخی و ثقافتی مقامات سے متعلق کتاب Hyderabad Deccan: Illustrated کا رسم اجرا سالار جنگ میوزیم اینڈ لائبریری میں عمل میں آیا۔ اس کتاب کے مصنف صبغت اللہ خان اور شریک مصنف مہدی ساجد ہیں۔ جنھوں نے کئی برسوں سے مسلسل کوشش اور محنت کے بعد اس کتاب کو منظر عام پر لایا۔ کتاب کی رسم اجرا کے پروگرام میں مہمان خصوصی کے طور پر یونیورسٹی کالج آف آرٹس اینڈ سوشل سائنسس، عثمانیہ یونیورسٹی کے پرنسل پروفیسر جنتا گنیش، سالار جنگ میوزیم کے ڈائریکٹر ڈاکٹر ناگیندر ریڈی، انٹیک حیدرآباد چیپٹر کی کنوینر انورادھا ریڈی اور پرنس میر نجف علی خان کے علاوہ دیگر لوگوں نے شرکت کی۔

    اس کتاب میں حیدرآباد کے ثقافتی مقامات کے السٹریشن پر مبنی تصاویر اور اس کی تاریخ کو بڑے ہی خوبصورت انداز میں پیش کیا گیا۔ پروفیسر جنتا گنیش نے اس کتاب کو دکن کے تاریخی مقامات سے متعلق ایک اہم اور قابل مطالعہ ڈاکیومنٹ قرار دیا ہے۔ انھوں نے کہا کہ اس کتاب کا مطالعہ ہر ایک کو کرنا چاہیے۔



     




    View this post on Instagram





     

    A post shared by The Deccan Archive (@deccanarchive)





    اس کتاب میں دکن کے 52 سے زائد اہم اور تاریخی مقامات کے الیشٹریشن اور اس کی تاریخ موجود ہے۔ اس طرح اس کتاب کے ذریعے حیدرآباد کی تاریخ کو منفرد انداز میں پیش کیا گیا۔ کتاب کو نہایت ہی اہتمام اور اعلی معیار کے ساتھ شائع کیا گیا ہے۔ اس کتاب میں کئی تاریخی مقامات کے تحت مساجد، منادر، چرجس، گرودوارے اور اس کے علاوہ کلاک ٹاورس کے بارے میں نہایت ہی اہم معلومات پیش کی گئی ہیں۔

    واضح رہے کہ کتاب کے مصنف صبغت حان دکن آرکائیو کے بلاگر ہیں۔ وہ دکن آرکائیو  کے نام سے انسٹاگرام پر پیچ بھی چلاتے ہیں۔ حیدرآباد کے چند متحرک نوجوانوں کا ایسا گروپ ہے، جس کا مقصد دکن سے متعلق تاریخی حقائق کو عام کرنا ہے۔ اس کے ذریعے دکن کی درست معلومات اور تاریخی واقعات سے واقف کرایا جاتا ہے اور اسے عام کرنے کی کوشش کی جاتی ہے۔

    یہ گروپ دکن کے متنوع تاریخی ورثے کو ڈیجیٹل طور پر محفوظ رکھنے کی کوششوں میں مصروف ہے۔ اس کے علاوہ نایاب مخطوطات، قدیم تصاویر اور آرکائیو کو محفوظ کیا جا رہا ہے۔ سماجی رابطہ کے مختلف ذرائع فیس بک، انسٹاگرام کے علاوہ ویب سائٹ https://thedeccanarchive.in پر دکن آرکائیو سے رابطہ کیا جا سکتا ہے۔
    Published by:Mohammad Rahman Pasha
    First published: