ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

ممتا بنرجی کو پھر لگا جھٹکا، کابینی وزیر راجیو بنرجی نے دیا استعفیٰ، بی جے پی میں شامل ہونے کی قیاس آرائی

راجیو بنرجی کا الزام ہے کہ انہیں پارٹی میں ذلیل کرنے کی کوشش کی گئی ہے۔ راجیو بنرجی نے اپنے استعفی کو فیس بک پر بھی شیئر کیا ہے۔ وہ ممتا حکومت میں اب تک وزیر جنگلات کی ذمہ داری سنبھال رہے تھے۔

  • Share this:
ممتا بنرجی کو پھر لگا جھٹکا، کابینی وزیر راجیو بنرجی نے دیا استعفیٰ، بی جے پی میں شامل ہونے کی قیاس آرائی
ممتا بنرجی کو پھر لگا جھٹکا، ایک اور کابینی وزیر راجیو بنرجی نے دیا استعفی

کولکاتا: طویل قیاس آرائیوں کے بعد ممتا بنرجی کابینہ کے ایک اور وزیر راجیوبنرجی نے آج وزارت سے استعفی دے دیا ہے.اس سے قبل شوبھندو ادھیکاری نے وزارت اور ترنمول کانگریس سے استعفیٰ دینے کے بعد بی جے پی شمولیت اختیار کرلی ہے جبکہ سابق کرکٹر اور ریاستی وزیر مملکت لکشمی رتن شکلا نے سیاست سے دور رہنے کا اعلان کرتے ہوئے وزارت چھوڑ دیا تھا۔ راجیو بنرجی ایک عرصے سے وزارت کے کام کاج سے دور تھے اور ان سے متعلق قیاس آرائی کی جارہی تھی وہ بی جے پی میں شامل ہوں گے۔ اس درمیان ترنمول قیادت نے ان سے کئی دور کی بات چیت ہے۔راجیو بنرجی کا الزام ہے کہ انہیں پارٹی میں ذلیل کرنے کی کوشش کی گئی ہے۔


راجیو بنرجی، مغربی بنگال کی ممتا حکومت میں وزیر جنگلات کی ذمہ داری سنبھال رہے تھے۔ انہوں نے گورنر کو ایک خط میں لکھا، "مجھے ریاست کے لوگوں کی خدمت کرنے پر فخر ہے۔ مجھے ایسا موقع دینے کا شکریہ۔ انہوں نے استعفے کے قبول کرنے کی درخواست کی ہے۔
راجیو بنرجی، مغربی بنگال کی ممتا حکومت میں وزیر جنگلات کی ذمہ داری سنبھال رہے تھے۔ انہوں نے گورنر کو ایک خط میں لکھا، "مجھے ریاست کے لوگوں کی خدمت کرنے پر فخر ہے۔ مجھے ایسا موقع دینے کا شکریہ۔ انہوں نے استعفے کے قبول کرنے کی درخواست کی ہے۔


راجیو بنرجی نے اپنے استعفی کو فیس بک پر بھی شیئرکیا ہے۔ راجیو وزیر جنگلات کی ذمہ داری سنبھال رہے تھے۔ انہوں نے گورنر کو ایک خط میں لکھا، "مجھے ریاست کے لوگوں کی خدمت کرنے پر فخر ہے۔ مجھے ایسا موقع دینے کا شکریہ۔ انہوں نے استعفے کے قبول کرنے کی درخواست کی ہے۔ ترنمول کانگریس کے ناراض رہنماؤں کی شکایت ہے کہ پارٹی پرائیوٹ کمپنی بن چکی ہے۔ لیڈروں کے نوکر جیسا سلوک کیا جاتا ہے۔ راجیو بنرجی نے گزشتہ دنوں فیس بک پر لکھا تھا کہ انہوں نے کام کرنے کی کوشش کی مگر پارٹی کے کچھ لیڈروں نے روکاوٹ کھڑی کی اور مجھے ذلیل کرنے کی کوشش کی.میں پارٹی میں کام کرنے کے لئے آیا تھا۔



ترنمول کانگریس چھوڑ کر بی جے پی میں شامل ہونے والے لیڈروں شوبھندو ادھیکاری اور دیگر لیڈروں نے راجیو بنرجی کو بی جے پی میں شامل ہونے کی دعوت دی ہے تاہم راجیو بنرجی نے واضح نہیں کیا ہے کہ ان کا اگلا قدم کیا ہوگا، مگر قیاس آرائی ہے کہ وہ بی جے پی میں شامل ہوں گے اور اس مہینے کے اواخر میں مرکزی وزیر داخلہ امیت شاہ بنگال آرہے ہیں ان کی موجودگی میں وہ بی جے پی کا دامن تھام سکتے ہیں۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Jan 22, 2021 02:59 PM IST