ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

سی اے اے اور این آر سی پر ہنگامہ کی وجہ سے پیھچے چھوٹتے جارہے ہیں اصل ایشوز

سیاسی تجزیہ نگاروں کے مطابق سی اے اے اور این آر سی موجودہ حکومت کی سیاسی پالیسی کا حصہ تھا ، لیکن جس نیت سے یہ قانون لایا گیا ، اب اس مقصد کو حل کرتا نظر نہیں آتا ہے ۔

  • Share this:
سی اے اے اور این آر سی پر ہنگامہ کی وجہ سے پیھچے چھوٹتے جارہے ہیں اصل ایشوز
سی اے اے اور این آر سی ہنگامہ کی وجہ سے پیھچے چھوٹتے جارہے ہیں اصل ایشوز

سی اے اے اور این آر سی کو ملک کے لیے ضروری قرار دیتے ہوئے جہاں مرکزی حکومت نے اپنی پالیسی ظاہر کر دی ہے تو وہیں بی جے پی حکومت کی پالیسی کے خلاف زبردست احتجاج کا سلسلہ بھی جاری ہے ۔ سیاسی تجزیہ نگاروں کا ماننا ہے کہ سی اے اے اور این آر سی جیسے معاملات میں الجھ کرعوام کے اصل ایشوز کہیں پیچھے چھوٹتے نظر آرہے ہیں ۔


ملک کا موجودہ منظر نامہ سی اے اے اور این آر سی کے معاملہ پر حمایت اور مخالفت کی سیاست میں الجھے ملک کی تصویر پیش کرتا نظر آرہا ہے ۔ جانکاروں کے مطابق موجودہ حالات میں احتجاجی مظاہروں کے دوران عوام کے اصل مسائل کی بات تو ہو رہی ہے ، لیکن سی اے اے اور این آر سی کی آڑ میں حکومتیں اور سیاسی جماعتیں عوام کے اصل ایشوز سے دامن بچاتی نظرآرہی ہیں ۔


سیاسی تجزیہ نگاروں کے مطابق سی اے اے اور این آر سی موجودہ حکومت کی سیاسی پالیسی کا حصہ تھا ، لیکن جس نیت سے یہ قانون لایا گیا ، اب اس مقصد کو حل کرتا نظر نہیں آتا ہے ۔   تحفظ ، روزگار اور زندگی کی بنیادی ضروریات کے مسائل آج بھی ہمارے ملک کی بڑی آبادی کے اہم مسائل ہیں ، لیکن دوسرے غیر ضروری ایشوز کے سامنے یہ اہم ایشوز کہیں پیچھے چھوٹتے نظر آرہے ہیں ۔

First published: Jan 29, 2020 07:07 PM IST