உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    لو جہاد: گرل فرینڈ نے کرائی بوائے فرینڈ کے خلاف ایف آئی آر، پولیس سےکہا- نام بدل کرکی آبروریزی

    مدھیہ پردیش کی راجدھانی بھوپال میں پھر لو جہاد کا معاملہ سامنے آیا ہے۔ الزام ہے کہ ملزم نے خود کو ہندو بتاکر خاتون ڈاکٹر سے دوستی بڑھائی اور اس دوستی کی آڑ میں اس کے ساتھ آبروریزی کی۔ جب خاتون کو اس کی حقیقت معلوم ہوئی تو اس نے اس پر مذہب تبدیل کرنے کا دباو بھی بنایا۔ پولیس نے ڈاکٹر معشوقہ کی شکایت پر ملزم عاشق کے خلاف ایف آئی آر درج کرلی ہے۔

    مدھیہ پردیش کی راجدھانی بھوپال میں پھر لو جہاد کا معاملہ سامنے آیا ہے۔ الزام ہے کہ ملزم نے خود کو ہندو بتاکر خاتون ڈاکٹر سے دوستی بڑھائی اور اس دوستی کی آڑ میں اس کے ساتھ آبروریزی کی۔ جب خاتون کو اس کی حقیقت معلوم ہوئی تو اس نے اس پر مذہب تبدیل کرنے کا دباو بھی بنایا۔ پولیس نے ڈاکٹر معشوقہ کی شکایت پر ملزم عاشق کے خلاف ایف آئی آر درج کرلی ہے۔

    مدھیہ پردیش کی راجدھانی بھوپال میں پھر لو جہاد کا معاملہ سامنے آیا ہے۔ الزام ہے کہ ملزم نے خود کو ہندو بتاکر خاتون ڈاکٹر سے دوستی بڑھائی اور اس دوستی کی آڑ میں اس کے ساتھ آبروریزی کی۔ جب خاتون کو اس کی حقیقت معلوم ہوئی تو اس نے اس پر مذہب تبدیل کرنے کا دباو بھی بنایا۔ پولیس نے ڈاکٹر معشوقہ کی شکایت پر ملزم عاشق کے خلاف ایف آئی آر درج کرلی ہے۔

    • Share this:
      بھوپال: مدھیہ پردیش کی راجدھانی بھوپال میں پھر لو جہاد کا معاملہ سامنے آیا ہے۔ الزام ہے کہ ملزم نے خود کو ہندو بتاکر خاتون ڈاکٹر سے دوستی بڑھائی اور اس دوستی کی آڑ میں اس کے ساتھ آبروریزی کی۔ جب خاتون کو اس کی حقیقت معلوم ہوئی تو اس نے اس پر مذہب تبدیل کرنے کا دباو بھی بنایا۔ پولیس نے ڈاکٹر معشوقہ کی شکایت پر ملزم عاشق کے خلاف ایف آئی آر درج کرلی ہے۔ لو جہاد کا یہ حادثہ اشوکا گارڈن کا ہے۔ ایف آئی آر کا پتہ چلتے ہی ملزم فرار ہوگیا ہے۔ پولیس اس کے ٹھکانوں پر دبش دے رہی ہے۔

      پولیس کے مطابق، بیتول باشندہ خاتون ڈاکٹر نے لو میریج کیا تھا۔ حالانکہ کچھ مینے کے بعد ہی وہ شوہر سے الگ رہنے لگی۔ شوہر کو چھوڑنے کے بعد پیشے سے فیزیو تھیریپسٹ اس لڑکی کی ملاقات ایک اسپتال میں نہال خان نام کے لڑکے سے ہوئی۔ دونوں کی دوستی ہوگئی۔ اس کے بعد نوجوان نے لڑکی کی مجبوری کا فائدہ اٹھایا اور اپنا مذہب چھپاکر پیار کے جال میں پھنسا لیا۔ اس کے بعد وہ لڑکی کی آبروریزی کرنے لگا۔

      متاثرہ خاتون ڈاکٹر نے اپنی شکایت میں پولیس کو بتایا ہے کہ ملزم نے کئی بار اس کے ساتھ مارپیٹ بھی کرچکا ہے۔ ساتھ ہی اسپتال کھولنے کے نام پر اس نے لاکھوں روپئے غبن کرلئے۔ متاثرہ نے بتایا کہ ایک دن جب اسے نہال خان کی اصلیت کے بارے میں پتہ چلا تو اس نے اس کے ساتھ مار پیٹ کی اور اس پر مذہب تبدیلی کرنے کا دباو بنانے لگا۔ جب اس نے مذہب تبدیلی کرنے سے انکار کردیا تو ملزم نہال احمد نے پھر اسے پیٹا اور جان سے مارنے کی دھمکی دی۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: