உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Earthquake in Ladakh:لداخ میں کانپی زمین، محسوس کیے گئے زلزلے کے جھٹکے، ری ایکٹر اسکیل پر 4 رہی شدت

    علامتی تصویر۔(نیوز18ہندی)۔

    علامتی تصویر۔(نیوز18ہندی)۔

    لداخ سے پہلے منی پور کے چوراچاندپور میں اس ہفتے کی شروعات میں زلزلے کے جھٹکے محسوس کیے گئے تھے۔ ری ایکٹر پیمانےپر زلزلے کی شدت 4.3 درج کی گئی تھی۔

    • Share this:
      لداخ:ہندوستان کے مرکز کے زیر انتظام ریاست لداخ میں ہفتہ کی صبح زلزلے (Earthquake) کے جھٹکے محسوس کیے گئے ہیں۔ ری ایکٹر پیمانے پر اس کی شدت 4.0 بتائی گئی ہے۔ ملی جانکاری کے مطابق، زلزلہ دیر رات 2:53 بجے لداخ میں کارگل (Kargil) سے 169 کلو میٹر شمال میں محسوس کیا گیا۔ نیشنل سینٹر فارم سیسمولوجی (National Center for Seismology) نے بتایا ہے کہ ابھی تک اس کی وجہ سے کسی بھی طرح کے جان مال کے نقصان کی کوئی خبر نہیں ملی ہے۔ لداخ سے پہلے منی پور کے چوراچاندپور میں اس ہفتے کی شروعات میں زلزلے کے جھٹکے محسوس کیے گئے تھے۔ ری ایکٹر پیمانےپر زلزلے کی شدت 4.3 درج کی گئی تھی۔


      نیشنل سینٹر فار سیسمولوجی کے مطابق، منگل کی صبح تقریباً 7:52 بجے زلزلے کے جھٹکے سے زمین کانپی۔ حالانکہ اس زلزلے میں بھی کسی بھی طرح کے جان ومال کے نقصان کی کوئی خبر نہیں ملی ہے۔ نیشنل سینٹر نے بتایا کہ میزورم کے نگوپا سے 46 کلو میٹر شمال مشرق میں حالات چوراچادنپور میں جھٹکے محسوس کیے گئے۔ اسی دن اروناچل پردیش کے شمال مغربی علاقے بسر میں بھی زلزلے کے جھٹکے محسوس کیے گئے۔ ری ایکٹر پیمانے پر زلزلے کی شدت 4.9 درج کی گئی تھی۔ نیشنل سینٹر فار سیسمولوجی کے مطابق، منگل کی صبح 4:30 بجے اس طوفان سے لوگوں کی نیند کھل گئی۔

      کیسے کرنا چاہیے حفاظت؟
      اس سے حفاظت کے لئے ضروری ہے کہ زلزلہ مخالف مکان کی تعمیر کروائی جائے۔ آفت کٹ ب نائیں، جن میں ریڈیو، موبائل، ضروری کاغذات، ٹارچ، ماچک، چپل، موم بتی، کچھ پیسے اور ضروری دوائیں ہوں۔ زلزلہ آنے پر بجلی اور گیس فوری بند کردیں۔ اتنا ہی نہیں، لفٹ کا استعمال بھی بالکل نہ کریں۔ جب بھی جھٹکے محسوس ہوں، فوری کھلے مقام کی طرف بھاگیں اور درخت یا بجلی کی لائنوں سے دور رہیں۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: