لکھنؤ: 15سال سے اپنی ہی بیٹیوں کا جنسی استحصال کررہا تھا باپ ۔ نابالغ لڑکی کی سمجھداری سے کھلا راز

اترپردیش کے دارالحکومت لکھنؤ میں رشتوں کو شرمسار کرنے والا ایک واقعہ پیش آیاہے۔ جہاں ایک باپ، کئی سالوں سے اپنی بیٹیوں کا جنسی استحصال کررہاتھا۔

Aug 19, 2019 03:16 PM IST | Updated on: Aug 19, 2019 03:31 PM IST
لکھنؤ: 15سال سے اپنی ہی بیٹیوں کا جنسی استحصال کررہا تھا باپ ۔ نابالغ لڑکی کی سمجھداری سے کھلا راز

علامتی تصویر

اترپردیش کے دارالحکومت لکھنؤ میں رشتوں کو شرمسار کرنے والا ایک واقعہ پیش آیاہے۔ جہاں ایک باپ، کئی سالوں سے اپنی بیٹیوں کا جنسی استحصال کررہاتھا۔ باپ کی بری نیت سے پریشان ہوکر چھوٹی بیٹی نے آشا جیوتی مرکز سے مدد مانگی۔ جس کے بعد یہ پورا معاملہ سامنے آیا۔اطلاع ملتے ہی پولیس نے ملزم باپ کے خلاف نربھیا قانون اور دیگردفعات کے خلاف مقدمہ درج کرکے ملزم کی چنگل سے بیٹیوں کورہا کروایا ہے۔

ظالم باپ 15 سال سے کررہاتھا بیٹیوں کا جنسی استحصال

Loading...

تفصیلات کے مطابق ملزم باپ 15 سال سے اپنی ہی بیٹیوں کا جنسی استحصال کررہاتھا۔کسی بار اس نے بیٹیوں کی عصمت کو تار۔تارکیا۔آشا جیوتی مرکز کی انچارج ارچنا سنگھ نے بتایا کہ 7 سال کی عمر سے بڑی بیٹی کے ساتھ فحش حرکتیں کرتاتھا جیسے ہی چھوٹی بیٹی بڑی ہوئی اسکے ساتھ بھی ملزم باپ نے فحش حرکتیں شروع کردی۔ تاہم درندہ صفت باپ سے پریشان دونوں بہنوں نے آواز اٹھائی اور آشا جیوتی مرکز پہنچ گئی۔ جس کے بعد آشا جیوتی مرکز نے گزشتہ رات دونوں متاثرہ بیٹیوں کو رہا کروایا۔

ملزم کی 22 سال بیٹی نے کھولا راز

ارچنا سنگھ کا کہناہے کہ چھوٹی بیٹی کی جانب سے شکایت ملنے کے بعد پہلے آشا جیوتی سینٹر کی ٹیم نے ملزم 22 سالہ بڑی بیٹی سے رابطہ کیا اور اسکی کونسلنگ کی گئی۔اس کے بعد نوجوان لڑکی نے اپنے باپ کے گھنونے چہرہ کو منظرعام پرلایا۔ جس کے بعد آشاجیوتی نے جانچ شروع کرکے ثبوت جمع کیے اور گزشتہ رات 22 سالہ اور 14 سالہ دونوں بہنوں کو ظالم باپ کے چنگل سے آزاد کروایا۔

سات سال کی عمر سے بیٹیاں ہورہی تھی ہوس کا شکار

متاثرہ لڑکی کا کہنا ہے کہ سات سال کی عمر سے ہی وہ باپ کی ہوس کا شکار ہورہی تھی۔ ملزم نے اپنی چھوٹی بہن کے ساتھ بھی جنسی زیادتی ہونے کا انکشاف کیاہے۔جس کے بعد پریشان ہوکر وہ اپنے اسکول کے پرنسپل کے پاس گئی اور انہیں ساری بات بتا دی۔ پرنسپل نے آشا جیوتی سینٹر سے رابطہ کیا اوراسے اوراس کی چھوٹی بہن کو ٹیم سے ملنے کے لیے رہنمائی کی ۔

ایک ہندی اخبارکے مطابق ، آشا جیوتی سینٹر کی ٹیم اور پولیس اہلکار حقیقی بہنوں کی درد بھری کہانی سن کر حیران ہوگئے۔ متاثرہ بیٹیوں کے مطابق ، ملزم نے دونوں بہنوں کو جنسی استحصال کا شکار بنایا اور جنسی زیادتی کی۔ اورملزم باپ نے منہ کھولنے پرجان سے مارنے کی دھمکی بھی دی۔ متاثرہ لڑکیوں نے بتایا کہ اس کی والدہ کو برسوں سے پورے معاملے کے بارے میں معلوم تھا لیکن وہ سماج کا خوف دکھاکرانہیں خاموش کروادیتی تھی اب پولیس اس معاملہ میں مثاثرہ لڑکیوں کی ماں کے خلاف بھی کارروائی کرنے کی تیاری کررہی ہے ۔

Loading...
Listen to the latest songs, only on JioSaavn.com