ہوم » نیوز » وسطی ہندوستان

مدھیہ پردیش سیاسی بحران : ان ممبران اسمبلی نے چھوڑا کانگریس کا ساتھ ، بی جے پی نے اسپیکر کو سونپے استعفے

مدھیہ پردیش کے سابق وزیر داخلہ بھوپیندر سنگھ نے میڈیا کی موجودگی میں اسپیکر کو 19 اراکین اسمبلی کے نام پڑھ کر سنائے اور استعفیٰ کی ہارڈ کاپی دی ۔

  • UNI
  • Last Updated: Mar 10, 2020 09:35 PM IST
  • Share this:
مدھیہ پردیش سیاسی بحران : ان ممبران اسمبلی نے چھوڑا کانگریس کا ساتھ ، بی جے پی نے اسپیکر کو سونپے استعفے
مدھیہ پردیش سیاسی بحران : ان ممبران اسمبلی نے چھوڑا کانگریس کا ساتھ

بھوپال : بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے رہنماؤں کے ایک وفد نے منگل کو یہاں اسمبلی اسپیکر این پی پرجاپتی کی رہائش گاہ پر پہنچ کر بنگلور میں ڈیرہ ڈالنے والے کانگریس کے 19 اراکین اسمبلی کے استعفیٰ کی هارڈ کاپی سونپی۔ سابق وزیر داخلہ بھوپیندر سنگھ بنگلور سے 19 استعفیٰ لے کر ہوائی جہاز سے بھوپال پہنچے۔ اس کے بعد مسٹر سنگھ، اسمبلی میں حزب اختلاف کے رہنما گوپال بھارگو، سابق اسمبلی اسپیکر ڈاکٹر سيتاسرن شرما، سابق وزیر ڈاکٹر نروتم مشرا کے علاوہ کئی بی جے پی اراکین اسمبلی پیدل مارچ کرتے ہوئے صدر کی رہائش گاہ پہنچے۔


سابق وزیر داخلہ نے میڈیا کی موجودگی میں اسپیکر کو 19 اراکین اسمبلی کے نام پڑھ کر سنائے اور استعفیٰ کی ہارڈ کاپی دی ۔ مسٹر سنگھ نے صدر سے کہا کہ اراکین اسمبلی نے آج دوپہر 12 سے دو بجے کے درمیان استعفی ٰبپ ذریعہ ای میل سے آپ کو ارسال کیا ہے۔ ان کی ہارڈ کاپی وہ خود آپ کو سونپ رہے ہیں۔ مسٹر سنگھ نے صدر کو بتایا کہ 19 اراکین اسمبلی نے بنگلور سے استعفیٰ بھیجا ہے۔ مزید کچھ کانگریس کے اراکین اسمبلی نے بھی آپ کو استعفی بھیجا ہے۔ مسٹر سنگھ نے دعویٰ کرتے ہوئے کہا کہ کل تک کانگریس کے استعفیٰ دینے والے اراکین اسمبلی کی تعداد بڑھ کر تیس ہو سکتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ بی ایس پی اور ایس پی کے اراکین اسمبلی بھی بی جے پی کے ساتھ ہیں۔ مسٹر سنگھ نے کہا کہ موجودہ صورتحال میں ریاست کی کانگریس حکومت اقلیت میں آگئی ہے۔ انہوں نے اسپیکر سے اراکین اسمبلی کا استعفیٰ قبول کرنے پر زور دیا ہے۔


استعفیٰ لینے کے بعد اسپیکر پرجاپتی نے کہا کہ انہیں استعفیٰ نامے موصول ہوئے ہیں۔ وہ ابھی تک سب سن رہے تھے۔ مسٹر پرجاپتی نے کہا کہ وہ ضابطے اور قوانین کے تحت ضروری کارروائی کریں گے۔ اس کے ساتھ ہی اسپیکر اپنے کمرے میں اندر چلے گئے۔ ادھر بھوپیندر مسٹر سنگھ نے بتایا کہ مسٹر گووند سنگھ، تلسی سلاوٹ، ہردیپ سنگھ ڈنگ، جسپال سنگھ ججي، راج وردھن سنگھ دتی گاؤں، ای پی ایس بھدوريا، منالال گوئل، پردیومن سنگھ تومر، جسونت جاٹو، کملیش جاٹو، برجیندر سنگھ یادو، سریش دھاکڑ، مہندر سنگھ سسودیا ، پربھو رام چودھری، محترمہ ایمرتي دیوی، گرراج ڈنڈوتيا، محترمہ رکشا سترام، رگھو راج كنسانا اور رنویر جاٹو نے استعفی دیا ہے۔  ان کے علاوہ کانگریس رکن اسمبلی بیساهولال سنگھ، اَیدِل سنگھ كسانا اور منوج چودھری نے بھی اپنا استعفیٰ اسپیکر کو ارسال کر دیا ہے۔

First published: Mar 10, 2020 09:35 PM IST