ہوم » نیوز » وسطی ہندوستان

مدھیہ پردیش : کورونا کا قہر جاری ، اندور اور اجین سمیت ایک درجن اضلاع میں 10 دنوں کیلئے لاک ڈاؤن کا نفاذ

مدھیہ پردیش میں کورونا کے ایکٹو مریضوں کی تعداد تیس ہزار سے تجاوز کر گئی ہے اور پچھلے چوبیس گھنٹے میں ریاست میں کورونا کے چارہزار چارسو بیاسی نئے معاملات سامنے آئے ہیں ۔ وزیر اعلی شیوراج سنگھ نے کرائسس مینجمنٹ کمیٹی کی میٹنگ کے بعد ریاست میں ایک درجن سے زیادہ مقامات پر دس دن کے لاک ڈاؤن کے نفاذ کا اعلان کردیا ۔

  • Share this:
مدھیہ پردیش : کورونا کا قہر جاری ، اندور اور اجین سمیت ایک درجن اضلاع میں 10 دنوں کیلئے لاک ڈاؤن کا نفاذ
مدھیہ پردیش : کورونا کا قہر جاری ، اندور اور اجین سمیت ایک درجن اضلاع میں 10 دنوں کیلئے لاک ڈاؤن کا نفاذ

بھوپال : مدھیہ پردیش میں کورونا کے بڑھتے قہر نے حکومت اور انتظامیہ کی نیند اڑا دی ہے۔ ریاست میں کورونا کے بڑھتے قہر کے بیچ حکومت کے ذریعہ دموہ کو چھوڑکو جہاں پر اسمبلی ضمنی الیکشن جاری ہے ، پوری ریاست میں ساٹھ گھنٹے کا لاک ڈاؤن جاری ہے ۔ لاک ڈاؤن جمعہ کی شام چھ بجے شروع ہوا تھا ، جو پیر کی صبح چھ بجے تک جاری رہے گا ۔ اس بیچ جب ریاست میں کورونا کے ایکٹو مریضوں کی تعداد تیس ہزار سے تجاوز کر گئی ہے اور پچھلے چوبیس گھنٹے میں ریاست میں کورونا کے چارہزار چارسو بیاسی نئے معاملات سامنے آئے ہیں ، تو وزیر اعلی شیوراج سنگھ نے کرائسس مینجمنٹ کمیٹی کی میٹنگ کے بعد ریاست میں ایک درجن سے زیادہ مقامات پر دس دن کے لاک ڈاؤن کے نفاذ کا اعلان کردیا ۔


مدھیہ پردیش میں کورونا کے بڑھتے قہر کے بیچ پہلے چھندواڑہ میں ایک ہفتے کے لاک ڈاؤن کا نفاذ کیا گیا اور اس کے بعد رتلام اور راجدھانی بھوپال کے کولار علاقہ کے سات وارڈوں میں نو دن کے لئے مکمل لاک ڈاؤن کا نفاذ کیا گیا ہے ۔ وزیر اعلی شیوراج سنگھ کی صدارت میں منعقدہ  کرائسس مینجمنٹ کمیٹی کی میٹنگ کے بعد بڑوانی ، راج گڑھ اور ودیشہ ضلع ، اندور شہر، راؤ نگر، مہو نگر، شاجاپورشہر اور اجین میں انیس اپریل کی صبح چھ بجے تک لاک ڈاؤن کو جاری رکھنے کا فیصلہ کیاگیا ہے ۔ جبکہ بالا گھاٹ، نرسنگھ پور، جبلپور اور سیونی ضلع میں بارہ اپریل کی رات سے بائیس اپریل کی صبح تک لاک ڈاؤن کے نفاذ کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔


وزیر اعلی شیوراج سنگھ کہتے ہیں کہ کورونا کا خاتمہ کرنے کے لئے ہر ممکن کوشش جاری ہے ۔ وبائی بیماری زیادہ سنگین صورتحال اختیار کرتی جا رہی ہے ، اس لئے کچھ سخت فیصلہ لئے گئے ہیں ۔ دوائی کے ساتھ کڑائی بھی ضروری ہے۔ ریاست کے سبھی اضلاع میں کووڈ کے سینٹر بنانے کا فیصلہ کیاگیا ہے ۔ ساتھ ہی ایک لاکھ ریمڈیسیور انجیکشن کو ریاست میں مہا کرنے کے لئے آرڈر کیا جا چکا ہے ۔آکسیجن کی بھی کوئی کمی نہیں ہوگی ۔


وزیر اعلی کے مطابق گجرات، مہاراشٹر، چھتیس گڑھ سے آکسیجن کی سپلائی جاری ہے اور اس وقت ہمارے پاس ایک سو اسی میٹرک ٹن آکسیجن موجود ہے ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Apr 10, 2021 06:13 PM IST