உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Congo:اقوام متحدہ کی امن فوج میں شامل دو ہندوستانی جوان شہید، وزیرخارجہ نے کیا دُکھ کا اظہار

    کانگو میں بی ایس ایف کے دو جوان شہید۔

    کانگو میں بی ایس ایف کے دو جوان شہید۔

    اقوام متحدہ کے حکم کے مطابق ہندوستانی فوجی تنازعہ زدہ علاقے میں امن کے قیام میں اپنا کردار ادا کر رہے ہیں۔ کانگو میں 1999 سے ہندوستانی فوج کے دستے تعینات ہیں۔

    • Share this:
      نئی دہلی: بارڈر سیکیورٹی فورس (بی ایس ایف) نے کہا کہ اس کے دو اہلکار، جو کانگو میں اقوام متحدہ کے امن دستے کا حصہ تھے، پرتشدد مظاہروں کے دوران مارے گئے۔

      وزیر خارجہ ایس جے شنکر نے کہا، ’ڈیموکریٹک ریپبلک آف کانگو میں بی ایس ایف کے دو بہادر ہندوستانی امن فوجیوں کی موت سے گہرا دکھ ہوا ہے۔ وہ مونوسکو (جمہوریہ کانگو میں اقوام متحدہ کے مشن) کا حصہ تھے۔ ان حملوں کے مجرموں کو ذمہ دار ٹھہرایا جائے اور انہیں انصاف کے کٹہرے میں لایا جائے۔ سوگوار خاندانوں سے میری تعزیت۔"

      سفیر ٹی ایس مورتی نے ظاہر کیا دُکھ
      اقوام متحدہ میں ہندوستان کے سفیر ٹی ایس ترومورتی نے جمہوری جمہوریہ کانگو میں BSF کے اقوام متحدہ کے دو امن فوجیوں کی افسوسناک ہلاکت کے بعد تعزیت کا اظہار کیا۔ ساتھ ہی انہوں نے کہا کہ یہ واقعی بہت بڑا نقصان ہے۔

      ہندوستانی فوجی ٹھکانوں اور اقوام متحدہ کے دفتر میں ہوئی تھی لوٹ کی کوشش
      بتادیں کہ اس سے قبل پیر کو کانگو میں غیر فوجی سویلین مسلح گروپوں نے بھی ہندوستانی فوج کے آپریشنل اڈوں، اسپتالوں کو لوٹنے کی کوشش کی تھی۔ تاہم فوجی حکام نے کہا کہ اس کے امن دستوں نے اقوام متحدہ کے احکامات اور ضوابط کے مطابق سخت کارروائی کرتے ہوئے لوٹ مار کی کوششوں کو ناکام بنادیا۔

      یہ بھی پڑھیں:

      Indian Navy Recruitment: نیوی اگنی ویر کے لیے بھرتیوں کا اعلان، جانیے مکمل تفصیلات

      یہ بھی پڑھیں:
      Kargil Vijay Diwas 2022: کارگل وجے دیوس پر PM Modi نے ہندوستانی فوج کی بہادری کو کیا یاد

      1999 سے کانگو میں تعینات ہے ہندوستانی فوج کا دستہ
      کانگو خانہ جنگی کا شکار ملک ہے۔ اقوام متحدہ کے حکم کے مطابق ہندوستانی فوجی تنازعہ زدہ علاقے میں امن کے قیام میں اپنا کردار ادا کر رہے ہیں۔ کانگو میں 1999 سے ہندوستانی فوج کے دستے تعینات ہیں۔ دنیا کی سب سے بڑی امن فوج اس وقت کانگو میں تعینات ہے۔ مختلف ممالک کے تقریباً 20 ہزار فوجی یہاں تعینات ہیں۔ ہندوستانی فوج کے حکام کے مطابق کانگو میں چار ہزار ہندوستانی فوجی تعینات ہیں۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: