உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    UP Election Analysis: مغربی یوپی جس نے جیتا اس نے کھینچی بڑی لکیر، جانیں پہلے مرحلے کی ووٹنگ کا مطلب

    مغربی یوپی جس نے جیتا اس نے کھینچی بڑی لکیر، جانیں پہلے مرحلے کی ووٹنگ کا مطلب

    مغربی یوپی جس نے جیتا اس نے کھینچی بڑی لکیر، جانیں پہلے مرحلے کی ووٹنگ کا مطلب

    اترپردیش اسمبلی انتخابات 2022 کے لئے ووٹنگ کا عمل مغربی یوپی سے شروع ہوچکا ہے۔ ریاست میں ایک کہاوت کہی جاتی ہے جس نے بھی مغربی اترپردیش کو جیتا وہی پورے اترپردیش کا الیکشن جیتتا ہے۔ ایسے میں سب سے بڑا سوال یہ ہے کہ مغربی یوپی میں اس بار کا ووٹنگ پیٹرن کیا پیغام دیتا ہے؟

    • Share this:
      نئی دہلی: اترپردیش اسمبلی انتخابات 2022 کے لئے ووٹنگ کا عمل مغربی یوپی سے شروع ہوچکا ہے۔ ریاست میں ایک کہاوت کہی جاتی ہے جس نے بھی مغربی اترپردیش کو جیتا وہی پورے اترپردیش کا الیکشن جیتتا ہے۔ ایسے میں سب سے بڑا سوال یہ ہے کہ مغربی یوپی میں اس بار کا ووٹنگ پیٹرن کیا پیغام دیتا ہے؟ مغربی اترپردیش کی 58 سیٹوں پر کس اتحاد کا پلڑا بھاری رہنے کی امید ہے؟ اعدادوشمار کی بات کریں تو اترپردیش اسمبلی انتخابات کے پہلے مرحلے میں 11 اضلاع میں اسمبلی انتخابات کی 58 سیٹیں ہیں۔ ان میں 9 سیٹیں محفوظ ہیں۔ ان سیٹوں پر کل 623 امیدوار امیدوار انتخابی میدان میں تھے، جن میں 74 خاتون امیدوار ہیں۔ کل 2.27 کروڑ رائے دہندگان نے حق رائے دہی کا استعمال کیا۔

      پہلے مرحلے کی ووٹنگ میں 11 ضلع کے 58 اسمبلی حلقوں میں 60 فیصد سے زیادہ ووٹنگ ہوئی۔ یہ گزشتہ بار کی 63.5 فیصد کا موازنہ میں کم ہے۔ سال 2017 کے اسمبلی انتخابات میں نوئیڈا میں 48.56 فیصد ووٹ ڈالے گئے تھے جو سال 2022 میں بڑھ کر 50.10 فیصد ہوگیا۔ کیرانہ میں سال 2017 میں 69.56 فیصد ووٹ پڑے تھے، جبکہ 2022 میں 75.12 فیصد ووٹ پڑے۔ لونی میں 2017 میں 60.12 فیصد ووٹ پڑے تھے، جبکہ 2022 میں 57.60 فیصد پڑے۔ متھرا میں 2017 میں 59.44 فیصد ووٹ پڑے تھے، جبکہ 2022 میں 57.33 فیصد ووٹ پڑے۔ گڑھ مکتیشور میں سال 2017 میں 66.30 فیصد ووٹ پڑے تھے جو کہ 2022 میں گھٹ کر 61 فیصد رہ گیا۔

      سال 2012 کا انتخابی نتائج

      سال 2012 کے اسمبلی انتخابات نتائج کو دیکھیں تو 17.5 فیصد ووٹ کے ساتھ بی جے پی نے 10 سیٹ، 20 فیصد ووٹ کے ساتھ سماجوادی پارٹی نے 14 سیٹ، 28.8 فیصد ووٹ کے ساتھ بی ایس پی نے 20 سیٹ، 9.8 فیصد ووٹ کے ساتھ کانگریس نے پانچ سیٹ، 12.8 فیصد ووٹ کے ساتھ آر ایل ڈی نے 9 سیٹ جیتی تھی۔ دیگر کو 11.1 فیصد ووٹ ملے تھے۔ سال 2017 کے اسمبلی انتخابات کا نتائج دیکھیں تو 46.3 فیصد ووٹ کے ساتھ بی جے پی نے 53 سیٹ، 14.3 فیصد ووٹ کے ساتھ سماجوادی پارٹی نے دو سیٹ، 22.5 فیصدی ووٹ کے ساتھ بی ایس پی نے دو سیٹیں جیتی تھیں۔ اس کے علاوہ 6.6 فیصد ووٹ کے ساتھ کانگریس، 7.1 فیصد ووٹ اور دیگر کو 3.2 فیصد ووٹ ملے تھے۔ سال 2019 کے لوک سبھا انتخابات کو اگر اسمبلی الیکشن کے مطابق دیکھیں تو 56.1 فیصد ووٹ کے ساتھ بی جے پی نے 46 سیٹ، 6.3 فیصد ووٹ کے ساتھ سماجوادی پارٹی نے ایک سیٹ، 20.9 فیصد ووٹ کے ساتھ بی ایس پی نے 7 سیٹ پر جیت حاصل کی تھی۔ 4.2 فیصد کانگریس، 10.6 فیصد ووٹ آر ایل ڈی اور 1.9 فیصد ووٹ دیگر کو ملے تھے۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: