உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    عالمی یوم بزرگ پر بھوپال میں بزرگ خواتین نے خالی تھالی اور سوکھی روٹی لے کر کیا احتجاج، جانئے کیوں

    عالمی یوم بزرگ میں بزرگ خواتین نے بھوپال میں خالی تھالی اور سوکھی روٹی لے کر کیا احتجاج، جانئے کیوں

    عالمی یوم بزرگ میں بزرگ خواتین نے بھوپال میں خالی تھالی اور سوکھی روٹی لے کر کیا احتجاج، جانئے کیوں

    Bhopal News: بزرگ خواتین نے حکومت کی جانب سے چھ سو روپے ماہانہ دی جانے والی پینشن میں اضافہ کرکے اسے ایک ہزار روپے ماہانہ کرنے اور اسے ہر ماہ وقت پر جاری کرنے کا مطالبہ کیا۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Madhya Pradesh | Bhopal | Indore
    • Share this:
    بھوپال : مہنگائی اپنے آسمان پر ہے مگر اس بڑھتی مہنگائی میں بھی بزرگوں کی ماہانہ پینشن چھ سو روپے ہی ہے ۔ اس قلیل پینشن کی رقم میں بزرگ خواتین اپنا گزر بسر کیسے کریں، اس سوال کو لے کر بھوپال میں گیس پیڑت نراشت پینشن بھوگی مورچہ کے بینرتلے ًبزرگ خواتین نے اپنے مطالبات کو لے کر خالی تھالی اور سوکھی روٹی کو لیکر احتجاجی مظاہرہ کیا۔ بزرگ خواتین نے حکومت کی جانب سے چھ سو روپے ماہانہ دی جانے والی پینشن میں اضافہ کرکے اسے ایک ہزار روپے ماہانہ کرنے اور اسے ہر ماہ وقت پر جاری کرنے کا مطالبہ کیا۔

     

    یہ بھی پڑھئے: جسپریت بمراہ کے ٹی 20 ورلڈ کپ میں کھیلنے کو لے کر راہل دراوڑ نے دیا بڑا بیان، کہی یہ بات


    بھوپال گیس پیڑت نراشت پینشن بھوگی مورچہ کے صدر بال کرشن نامدیو نے نیوز18 اردو سے بات کرتے ہوئے کہا کہ حکومت ایک جانب سب کا ساتھ سب کا وکاس کی باتیں کرتی ہے مگر دوسری جانب بزرگ پینشن مہینوں نہیں ملتی ہیں ۔ مہنگائی کے اس زمانے میں چھ سو روپے ماہانہ کی پینشن میں ہوتا ہی کیا ہے اگر وہ بھی وقت پر نہیں ملے تو یہ بزرگ خواتین کہاں جائیں۔ یہاں پر جو بزرگ خواتین خالی تھالی اور سوکھی روٹی لے کر احتجاج کر رہی ہیں، اس میں سے بڑی تعداد میں وہ خواتین ہیں، جنہوں نے گیس سانحہ میں اپناسب کچھ کھودیا ہے۔ حکومت کو اس جانب توجہہ دینے کی ضرورت ہے۔

     

    یہ بھی پڑھئے: امت شاہ کے دورہ جموں و کشمیر کی کیا ہے اہمیت، جانئے کہا کہتے ہیں سیاسی ماہرین


    نیوز18 اردو سے بات کرتے ہوئے رئیسہ بی نے کہا کہ انیس سو چوراسی میں نکلنے والی گیس میں ہم نے اپنا سب کچھ کھودیا ہے ۔ اب تو ان آنکھوں میں اتنے آنسو بھی نہیں ہیں کہ اپنے لوگوں کو خراج عقیدت پیش کرسکوں۔ چھ سوروپے میں گزر کیسے ہو، اس بڑھاپے میں کس کے سامنے دو وقت کی روٹی کے لئے ہاتھ پھیلائیں۔

    حکومت سے صرف اتنی گزارش ہے کہ اس میں اتنا اضافہ کردیا جائے کہ ہماری دو وقت کی روٹی کا انتظام ہو جائے اور اسے وقت پر ہر ماہ جاری کیا جائے۔
    Published by:Imtiyaz Saqibe
    First published: