ہوم » نیوز » وسطی ہندوستان

لڑکی نے خالی فلیٹ میں فون کرکے نوجوانوں کو بلایا اور پھر کیا یہ کام ، جان کر رہ جائیں گے حیران

پولیس کے مطابق سی آئی ڈی افسر بن کر تین ملزموں نے شیام پور سیہور کے رہنے والے ایک نوجوان اور اس کے دوستوں سے 83 ہزار روپے لوٹ لئے ۔

  • Share this:
لڑکی نے خالی فلیٹ میں فون کرکے نوجوانوں کو بلایا اور پھر کیا یہ کام ، جان کر رہ جائیں گے حیران
پولیس کے مطابق سی آئی ڈی افسر بن کر تین ملزموں نے شیام پور سیہور کے رہنے والے ایک نوجوان اور اس کے دوستوں سے 83 ہزار روپے لوٹ لئے ۔

مدھیہ پردیش کی راجدھانی بھوپال میں اب سی آئی ڈی افسر کے نام پر لوٹ مار کا معاملہ سامنے آیا ہے ۔ خود کو سی آئی ڈی افسر بتا کر تین بدمعاشوں نے لوٹ مار کی اس واردات کا انجام دیا ۔ گروہ میں ایک لڑکی بھی شامل ہے اور اسی نے نوجوانوں کو جھانسہ دے کر اپنے فلیٹ میں بلایا تھا ۔ پولیس نے گروہ کے خلاف ایف آئی آر درج کرکے ملزم لڑکی کو اپنی گرفت میں لے لیا ہے ۔


یہ واقعہ ایودھیا نگر تھانہ حلقہ میں پیش آیا ۔ پولیس کے مطابق سی آئی ڈی پولیس بن کر تین ملزموں نے شیام پور سیہور کے رہنے والے ایک نوجوان اور اس کے دوستوں سے 83 ہزار روپے لوٹ لئے ۔ یہ واقعہ 26 دسمبر کی شام پانج بجے پیش آیا ۔ اس واقعہ کے بعد نوجوان اتنے خوفزدہ ہوگئے تھے کہ انہوں نے پولیس میں شکایت نہیں درج کرائی ۔ دراصل وہ ملزمین کو سی آئی ڈی افسر ہی سمجھ لئے تھے ۔ گھر پہنچنے کے بعد اہل خانہ نے جب پیسوں کے بارے میں پوچھا تو انہوں نے اس واقعہ کی جانکاری دی ۔ اہل خانہ نے جب سی آئی ڈی افسروں کے بارے میں تفتیش کی تو انہیں شک ہوا ، جس کے بعد اہل خانہ نے تھانہ پہنچ کر شکایت درج کرائی ۔


اے ایس پی سنجے ساہو نے بتایا کہ لوٹ مار کے معاملہ میں کچھ لوگوں کو حراست میں لیا گیا ہے اور جلد ہی اس گروہ کا انکشاف کردیا جائے گا ۔ شیام پور سیہور کا رہنے والا وشنو مینا کسان ہے اور وہ اپنے دو دوستوں ہیم سنگھ اور موہت دانگی کے ساتھ کار میں نئے ٹائر ڈلوانے کیلئے بھوپال آیا تھا ۔ پولیس نے بتایا کہ وشنو کے ایک دوست نے نشاط پور میں رہنے والی اپنی ایک شناسا لڑکی کو موبائل پر فون کیا ۔ لڑکی نے تینوں لڑکوں کو دیو لوک اسپتال کے پاس نریلا جوڑ پر واقع ایک کرایہ کے فلیٹ میں بلایا ۔ تینوں جیسے ہی فلیٹ میں پہنچے تو لڑکی چائے بنانے کا بہانہ بنا کر کمرے سے باہر چلی گئی ۔ اسی دوران تین اجنبی نوجوان کمرے میں داخل ہوئے ۔ تینوں خود کو سی آئی ڈی افسر بتا رہے تھے ۔ انہوں نے بندوق نکالی اور وشنو اور اس کے دوستوں سے 80 ہزار روپے لوٹ لئے اور پھر تین ہزار روپے آن لائن موبائل سے ٹرانسفر کروائے ۔




پتہ چلا ہے کہ گروہ میں شامل لڑکی پہلے نوجوانوں کو اپنی جال میں پھنساتی ہے ۔ انہیں فلیٹ میں بلاتی ہے اور اس کے بعد منصوبہ بند طریقہ سے اس کے تینوں ساتھی وہاں آتے ہیں اور لوٹ مار کرتے ہیں ۔ ملزمین خود کو پولیس اور سی آئی ڈی افسر بتاکر لوٹ مار کی واردات کو انجام دیتے ہیں ۔ پولیس نے موبائل فون نمبر کے ذریعہ ملزم لڑکی کو گرفتار کرلیا ہے ۔ ملزم لڑکی کے ایک ساتھی کا نام یوگیندر ہے ۔ پولیس اب دیگر وارداتوں کے بارے میں ملزمین سے پوچھ گچھ کررہی ہے ۔
First published: Jan 02, 2020 08:41 PM IST