ہوم » نیوز » وسطی ہندوستان

مدھیہ پردیش سیاسی بحران : کمل ناتھ نے کہا : ثابت کریں گے اکثریت ، جو ممبران اسمبلی گئے وہ رابطے میں ہیں ، اب کانگریس اپنائے گی یہ حکمت عملی

کانگریس ممبران اسمبلی کی میٹنگ کے بعد وزیر اعلی کمل ناتھ نے کہا کہ جو ممبران اسمبلی گئے ہیں ، ہم ان کے رابطے میں ہیں ۔

  • Share this:
مدھیہ پردیش سیاسی بحران : کمل ناتھ نے کہا : ثابت کریں گے اکثریت ، جو ممبران اسمبلی گئے وہ رابطے میں ہیں ، اب کانگریس اپنائے گی یہ حکمت عملی
وزیر اعلی کمل ناتھ کی فائل فوٹو ۔

مدھیہ پردیش میں سیاسی بحران پر وزیر اعلی کمل ناتھ سنگھ نے دعوی کیا ہے کہ وہ اپنی اکثریت ثابت کردیں گے ۔ کانگریس ممبران اسمبلی کی میٹنگ کے بعد وزیر اعلی کمل ناتھ نے کہا کہ جو ممبران اسمبلی گئے ہیں ، ہم ان کے رابطے میں ہیں ۔ کمل ناتھ نے دعوی کیا کہ ان کی حکومت پورے پانچ سال کی مدت کار پوری کرے گی ۔ کانگریس ممبران اسمبلی کی میٹنگ میں 94 ممبران شامل ہوئے ۔ اس درمیان کانگریس کے 22 ممبران نے اپنے عہدہ سے استعفی دیدیا ہے ۔ یہ سبھی ممبران اسمبلی جیوترادتیہ سندھیا کے حامی بتائے جارہے ہیں ۔


ادھر وزیر اعلی کمل ناتھ نے اپنے معتمد سچن سنگھ ورما کو ناراض ممبران اسمبلی کو منانے کی ذمہ داری سونپی ہے ۔ یعنی اب حکومت بچانے کی ذمہ داری سجن سنگھ ورما کے کندھوں پر ہے ۔ ناراض ممبران اسمبلی کو منانے کیلئے وہ کسی بھی وقت بنگلورو کیلئے روانہ ہوسکتے ہیں ۔ سجن سنگھ ورما کے ساتھ دو دیگر وزرا کے بھی وہاں جانے کی خبریں گردش کررہی ہیں ۔ یہ لیڈران خصوصی طیارہ سے جائیں گے ۔



ادھر قانون ساز پارٹی کی میٹنگ میں یہ فیصلہ کیا گیا ہے کہ کانگریس سے ناراض اور غیر مطمئن لیڈروں کو منانے کی کوشش کی جائے گی ۔ ایسا مانا جارہا ہے کہ اس میٹنگ میں دیگر سیاسی متبادلات پر بھی غور و خوض کیا گیا ۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق ممبران اسمبلی کے استعفی منظور نہیں ہوئے ہیں ، لیکن سیاست میں ہر امکانات پر بحث ہوتی ہے ۔ وزیر اعلی کی رہائش گاہ پر ہوئی اس میٹنگ میں 94 ممبران اسمبلی نے شرکت کی ۔ کانگریس لیڈروں کا الزام ہے کہ ممبران اسمبلی کو دھوکہ دے کر راجیہ سبھا انتخابات کی بات کہہ کر لے جایا گیا تھا ۔
First published: Mar 10, 2020 11:01 PM IST