உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Terrorist in Bhopal:اے ٹی ایس نےکیابڑادعویٰ،کہا۔بھوپال سےگرفتارکیےگئےہیں 6مشتبہ دہشت گرد

    Youtube Video

    Bhopal News : ایم پی اے ٹی ایس کے ذریعہ دہشت گردوں کی گرفتاری کے لئے کی گئی چھاپہ مار کاروائی کے بعد تھانہ عیش باغ کے فاطمہ مسجد کے قریب میں واقع اس گھر کو سیل کردیا ہے جس میں مشتبہ دہشت گرد کرایہ پر رہے ہیں ۔ اے ٹی ایس کے ذریعہ اس معاملے میں مکان مالک کے ساتھ مقامی لوگوں سے بھی تفتیش کی جا رہی ہے ۔

    • Share this:
    مدھیہ پردیش اے ٹی ایس (Madhya Pradesh ATS)نے جماعت مجاہدین بنگلہ دیش (Jamat Mujahideen Bangladesh)کے مشتبہ دہشت گردوں(Terrorists) کو بھوپال سے گرفتار کیا ہے۔ مشتبہ دہشت گردوں کو بھوپال(Bhopal) کے تھانہ عیش باغ علاقہ کے فاطمی مسجد کے قریب واقع ایک گھر سے گرفتار کیا گیا ہے۔ اے ٹی ایس نے دہشت گردوں کے پاس سے دھماکہ خیز مادہ کے ساتھ بڑی تعداد میں مذہبی لٹریچر اور کمپیوٹر کو ضبط کیا ہے۔عیش باغ آپریشن کے علاوہ اے ٹی ایس کے ذریعہ بھوپال کے تھانہ نشاط پورا کے کرودھ سے بھی ایک مشتبہ دہشت گرد کو گرفتار کئے جانے کی خبر ہے۔

    اے ٹی ایس نے اپنی پریس نوٹ میں جماعت مجاہدین بنگلہ دیش کے چار مشتبہ دہشت گردوں کی گرفتاری کی تصدیق کی ہے ۔ اے ٹی ایس کی پریس نوٹ کے مطابق فضل علی عرف محمد ولد اشرف اسلام،محمد عقیل عرف احمد ولد نور احمد شیخ ،ظفر الدین عرف ابراہیم ولد شاہد پٹھان اور فضل زیدن العابدین ولد عبد الرحمن کو گرفتار کیاگیا ہے۔

    یہ بھی پڑھیں: Russia-Ukraine War: یوکرین میں موجود ہندوستانی سفارت خانہ کیف سے باہر پولینڈ منتقل، یہ ہے وجہ

    ایم پی اے ٹی ایس کے ذریعہ دہشت گردوں کی گرفتاری کے لئے کی گئی چھاپہ مار کاروائی کے بعد تھانہ عیش باغ کے فاطمہ مسجد کے قریب میں واقع اس گھر کو سیل کردیا ہے جس میں مشتبہ دہشت گرد کرایہ پر رہے ہیں ۔ اے ٹی ایس کے ذریعہ اس معاملے میں مکان مالک کے ساتھ مقامی لوگوں سے بھی تفتیش کی جا رہی ہے ۔مدھیہ پردیش کے وزیر داخلہ ڈاکٹر نروتم مشرا کہتے ہیں پولیس نے دبش دیکر جن لوگوں کو گرفتار کیا ہے ان کا تعلق ممنوعہ تنظیم جماعت مجاہدین بنگلہ دیش جے ایم بی سے نکل کر سامنے آیا ہے۔

    ڈاکٹر نروتم مشرا کا کہناہے کہ ۔۔۔’’یہاں میں آپ کی توجہ اس جانب بھی کرنا چاہوں گا کہ جے ایم بی پر 2019 میں جب پابندی لگائی گئی تھی اس سے قبل بودھ گیا اور وردھما ن میں جو بم دھماکے ہوئے تھے اس میں یہ تنظیم ملوث پائی گئی تھی۔اس کے بعد مرکزی حکومت نے اس تنظیم پر پابندی لگائی تھی ۔‘‘آج چار لوگوں کو گرفتار کیاگیا ہے ان کے پاس سے جہادی لٹریچر،مشکوک دستاویز اور دھماکہ خیز اشیابرآمد ہوئی ہے۔تفتیش جاری ہے اور مزید تفتیش کے بعد جو کچھ سامنے آئے گا وہ آپ کو بتایا جائے گا۔

    یہ بھی پڑھیں:FIFA World CUP 2022: قطری اسٹیڈیم میں کولنگ سسٹمزکاہوگاخاص اہتمام، کیاہےخاص بات
    Published by:Mirzaghani Baig
    First published: