உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    پی ایم مودی کی سیکورٹی نے آدتیہ ٹھاکرے کو مہاراشٹر سی ایم کی کار سے اتارا، جانئے پھرکیا ہوا...

     Maharashtra Minister Aditya Thackeray get off CM Uddhav car by SPG: مہاراشٹر میں منگل کو وزیر اعظم مودی کے استقبال کے لئے جارہے وزیر آدتیہ ٹھاکرے کو اس وقت عجیب صورتحال کا سامنا کرنا پڑا، جب وزیر اعظم کی سیکورٹی میں تعینات ایس پی جی نے انہیں وزیر اعلیٰ اور ان کے والد ادھوٹھاکرے کی کار سے اترجانے کو کہا۔

     Maharashtra Minister Aditya Thackeray get off CM Uddhav car by SPG: مہاراشٹر میں منگل کو وزیر اعظم مودی کے استقبال کے لئے جارہے وزیر آدتیہ ٹھاکرے کو اس وقت عجیب صورتحال کا سامنا کرنا پڑا، جب وزیر اعظم کی سیکورٹی میں تعینات ایس پی جی نے انہیں وزیر اعلیٰ اور ان کے والد ادھوٹھاکرے کی کار سے اترجانے کو کہا۔

     Maharashtra Minister Aditya Thackeray get off CM Uddhav car by SPG: مہاراشٹر میں منگل کو وزیر اعظم مودی کے استقبال کے لئے جارہے وزیر آدتیہ ٹھاکرے کو اس وقت عجیب صورتحال کا سامنا کرنا پڑا، جب وزیر اعظم کی سیکورٹی میں تعینات ایس پی جی نے انہیں وزیر اعلیٰ اور ان کے والد ادھوٹھاکرے کی کار سے اترجانے کو کہا۔

    • Share this:
      نئی دہلی: منگل کو وزیر اعظم نریندر مودی نے مہاراشٹر میں سن تکارام مہاراج مندر کے افتتاح سمیت کئی تقریب میں شرکت کی تھی۔ اس دوران وہ ممبئی میں اپنے طیارے سے پہنچے تھے۔ ان کا استقبال کرنے کے لئے ریاست کے وزیر اعلیٰ ادھو ٹھاکرے بھی موجود تھے۔ لیکن ادھو ٹھاکرے کو اس وقت عجیب صورتحال کا سامنا کرنا پڑا جب مہاراشٹر کے وزیر ماحولیات اور ان کے بیٹے آدتیہ ٹھاکرے کو وزیر اعظم مودی کی سیکورٹی میں تعینات ایس پی جی نے ان کی کار سے اترنے کے لئے کہا تھا۔ آدتیہ ٹھاکرے اپنے والد کی کار میں بیٹھے ہوئے تھے۔

      ادھو ٹھاکرے اور ایس پی جی میں بحث

      انڈیا ٹوڈے کی خبر کے مطابق، ایس پی جی نے آدتیہ ٹھاکرے سے کہا کہ آپ ادھو ٹھاکرے کی کار میں وزیر اعظم کے استقبال کے لئے نہیں جاسکتے کیونکہ آپ کا نام وی آئی پی فہرست میں شامل نہیں ہے۔ گزشتہ کچھ ماہ سے پی ایم مودی کے مہاراشٹر دورے پر آنے کے دوران آدتیہ ٹھاکرے ہی ان کے استقبال کے لئے جاتے ہیں کیونکہ ادھو ٹھاکرے اور وزیر اعظم مودی کے درمیان تلخ رشتہ ہے، لیکن اس بار انہیں عجیب صورتحال کا سامنا کرنا پڑا۔ حالانکہ اس حادثہ سے وزیراعلیٰ ادھو ٹھاکرے کافی پریشان نظر آئے۔

      ادھو ٹھاکرے نے کہا کہ آدتیہ ٹھاکرے میرے بیٹے کی حیثیت سے وزیر اعظم کا استقبال کرنے نہیں جا رہے ہیں بلکہ وہ ریاست کے وزیر کی حیثیت سے وزیر اعظم سے ملنے جا رہے ہیں۔ جب معاملہ کافی گرم ہوگیا تب آخر کار ایس پی جی نے آدتیہ ٹھاکرے کو وزیر اعظم سے ملنے کی اجازت دی۔ اس کے بعد وزیر اعظم مودی کا ریاست کے وزیر اعلیٰ ادھو ٹھاکرے، گورنر بھگت سنگھ کوشیاری، نائب وزیر اعلیٰ اجیت پوار، آدتیہ ٹھاکرے نے استقبال کیا۔ آدتیہ ٹھاکرے وزیر اعظم مودی کے مہاراشٹر دورہ کے دوران آئی این ایس شکارا ہیلی پورٹ کے پروٹوکول منسٹر بھی تھے۔

      4 ماہ بعد سی ایم-پی ایم کی ملاقات

      مہاراشٹر کے وزیراعلیٰ ادھو ٹھاکرے نے گزشتہ چار ماہ سے وزیر اعظم نریندر مودی کے مہاراشٹر آنے پر استقبال نہیں کیا تھا۔ ہنومان چالیسا تنازعہ کے بعد مانا جا رہا ہے کہ دونوں کے رشتے تلخ ہوگئے تھے۔ کئی مواقع پر ادھو ٹھاکرے وزیر اعظم کے پروگرام میں شرکت کرنے نہیں آئے۔ اس سے پہلے ممبئی کے شنمکھا نند آڈیٹوریم میں جب لتا منگیشکر ایوارڈ تقریب منعقد تھی، تب بھی ادھو ٹھاکرے ندارد رہے تھے۔ اس سے پہلے 6 مارچ کو جب وزیر اعظم پنے میں میٹرو ریل کا افتتاح کرنے گئے تھے، تب بھی ادھو ٹھاکرے وہاں نہیں پہنچے تھے۔ اس وقت شیو سینا کی طرف سے کہا گیا تھا کہ سی ایم سرجری کے بعد صحتیاب ہو رہے ہیں۔ اس لئے پنے نہیں آئے۔ اس سے قبل، وزیر اعظم اور ادھو ٹھاکرے کو آواز کی ملکہ لتا منگیشکر کی آخری رسومات کے موقع پر ایک ساتھ دیکھا گیا تھا۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: