உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Presidential Election 2022: دروپدی مرمو کے لئے ممتا بنرجی کے لہجے میں آئی نرمی، بولیں- ‘ان کی جیت کے امکانات زیادہ‘

    Mamata Banerjee, Draupadi Murmu, President Election, West Bengal News: وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی نے کہا کہ موجودہ وقت میں برسراقتدار جماعت کے پاس تقریباً 49 فیصد الیکٹورل کالج ہیں اور صدر جمہوریہ کا الیکشن کرانے کے لئے 50 فیصد پوائنٹ کو پار کرنے کی ضرورت ہے، جو بہت مشکل نہیں لگتا۔

    Mamata Banerjee, Draupadi Murmu, President Election, West Bengal News: وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی نے کہا کہ موجودہ وقت میں برسراقتدار جماعت کے پاس تقریباً 49 فیصد الیکٹورل کالج ہیں اور صدر جمہوریہ کا الیکشن کرانے کے لئے 50 فیصد پوائنٹ کو پار کرنے کی ضرورت ہے، جو بہت مشکل نہیں لگتا۔

    Mamata Banerjee, Draupadi Murmu, President Election, West Bengal News: وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی نے کہا کہ موجودہ وقت میں برسراقتدار جماعت کے پاس تقریباً 49 فیصد الیکٹورل کالج ہیں اور صدر جمہوریہ کا الیکشن کرانے کے لئے 50 فیصد پوائنٹ کو پار کرنے کی ضرورت ہے، جو بہت مشکل نہیں لگتا۔

    • Share this:
      نئی دہلی: صدر جمہوریہ عہدے کی امیدوار دروپدی مرمو (Draupadi Murmu) سے متعلق مغربی بنگال کی وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی نے بڑا بیان دیا ہے۔ دروپدی مرمو کو لے کر وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی کے رخ میں جمعہ کے روز بڑی تبدیلی دیکھنے کو ملی۔ انہوں نے ان کے خلاف کی گئی اپنی سبھی بیان بازی کو ٹھکرا دیا اور کہا کہ این ڈی اے امیدوار دروپدی مرمو کے الیکشن میں جیتنے کے امکانات زیادہ ہیں۔

      وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی نے جمعہ کے روز کہا کہ اگر بی جے پی دروپدی مرمو کو الیکشن میں اتارنے سے پہلے اپوزیشن کے ساتھ تبادلہ خیال کرتی تو سبھی اپوزیشن جماعتیں ان کی حمایت کرنے پر غور کرسکتی تھیں۔۔ انہوں نے کہا کہ 18 جولائی کو ہونے والے صدارتی الیکشن میں مرمو کے جیتنے کے زیادہ امکانات ہیں۔ ممتا بنرجی نے کولکاتا کے اسکان میں رتھ یاترا کے افتتاح کے دوران یہ باتیں کہیں۔

      مہاراشٹر میں اقتدار تبدیلی اہم وجہ

      دروپدی مرمو کے الیکشن جیتنے کے امکانات کے پیچھے ممتا بنرجی نے مہاراشٹر کو وجہ بتایا۔ انہوں نے کہا کہ مہاراشٹر میں اقتدار تبدیلی کے بعد این ڈی اے کی صورتحال مزید مضبوط ہوگئی ہے۔ انہوں نے زور دیا کہ بی جے پی کو اس پر پہلے تبادلہ خیال کرنا چاہئے کیونکہ ایک اتفاق رائے والا امیدوار ہمیشہ ہی ملک کے لئے بہتر ہوتا ہے۔

      وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی نےکہا کہ اگر بی جے پی دروپدی مرمو کو الیکشن میں اتارنے سے پہلے اپوزیشن کے ساتھ تبادلہ خیال کرتی تو سبھی اپوزیشن جماعتیں ان کی حمایت کرنے پر غور کرسکتی تھیں۔
      وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی نےکہا کہ اگر بی جے پی دروپدی مرمو کو الیکشن میں اتارنے سے پہلے اپوزیشن کے ساتھ تبادلہ خیال کرتی تو سبھی اپوزیشن جماعتیں ان کی حمایت کرنے پر غور کرسکتی تھیں۔


      واضح رہے کہ ممتا بنرجی نے اپوزیشن کی طرف سے صدر جمہوریہ امیدوار کے لئے اپوزیشن کے ساتھ مل کر کئی میٹنگ کی تھی۔ کافی نام تلاش کرنے کے بعد اپوزیشن نے مشترکہ امیدوار کے طور پر سابق مرکزی وزیر یشونت سنہا کو صدر جمہوریہ کو امیدوار بنائے جانے کا اعلان کیا گیا ہے۔

      انہوں نے کہا کہ موجودہ وقت میں برسراقتدار جماعت کے پاس تقریباً 49 فیصد الیکٹورل کالج ہیں اور صدر جمہوریہ کا الیکشن کرانے کے لئے 50 فیصد پوائنٹ کو پار کرنے کی ضرورت ہے، جو بہت مشکل نہیں لگتا۔

      یہ بھی پڑھیں۔

      محمد زبیر کی پولیس ریمانڈ پر ہائی کورٹ نے دہلی پولیس کو جاری کیا نوٹس، 4 ہفتے میں مانگا جواب

      واضح رہے کہ صدر جمہوریہ امیدوار دروپدی مرمو ایک آدیواسی خاتون ہیں اور وہ اڑیسہ ریاست سے تعلق رکھتی ہیں۔ وہ جھارکھنڈ کی سابق گورنر ہیں۔ اگر وہ صدر جمہوریہ بنتی ہیں تو ملک کے سب سے اعلیٰ عہدے پر پہنچنے والی وہ پہلی آدیواسی خاتون ہوں گی۔

      ممتا بنرجی نے کہا کہ آدیواسیوں کے تئیں ہمارے جذبات ہیں۔ اگر بی جے پی پہلے اپوزیشن جماعتوں کو بتاتی کہ وہ صدر جمہوریہ عہدے کے لئے کسی آدیواسی کو نامزد کریں گے تو سبھی اپوزیشن جماعتیں بیٹھ کر اس پر تبادلہ خیال کرسکتے تھے، لیکن برسراقتدار جماعت نے ہمیں صرف مشورہ طلب کرنے کے لئے بلایا تھا۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: