ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

لکھنو کے کاکوری میں اے ٹی ایس کا بڑا آپریشن، القاعدہ کے دو مبینہ دہشت گردوں کو پکڑنے کا دعویٰ

Lucknow News: اطلاعات کے مطابق، اے ٹی ایس کے مطابق، اے ٹی ایس کی ٹیم ایک ہفتے سے مبینہ دہشت گردوں کو ٹریس کر رہی تھی۔ پکڑے گئے دہشت گردوں کے کنکشن القاعدہ سے سامنے آئے ہیں۔ فی الحال موقع پر بم مخالف دستہ دھماکہ خیز اشیا کو برباد کرنے میں مصروف ہے۔

  • Share this:
لکھنو کے کاکوری میں اے ٹی ایس کا بڑا آپریشن، القاعدہ کے دو مبینہ دہشت گردوں کو پکڑنے کا دعویٰ
لکھنو کے کاکوری میں اے ٹی ایس کا بڑا آپریشن، القاعدہ کے دو مبینہ دہشت گردوں کو پکڑنے کا دعویٰ

لکھنو: دارالحکومت لکھنو (Lucknow) کے کاکوری (Kakori) علاقے میں اے ٹی ایس (ATS) نے شک کی بنیاد پر ایک گھر کی گھیرا بندی کی ہے۔ ساتھ ہی آس پاس کے گھروں کو خالی کرایا جا رہا ہے۔ موصولہ اطلاعات کے مطابق، اے ٹی ایس کمانڈوز نے گھر کو چاروں طرف سے گھیر لیا ہے۔ ساتھ ہی موقع پر بم ڈسپوزل اسکواڈ کو بھی بلایا گیا ہے۔ اطلاعات کے مطابق، دو مشتبہ کو بھی حراست میں لے کر پوچھ گچھ کی جارہی ہے۔ کہا یہ بھی جا رہا ہے کہ گھر میں بھاری مقدار میں بم اور بارود برآمد ہوئے ہیں۔


دراصل، اے ٹی ایس کافی دنوں سے اس گھر پر نظر بنائے ہوئی تھی۔ مشتبہ سرگرمیوں کے سبب اے ٹی ایس کے مخبر اس گھر پر نگرانی بنائے ہوئے تھے۔ کہا جا رہا ہے کہ جانکاری پختہ ہونے پر اے ٹی ایس نے آج یہ آپریشن شروع کیا ہے۔ موقع پر مقامی پولیس بھی موجود ہے۔ بتایا جا رہا ہے کہ جس مکان کو اے ٹی ایس نے گھیرا ہے، وہ شاہد نام کے ایک شخص کا ہے۔ یہاں پر تین چار مشتبہ نوجوان کئی دنوں سے آجا رہے تھے، جس میں سے دو اے ٹی ایس کے حراست میں ہیں، جس سے پوچھ گچھ جاری ہے۔ اسی سے ملی اطلاع کے بعد اے ٹی ایس نے اس گھر کو گھیرا ہے اور سرچ آپریشن جاری ہے۔


دو پریشر کوکر اور ٹائم بم برآمد کرنے کا دعویٰ


آئی جی جی کے گوسوامی کی قیادت میں ہو رہے اس آپریشن میں ابھی تک دو پریشر کوکر بم، ٹائم بم اور بھاری مقدار میں اسلحہ برآمد ہونے کا دعویٰ کیا گیا ہے۔ اطلاع کے مطابق، اے ٹی ایس کی ٹیم ایک ہفتے سے دہشت گردوں کو ٹریس کر رہی تھی۔ پکڑے گئے دہشت گردوں کے کنکشن القاعدہ سے سامنے آئے ہیں۔ بم مخالف دستے نے دھماکہ خیز اشیا کو برباد کر دیا ہے۔

پاکستانی ہینڈلر ہونے کا دعویٰ

ذرائع سے مل رہی اطلاعات کے مطابق، جن دو مشتبہ افراد کو پکڑا گیا ہے، دونوں پاکستانی ہینڈلر ہیں۔ ایک ہفتے سے اے ٹی ایس کی ٹیم انہیں ٹریس کر رہی تھی۔ وسیم نام کے ایک شخص کی سرگرمی مشکوک لگنے کے بعد یہ آپریشن چلایا گیا۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Jul 11, 2021 03:41 PM IST