ہوم » نیوز » وطن نامہ

جنسی تعلقات بنانے کا دل نہیں کرتا ہے تو ضرور کیجئے یہ کام ، لوٹ آئے گا پرانا جادو!

عام خیال کے برعکس سیکس ریلیکس کرنے کیلئے نہیں ہوتا ہے ۔ خاص طور پر اچھے جنسی تعلقات کیلئے کوشش اور توانائی کی ضرورت ہوتی ہے ۔

  • Share this:
جنسی تعلقات بنانے کا دل نہیں کرتا ہے تو ضرور کیجئے یہ کام ، لوٹ آئے گا پرانا جادو!
جنسی تعلقات بنانے کا دل نہیں کرتا ہے تو ضرور کیجئے یہ کام ، لوٹ آئے گا پرانا جادو! ۔ علامتی تصویر ۔

سوال 23 : ہماری شادی کو سات سال ہوگئے ہیں اور ہم گزشتہ 14 سال سے ساتھ ہیں ۔ ہمارے درمیان قربت مختلف طرح کی ہے اور اس کی وجہ ہماری ترجیحات ہیں ۔ مگر اب ہم اتنے سست ہوگئے ہیں کہ سیکس کرنے کا دل ہی نہیں کرتا ہے ۔ مجھے نہیں معلوم کہ جنسی تعلقات کے پرانے جادو کو کیسے واپس لایا جائے ۔ اس کو لے کر ہماری تھکاوٹ اتنی زیادہ ہے کہ جب بھی ہم قریب آتے ہیں تو یہ کام کافی میکینکل لگتا ہے اور بہت ہی جلد ختم ہوجاتا ہے ۔ کیا عمر اس کی وجہ ہوسکتی ہے ؟ میرا شوہر مجھ سے آٹھ سال بڑا ہے ۔ یا ایسا تو نہیں کہ اب میں پہلے کی طرح نہیں دکھتی ہوں ۔


دیکھئے ، جسمانی تعلقات شادی میں سب کچھ نہیں ہے ۔ صرف اس لئے کہ آپ کی زندگی میں کچھ مشکلات آگئی ہیں ، اس کا یہ مطلب نہیں کہ آپ کی شادی میں کچھ پریشانی ہے اور یہ ختم ہونے کی کگار پر آگئی ہے ۔ شادی کے اتنے سال بعد بیڈروم میں بوریت کا ہونا عام بات ہے ، مگر آپ کو اس بات کو لے کر محتاط رہنا ہوگا کہ اس صورتحال کا اثر بیڈروم کے باہر نہ پڑے ، آپ میں غصہ یا دیگر طرح کی باتوں کا پیدا ہونا حقیقت میں خطرناک ہوگا اور آپ کے ریلیشن شپ کو مشکل میں ڈال سکتا ہے ۔


حالانکہ اپنے جنسی تعلقات کے پرانے جادو کو دوبارہ زندہ کرنے کی آپ کی خواہش اچھی ہے ۔ ناکام شادی وہ ہے جب ہم اس کو پٹری پر لانے کی ساری امید اور سبھی کوششیں چھوڑ دیتے ہیں ۔


یہ بھی پڑھیں : کیا لڑکیاں ماضی میں بنائے جسمانی تعلقات کے تجربات کو بھول پاتی ہیں ؟

شادی کے شروعاتی دنوں کے جوش اور اس کی جدت دھیرے دھیرے کم ہوجاتی ہے اور یہ عام بات ہے اور آپ بھی دیگر جوڑوں کی طرح ہی اسی طرح کی سستی کے شکار ہوگئے ہیں ۔ اس کی بڑی وجہ ہے روز مرہ کی بھاگ دوڑ ، جس نے آپ دونوں کو تھکا دیا ہے اور اس نے جسنی تعلقات بنانے کے جوش اور لطف کو ختم کردیا ہے ۔ عام خیال کے برعکس سیکس ریلیکس کرنے کیلئے نہیں ہوتا ہے ۔ خاص طور پر اچھے جنسی تعلقات کیلئے کوشش اور توانائی کی ضرورت ہوتی ہے ۔

اپنی زندگی میں غیر ضروری باتوں کی کاٹ چھانٹ کیجئے ، ویسے ہی جیسے آپ اپنے گھر سے کباڑ ہٹاتے ہیں ۔ پہلے پورے حالات کا جائزہ لیجئے اور یہ دیکھئے کہ زندگی میں کس بات کی سب سے زیادہ ضرورت ہے ۔ آپس میں زیادہ وقت گزاریئے ، باتیں کیجئے ، فلمیں دیکھئے اور لطف اٹھائیے ۔ سیکس سے پہلے ایک دوسرے سے جذباتی طور پر جڑیئے ۔

پھر جنسی تعلقات کو لے کر الگ رویہ اپنائیے ۔ ایک دوسرے کو لبھانے کی کوشش کیجئے اور آسانی سے سیکس کی جانب نہیں بڑھئے ۔ ایک دوسرے کو چڑھائیے ، پورے دن چڑھائیے جب تک یہ  نہ ہوجائے  کہ آپ دونوں میں سے کسی کو اس کے علاوہ اور کچھ نہیں چاہئے ۔ اس کو صرف لکھنا ہی نہیں بلکہ حقیقی زندگی میں بھی کرنا آسان ہے ۔ آپ ان کو لنگری میں اپنی تصویر بھیجئے ، ایسی نئی باتوں کے بارے میں بتائیے جو آپ آزمانا چاہتی ہیں ، اپنے سب سے پسندیدہ جنسی کام کی یاد دلایئے اور یہ بتائیے کہ پچھلی مرتبہ ایسا کب ہوا تھا جب آپ کے درمیان سیکس بہت ہی اچھا تھا اور کس وجہ سے یہ اچھا تھا ۔

یہ بھی پڑھیں : کیا گرل فرینڈ کے ساتھ ارول سیکس کرنا صحیح ہے؟

جسم کس طرح کا ہے کہ اس سے جنسی رغبت پر اثر نہیں پڑتا ہے ۔ خاص طور پر ایسی شادی جہاں آپ ایک دوسرے کی روح اور شخصیت کے ساتھ پیار میں ہوتے ہیں ۔ عمر کسی شخص میں شاید ہی اس کی جنسی خواہشات کو کم کرتا ہے ۔ اگر آپ کے شوہر جنسی تعلقات بنانے یں کوئی دلچسپی نہیں لیتے ہیں تو میں آپ کو مشورہ دوں گی کہ آپ تھوڑے وقت کیلئے خود کو روک لیجئے اور اپنے شوہر سے ایمانداری سے بات کیجئے ۔ ان سے پوچھئے کہ ان کی تشویشات کیا ہیں ، معاملہ کیا ہے اور کس وجہ سے انہیں کشیدگی یا تھکاوٹ ہے کہ جنسی تعلقات بنانے میں وہ کوئی دلچسپی نہیں لیتے ہیں ۔ اس سے آپ کو اپنی حالت کو سمجھنے میں مدد ملے گی ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Dec 18, 2020 05:43 PM IST