ہوم » نیوز » وسطی ہندوستان

مدھیہ پردیش : استھیاں رکھنے کیلئے عارف مسعود نے دیا لاکر ، بھوپال بھد بھدا شمشان گھاٹ میں کم پڑ رہے تھے لاکر

بھوپال کے سب سے بڑے شمشان گھاٹ بھد بھدا شمشان گھاٹ میں کورونا سے ہونے والی اموات کی آخری رسومات ادا کرنے اور ان کی استھیوں کو رکھنے کے لئے جب لاکر نہیں بچے تو بھوپال کے ایم ایل اے عارف مسعود نے شمشان گھاٹ کمیٹی نے جتنے لاکر مانگے انہیں مہیا کرانے کا کام کیا ہے ۔

  • Share this:
مدھیہ پردیش : استھیاں رکھنے کیلئے عارف مسعود نے دیا لاکر ، بھوپال بھد بھدا شمشان گھاٹ میں کم پڑ رہے تھے لاکر
مدھیہ پردیش : استھیاں رکھنے کیلئے عارف مسعود نے دیا لاکر ، بھوپال بھد بھدا شمشان گھاٹ میں کم پڑ رہے تھے لاکر

نئی دہلی : کورونا قہر میں زندگی کے رنگ اتنے بدل گئے ہیں کہ انہیں دیکھ کر حیرت ہوتی ہے ۔ وبائی بیماری میں انسانی رشتوں کا تقدس اس قدر پامال ہوا ہے کہ بہت سے لوگوں نے کورونا کی وبائی بیماری سے ہونے والی اموات کے بعد اپنوں کی آخری رسومات کو ادا کرنے سے ہی منع کردیا ، مگر اس مشکل گھڑی میں بھی بھوپال کی مشترکہ تہذیب نہ صرف ابھی زندہ ہے ۔ بلکہ اس کے رنگ مزید نمایاں ہوتے جا رہے ہیں ۔ بھوپال کے سب سے بڑے شمشان گھاٹ بھد بھدا شمشان گھاٹ میں کورونا سے ہونے والی اموات کی آخری رسومات ادا کرنے اور ان کی استھیوں کو رکھنے کے لئے جب لاکر نہیں بچے تو بھوپال کے ایم ایل اے عارف مسعود نے شمشان گھاٹ کمیٹی نے جتنے لاکر مانگے انہیں مہیا کرانے کا کام کیا ہے ۔


واضح رہے کہ بھوپال میں کوئی دن ایسا نہیں جاتا ہے ، جب بھوپال کے شمشان گھاٹ اور قبرستان میں کورونا پروٹوکال سے سو سے زیادہ لوگوں کی آخری رسومات ادا نہ کی جاتی ہو۔ شمشان گھاٹ کمیٹی نے نہ کبھی اس کا تصور کیا تھا اور نہ بھوپال میں کبھی ایسے حالات ہوئے تھے کہ اتنی بڑی تعداد میں لوگوں کی ایک ساتھ آخری رسومات ادا کی جائیں اور ان کی استھیوں کو رکھنے کا مسئلہ پیدا ہو۔ شمشان گھاٹ کے مسائل کو لے کر ٹیلی ویزن اور اخبار میں خبریں بھی آئیں لیکن جب کسی نے اس جانب توجہ نہیں دی تو بھوپال کے ایم ایل اے نے انسانیت کا فریضہ ادا کیا ۔


بھوپال بھدھدا شمشان گھاٹ کمیٹی کے سکریٹری ممتیش شرما کہتے ہیں کہ  بھوپال ایم ایل اے عارف مسعود نے جب سنا کہ بھد بھدا وشرام گھاٹ میں استھیوں کو رکھنے میں لاکر کم پڑ رہے ہیں ، تو انہوں انسانیت کا فرض ادا کرتے ہوئے تقریبا ستر لاکر بھیجے ہیں ۔ اس سے نہ صرف استھیوں کو اچھے ڈھنگ سے رکھ پائیں گے بلکہ جن کے لوگ کورونا قہر میں دنیا سے چلے گئے ہیں ، لاکر کی کمی کے سبب ان کی استھیوں کی بے حرمتی نہیں ہوگی اور ہم اپنا کام اور بہتر ڈھنگ سے پائیں گے ۔بھد بھدا وشرام گھاٹ کمیٹی عارف مسعود جی کا دل کی عمیق گہرائیوں سے شکریہ ادا کرتی ہے ۔


وہیں عارف مسعود فینس کلب کے صدر عبد النفیس کہتے ہیں کہ مشکل گھڑی میں انسانیت کے لئے کام کرنے کا ہی ہمیں سبق دیا گیا ہے ۔ ہر دلعزیز ایم ایل اے عارف مسعود نے جب سے کورونا کاقہر آیا ہے ان کی بے لوث خدمت جاری ہے ۔ ضرورتمندوں کو کھانہ تقسیم کرنا،اسپتال میں آکسیجن اور دواکو پہنچانے کا ان کی ہدایت پر عارف مسعود فینس کلب کرتا ہے ۔ اور جب عارف مسعود صاحب کو معلوم ہوا کہ بھد بھدا شمشان گھاٹ میں استھیاں رکھنے کے لئے لاکر نہیں ہیں تو انہوں نے فوری طور پر کمیٹی کے لوگوں سے رابطہ کیا اور انہوں نے جتنے لاکر کا مطالبہ کیا انہیں پہنچایا گیا ہے۔ آگے بھی شمشان گھاٹ کمیٹی کو جو بھی ضرورت ہوگی وہ مہیا کی جائے گی۔

واضح رہے کہ اس سے قبل بھی جب بھوپال کے اسپتالوں سے شمشان گھاٹ اور قبرستان تک میت کو لے جانے کے لئے گاڑی کی مشکلات سامنے آرہی تھی تب بھی بھوپال ایم ایل اے عارف مسعود نے جتنی گاڑیاں قبرستان کمیٹی کو دی تھیں اتنی ہی گاڑیاں انہوں نے شمشان گھاٹ کو بھی دی تھیں ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: May 01, 2021 01:05 AM IST