உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Subhas Chandra Bose 125th Birth Anniversary: وزیراعلیٰ ممتا بنرجی نے مرکزی حکومت سے کی اپیل- نیتاجی کی جینتی پر قومی تعطیل کا کریں اعلان

    مغربی بنگال کی وزیراعلیٰ ممتا بنرجی۔ (فائل فوٹو)

    مغربی بنگال کی وزیراعلیٰ ممتا بنرجی۔ (فائل فوٹو)

    سی ایم بنرجی نے ٹوئٹر پر کہا، ’’اس سال کولکاتہ میں یوم جمہوریہ کی پریڈ نیتاجی کو وقف ہوگی۔ مرکزی حکومت کو 23 جنوری کو قومی تعطیل قرار دینا چاہیے۔ ہم یہ دن ملک کے ہیرو کے دن کے طور پر منارہے ہیں۔

    • Share this:
      مغربی بنگال: مغربی بنگال (West Bengal) میں وزیراعلیٰ ممتا بنرجی (CM Mamta Banarjee) نے تحریک آزادی کے مرد مجاہد نیتاجی سبھاش چندر بوس کی یوم پیدائش پر انہیں خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے مرکزی حکومت سے 23 جنوری کو قومی تعطیل قرار دینے کی اپیل کی۔ انہوں نے کہاکہ آزاد ہند فوج کے نام پر راجرہاٹ علاقے میں ایک مقبرہ کے مقام کی تعمیر کی جائے گی اور نیتاجی کے نام پر ایک یونیورسٹی کے قیام کا کام بھی کیا جارہا ہے، جس میں پوری رقم ریاستی حکومت ادا کرے گی۔ وہیں، سی ایم بنرجی نے ٹوئٹر پر کہا، ’’اس سال کولکاتہ میں یوم جمہوریہ کی پریڈ نیتاجی کو وقف ہوگی۔ مرکزی حکومت کو 23 جنوری کو قومی تعطیل قرار دینا چاہیے۔ ہم یہ دن ملک کے ہیرو کے دن کے طور پر منارہے ہیں۔


      دراصل، مغربی بنگال حکومت (West Bengal Government) نے 23 جنوری 2022 تک سال بھر پروگرام کے انعقاد کے لئے ایک کمیٹی تشکیل دی ہے۔ اس دوران نیتاجی کی 125ویں یوم پیدائش کے موعق پر یہاں ایک عظیم ’پدیاترا‘ کا بھی انعقاد کیا جائے گا۔ وزیراعلیٰ نے ٹوئٹر پر بتایا کہ ملک کے ہیرو نیتاجی سبھاش چندر بوس کی 125ویں جینتی پر کروڑ کروڑ سلام۔ ایک قومی اور عالمی علامت، بنگال سے نیتاجی کا عروج ہندوستانی تاریخ میں بے مثال ہے۔ انہوں نے کہا کہ وہ حب الوطنی، بہادری، قیادت، اتحاد اور بھائی چارے کی علامت ہیں۔ نیتاجی نسلوں کے لئے قابل مثال رہے ہیں اور آگے بھی رہیں گے۔

      نیتاجی کے نظریات سے متاثر ہو کر بنگال پلاننگ کمیشن کی ہوگی تشکیل: وزیراعلیٰ ممتا بنرجی
      وہیں، وزیراعلیٰ نے بتایا کہ پروٹوکال پر عمل کرتے ہوئے پوری ریاست میں ان کی 125ویں جینتی ملک ہیرو کے دن کے طو رپر منارہا ہے۔ اس کے ساتھ ہی نیتاجی کے نام پر ایک جئے ہند یونیورسٹی کا قیام بھی عمل میں لایا جارہا ہے جس 100 فیصد مالی فنڈ ریاستی حکومت ادا کرے گی اور اسے غیر ملکی یونیورسٹی کے ساتھ جوڑا جائے گا۔ ساتھ ہی قومی منصوبہ بندی کمیشن کی طرح بنگال پلاننگ کمیشن قائم کی جائے گی، جو ریاست کی منصوبہ بندی سے متعلق پہل میں مدد کرے گا۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: