ہوم » نیوز » وسطی ہندوستان

راجستھان: سلیفی لینے کے دوران کلک ٹاورپر گری بجلی پھر ہوا دھماکہ، 16 افرادہلاک، معاوضہ کااعلان

جے پور پولیس کمشنر آنند سریواستو نے بتایا کہ اب تک 29 لوگوں کو مقامی لوگوں کی مدد سے عامرمحل علاقے سے نکالا گیا ہے۔ ان سب کو اسپتال لے جایا گیا ہے ، جن میں سے اب تک 16افراد کی موت ہوچکی ہے۔

  • Share this:
راجستھان: سلیفی لینے کے دوران کلک ٹاورپر گری بجلی پھر ہوا دھماکہ، 16 افرادہلاک، معاوضہ کااعلان
راجستھان: جے پور میں آسمانی بجلی گرنے سے 16افراد کی موت، وزیراعلیٰ نے معاوضہ کیا اعلان ۔(تصویر:shutterstock)۔

اتوار کے روز راجستھان کے دارالحکومت جے پور میں تیز بارش ہوئی۔ موسلا دھار بارش کے ساتھ ہی شہر کے عامرمحل کے علاقے میں مقیم 16 سے زائد افراد آسمانی بجلی کے گرنے سے ہلاک ہوگئے۔ جے پور میں عامر محل کے سامنے واچ ٹاور پر آسمانی بجلی گرنے سے 35 سے زائد افراد زخمی ہوگئے۔ وزیر اعلیٰ اشوک گہلوت نے ریاست میں آسمانی بجلی گرنے سے ہونے والی اموات پر غم کا اظہار کیا ہے اور ہلاک ہونے والے افراد کے لواحقین کے لیے پانچ۔ پانچ لاکھ روپے کی مالی امداد کا بھی اعلان کیا ہے۔


آج کل سیلفی (Selfie) لینا عام بات تھی۔لوگ جہاں بھی ملتے ہیں وہاں سلیفی لینا شروع کردیتے ہیں۔ تاہم ، اب راجستھان کے صدر مقام جے پور سے ایک حیران کن واقعہ سامنے آیا ہے۔ یہں بعض افراد کو سیلفی پر لینا مہنگا پڑ گیا بتایا جاتاہے کہ سلیفی لینے کے دوران 16 افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔


موصول اطلاع کے مطابق ، راجستھان کے صدر مقام جے پور کے عامر محل میں سیاح سیلفی لے رہے تھے۔ اسی دوران واچ ٹاور پر آسمانی بجلی کا زور دار دھماکا ہوا۔ اس حادثے میں زیادہ سے زیادہ 16 افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔ معلوم ہوا ہے کہ 35 افراد زخمی ہوئے ہیں۔واچ ٹاور دھماکے کے بعد کئی افراد واچ ٹاور سے نیچے کود گئے ہیں جس کی وجہہ سے وہ زخمی ہوگئے۔



جے پور پولیس کمشنر آنند سریواستو نے بتایا کہ اب تک 29 لوگوں کو مقامی لوگوں کی مدد سے عامرمحل علاقے سے نکالا گیا ہے۔ ان سب کو اسپتال لے جایا گیا ہے ، جن میں سے اب تک 16افراد کی موت ہوچکی ہے۔بیشتر افراد کو جھلسی ہوئی حالت میں جے پور کے ایس ایم ایس اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔ جے پور کے ساتھ ہی ، کوٹہ ، ڈھول پور ، باران اور جھالاور میں بھی آسمانی بجلی گرنے سے متعدد افراد اپنی زندگی سے ہاتھ دھو بیٹھے ہیں۔


سی ایم اشوک گہلوت نے کیا غم کا اظہار

اس واقعے پر غم کا اظہار کرتے ہوئے سی ایم اشوک گہلوت نے کہا ہے کہ آج کوٹہ ، ڈھول پور ، جھلاور ، جے پور اور باران میں آسمانی بجلی گرنے سے جانی نقصان بہت افسوسناک اور بدقسمتی ہے۔ متاثرہ افراد کے اہل خانہ سے میری گہری تعزیت ، خدا انہیں صبر جمیل عطا کرے۔ حکام کو متاثرہ افراد کے اہل خانہ کو فوری طور پر امداد فراہم کرنے کی ہدایت دی گئی ہے۔


دوسری طرف ، بی جے پی رہنما راجیووردھن سنگھ راٹھور نے اس واقعے پر غم کا اظہار کیا ہے اور کہا ہے کہ ، راجستھان کے ڈھول پور ، کوٹا ، جے پور ، جھالاور اور باران میں آسمانی بجلی گرنے سے بچوں سمیت متعدد ہلاکتوں کی خبریں انتہائی افسوسناک ہیں۔ خدا سے دعا ہے کہ وہ مہلوکین کو شانتی دیں، زخمیوں کی جلد صحت یابی ہو اور اس مشکل گھڑی میں ان کے اہل خانہ کو طاقت عطا کرے۔


جولائی 2020 میں ایک دن میں بارش ہوئی

محکمہ موسمیات کے مطابق ، جے پور میں آج ایک گھنٹہ کے اندر 63 ملی میٹر یعنی 2.40 انچ بارش ریکارڈ کی گئی۔ یہ پچھلے سال جولائی 2020 میں پورے ماہ میں ہونے والی کل بارش سے زیادہ ہے۔ جولائی 2020 میں 40.4 ملی میٹر بارش ہوئی۔
Published by: Mirzaghani Baig
First published: Jul 12, 2021 06:52 AM IST