مہاراشٹر : حکومت سازی کی کوششیں تیز ، کانگریس ، این سی پی اور شیو سینا نے کی پہلی خفیہ میٹنگ

مہاراشٹر میں نئی حکومت بنانے کیلئے شیو سینا ، کانگریس اور این سی پی کی کوآرڈینیشن کمیٹی کی پہلی میٹنگ خفیہ جگہ پر ہوئی ۔

Nov 14, 2019 08:14 PM IST | Updated on: Nov 14, 2019 08:14 PM IST
مہاراشٹر : حکومت سازی کی کوششیں تیز ، کانگریس ، این سی پی اور شیو سینا نے کی پہلی خفیہ میٹنگ

مہاراشٹر: حکومت سازی کی کوششیں تیز، کانگریس ، این سی پی اور شیو سینا نے کی پہلی خفیہ میٹنگ

مہاراشٹر میں نئی حکومت بنانے کیلئے شیو سینا ، کانگریس اور این سی پی کی کوآرڈینیشن کمیٹی کی پہلی میٹنگ خفیہ جگہ پر ہوئی ۔ میٹنگ میں شیو سینا کی طرف سے سبھاش دیسائی اور ایکناتھ شنڈے شامل ہوئے ۔ کانگریس کی طرف سے مانک راو ٹھاکرے اور پرتھوی راج چوہان جبکہ این سی پی کی طرف سے نواب ملک ، چھگن بھجبل اور جینت پاٹل میٹنگ میں شریک میں ہوئے ۔ تینوں ہی پارٹیوں کی کوشش ہے کہ نئی حکومت بنانے سے پہلے کامن منیمم پروگرام بنایا جائے ، جس کے تحت حکومت چلانے میں آسانی ہو ۔ ساتھ ہی ساتھ محکموں کی تقسیم پر بھی غور و خوض جاری ہے ۔

بی جے پی کو تنہا چھوڑ کر تینوں پارٹیوں کی کوشش ہے کہ مہاراشٹر میں ایک نیا اتحاد بنایا جائے ۔ شیو سینا ، کانگریس اور این سی پی کے ذریعہ بنائے گئے اس نئے اتحاد میں یہ کوشش کی جارہی ہے کہ سیکولر معالات کو شامل کیا جائے ، جس میں کسانوں کی پریشانیوں سے لے کر مہاراشٹر کی ترقی کو ترجیح دی جائے جبکہ مینی فیسٹو میں شامل پرو مسلم یا پرو ہندو کے ایجنڈہ کو اس کامن منیمم پروگرام سے دور رکھنے کی کوشش کی جارہی ہے ۔ حالانکہ سبھی پارٹیوں نے واضح کردیا ہے کہ اس پروگرام کو بنانے میں کچھ وقت لگ سکتا ہے اور ایسے میں وہ کوئی بھی قدم پھونک پھونک کر اٹھائیں گی ۔

Loading...

دونوں پارٹیوں کو معلوم ہے کہ وہ الگ الگ نظریہ سے آتی ہیں اور ایسے میں تھوڑی سی بھی غلطی ایک دوسرے کے ووٹ بینک کا نقصان کرسکتی ہے ۔ شاید یہی وجہ ہے کہ کامن منیمم پروگرام بنانے کیلئے الگ الگ جگہوں پر خفیہ میٹنگ کی جارہی ہے ۔ جہاں پہلے کانگریس اور این سی پی ساتھ میں بیٹھ کر کامن منیمم پروگرام بنارہی تھیں ، اب اس میٹنگ میں شیو سینا کے لیڈران کو بھی شامل کیا جارہا ہے ۔ تاکہ شفاف طریقہ سے تینوں پارٹیوں کے سامنے ایک ایجنڈہ بنایا جائے ، جس کے تحت حکومت چلائی جاسکے ۔

Loading...