ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

مہاراشٹر میں کورونا کا قہر، ایک دن میں 14 ہزار سے زیادہ کیس، نافذ ہوگا لاک ڈاون؟

ملک میں کورونا وبا سے سب سے زیادہ متاثر رہے مہاراشٹر پر ایک بار پھر لاک ڈاون کا خطرہ منڈرانے لگا ہے۔ جمعرات کو ریاست میں کورونا کے ریکارڈ 14317 نئے معاملے سامنے آئے۔

  • Share this:
مہاراشٹر میں کورونا کا قہر، ایک دن میں 14 ہزار سے زیادہ کیس، نافذ ہوگا لاک ڈاون؟
مہاراشٹر میں کورونا کا قہر، ایک دن میں 14 ہزار سے زیادہ کیس، نافذ ہوگا لاک ڈاون؟

ممبئی: ملک میں کورونا وبا (Covid-19 Pandemic) سے سب سے زیادہ متاثر رہے مہاراشٹر (Maharashtra) پر ایک بار پھر لاک ڈاون (Lockdown) کا خطرہ منڈرانے لگا ہے۔ جمعرات کو ریاست میں کورونا کے ریکارڈ 14317 نئے معاملے سامنے آئے۔ وہیں راجدھانی ممبئی میں اعدادوشمار 1500 سے اوپر چلا گیا ہے۔ ایسے میں ڑیاست میں پھر سے لاک ڈاون کا خدشہ بڑھتا جا رہا ہے۔ خود وزیر اعلیٰ ادھو ٹھاکرے نے کہا ہے کہ وہ آئند 3-2 دنوں میں ریات کے کچھ علاقے میں لاک ڈاون نافذ کرنے پر فیصلہ کرسکتے ہیں۔


اس درمیان اورنگ آباد میں رات 9 بجے سے صبح 7 بجے تک لمیٹیڈ لاک ڈاون کا اعلان کیا گیا ہے۔ اس کے ساتھ ہی ہفتہ اور اتوار کو پورا لاک ڈاون رہے گا۔ موصولہ اطلاعات کے مطابق، 4 اپریل تک یہ محدود لاک ڈاون رہے گا۔ اس دوران صرف ضروری خدمات جاری رہیں گی۔ وہیں ناگپور میں 15 مارچ سے 21 مارچ تک مکمل لاک ڈاون کا اعلان کردیا ہے، صرف ضروری خدمات کی ہی اجازت دی گئی ہے۔


کچھ اضلاع میں پہلے ہی شروع کی جاچکی ہے پابندی


ریاست میں امراوتی اور پنے، جلگاوں جیسے اضلاع میں بھی پابندی عائد کی گئی ہیں۔ ملک میں اس وقت سب سے زیادہ کیس مہاراشٹر سے ہی سامنے آرہے ہیں۔ اسی کے پیش نظر ویکسینیشن کی رفتار بھی تیز کی گئی ہے۔ مہاراشٹر کے بعد سب سے زیادہ متاثر ریاست کیرل ہے۔ حالانکہ دونوں ریاست کے درمیان نئے معاملوں کی تعداد میں بڑا فرق ہے۔

6 ریاستوں سے آئے 85 فیصد معاملات

مرکزی وزارت صحت نے بتایا ہے کہ مہاراشٹر، کیرلا، پنجاب، کرناٹک، گجرات اور تمل ناڈو سے مسلسل کووڈ-19 کے زیادہ معاملے آرہے ہیں اور گزشتہ 24 گھنٹے میں ملک میں سامنے آئے کل معاملات میں ان 6 ریاستوں کی حصہ داری 85.91 فیصد رہی۔ گزشتہ 24 گھنٹے میں ملک میں کووڈ-19 کے 22,854 معاملے آئے۔ اس سے پہلے مرکزی حکومت کا کہنا تھا کہ مہاراشٹر میں کووڈ-19 کے معاملے بڑھنے کے سبب وبا کے تئیں لوگوں کی کم بیداری اور خوف کی کمی ہے۔ بڑھتے معاملات کو دیکھتے ہوئے مرکزی حکومت نے اعلیٰ سطحی ٹیمیں بھیجی ہیں۔ یہ ٹیمیں کورونا سے منسلک نگرانی میں ریاستی حکومت کی مدد کرے گی۔

 

 
Published by: Nisar Ahmad
First published: Mar 12, 2021 07:43 AM IST