உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    مہاراشٹر: BMC الیکشن سے متعلق رشہ کشی جاری، حکومت میں شامل پارٹیاں ہی لگا رہی ہیں الزام

    مہاراشٹر میں ممبئی میونسپل کارپوریشن (BMC) انتخابات کو لے کر سرگرمی جاری ہے تو ریاست میں شامل پارٹی نیشنلسٹ کانگریس پارٹی (NCP)، شیو سینا (Shivsena) اور کانگریس (Congress) میں بھی آپسی رسہ کشی دیکھنے کو مل رہی ہے۔ ناراض لیڈران ایک دوسرے پر الزام تراشی اور جوابی الزام تراشی لگا رہے ہیں۔

    مہاراشٹر میں ممبئی میونسپل کارپوریشن (BMC) انتخابات کو لے کر سرگرمی جاری ہے تو ریاست میں شامل پارٹی نیشنلسٹ کانگریس پارٹی (NCP)، شیو سینا (Shivsena) اور کانگریس (Congress) میں بھی آپسی رسہ کشی دیکھنے کو مل رہی ہے۔ ناراض لیڈران ایک دوسرے پر الزام تراشی اور جوابی الزام تراشی لگا رہے ہیں۔

    مہاراشٹر میں ممبئی میونسپل کارپوریشن (BMC) انتخابات کو لے کر سرگرمی جاری ہے تو ریاست میں شامل پارٹی نیشنلسٹ کانگریس پارٹی (NCP)، شیو سینا (Shivsena) اور کانگریس (Congress) میں بھی آپسی رسہ کشی دیکھنے کو مل رہی ہے۔ ناراض لیڈران ایک دوسرے پر الزام تراشی اور جوابی الزام تراشی لگا رہے ہیں۔

    • Share this:
      ممبئی: مہاراشٹر میں ممبئی میونسپل کارپوریشن (BMC) انتخابات کو لے کر سرگرمی جاری ہے تو ریاست میں شامل پارٹی نیشنلسٹ کانگریس پارٹی (NCP)، شیو سینا (Shivsena) اور کانگریس (Congress) میں بھی آپسی رسہ کشی دیکھنے کو مل رہی ہے۔ ناراض لیڈران ایک دوسرے پر الزام تراشی اور جوابی الزام تراشی لگا رہے ہیں۔ مہا وکاس اگھاڑی (ایم وی اے) کی اتحادی جماعتوں کے لیڈران کا کہنا ہے کہ یہ ایک ایسا اتحاد ہے، جس کو لے کر عام لوگوں کو یہ بھروسہ نہیں تھا کہ یہ ٹک بھی پائے گا یا نہیں۔ حالانکہ یہ اتحاد بنا ہوا ہے اور حکومت چل رہی ہے۔

      اقتدار میں آنے کے لئے اور بی جے پی کو اقتدار سے دور کرنے کے لئے نیشنلسٹ کانگریس پارٹی، شیو سینا اور کانگریس کا اتحاد انوکھا ہے۔ اس میں الگ الگ نظریات والی سیاسی پارٹیاں شامل ہیں۔ ان کا سفر بھی اتار چڑھاو بھرا رہا ہے اور اب ایسا لگ رہا ہے کہ سب کچھ صحیح نہیں چل رہا ہے۔

      اس کے ساتھ ہی بی ایم سی الیکشن سے پہلے کی مصروف بات چیت میں پارٹیاں اپنی اپنی تیاریوں میں مصروف ہوئی ہیں۔ کانگریس کا کہنا ہے کہ آئندہ مقامی بلدیاتی انتخابات سے پہلے خواتین کے لئے بمبئی میونسپل کارپوریشن میں موجودہ وقت میں کانگریس کے دو تہائی سے زیادہ وارڈ ریزرو کرنے کا فیصلہ ہو۔

      25 سالوں سے شیو سینا حاوی سے کانگریس کی ریٹنگ سب سے خراب

      دوسری جانب، کانگریس اور شیو سینا مل کرحکومت میں شامل ضرور ہے، لیکن وہ مقامی الیکشن میں دو الگ الگ جماعتوں کی طرح ہوں گے۔ ملک کی سب سے امیر شہری ادارے بی ایم سی میں گزشتہ 25 سالوں سے شیو سینا ہی حاوی رہی ہے۔ اس کے مقابلے کانگریس کی کارکردگی مسلسل خراب ہی رہی ہے۔ سال 2017 میں کانگریس کی ریٹنگ سب سے خراب رہی تھی۔ کانگریس کے پاس موجودہ وقت میں 29 منتخب کونسلر ہیں۔ حالانکہ اب ان میں سے 21 وارڈ خواتین کے لئے ریزرو ہیں۔

      کانگریس لیڈر ملند دیوڑا نے ناراضگی ظاہر کی

      حکومت میں شامل جماعتوں کے درمیان سب کچھ کیسا چل رہا ہے، اس پر کانگریس لیڈر اور سابق مرکزی وزیر ملند دیوڑا نے ٹوئٹ کیا کہ ’ایم وی اے اتحادی ہونے کے باوجود‘ بی ایم سی کے وارڈ ریزرو کیا ‘سب سے بڑا حادثہ‘ کانگریس تھی۔

      اس ٹوئٹ کے ساتھ انہوں نے پارٹی کے مرکزی قیادت راہل گاندھی اور پرینکا گاندھی کو ٹیگ کیا۔ انہوں نے کہا کہ سیاسی اتحاد ‘یکطرفہ‘ نہیں ہوسکتے۔ کانگریس کے الزامات پر شیو سینا نے انکار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ریاستی الیکشن کمیشن کی نوٹیفکیشن کے مطابق، یہ فیصلہ قرعہ اندازی کے ذریعے کیا گیا تھا۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: