உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    مودی حکومت کے پاس عوام کی فلاح و بہبود کا کوئی ایجنڈا نہیں : ممتابنرجی

    ممتا بنرجی: فائل فوٹو

    ممتا بنرجی: فائل فوٹو

    مغربی بنگال کی وزیرا علیٰ ممتا بنرجی اس وقت بنگال میں سرمایہ کاری کیلئے صنعت کاروں کو راغب کرنے کیلئے یورپ کے دو ممالک جرمن اور اٹلی کے دورے پرہیں ۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:
      مغربی بنگال کی وزیرا علیٰ ممتا بنرجی اس وقت بنگال میں سرمایہ کاری کیلئے صنعت کاروں کو راغب کرنے کیلئے یورپ کے دو ممالک جرمن اور اٹلی کے دورے پرہیں ۔نے نامہ نگاروں سے بات کرتے ہوئے مودی کی قیادت والی مرکزی حکومت کو ’’عوام مخالف قرار دیتے ہوئے‘‘ کہا کہ مرکزی حکومت عوام کی فلاح وبہبود کیلئے کچھ بھی نہیں کررہی ہے۔دوسری جانب اشتہارات پر کروڑوں روپے خرچ کررہی ہے۔ملک کے بیشتر عوام مرکزی حکومت کے خلاف ہیں ۔اگلے انتخابات میں مودی کی شکست یقینی ہے ۔
      جرمن میڈیا سے بات کرتے ہوئے ممتا بنرجی نے کہا کہ اگلے سال ہونے والے پارلیمانی انتخابات مودی حکومت کے خلاف ریفرینڈم ہوگا ۔عوام یہ جاننے کی کوشش کررہی ہے کہ پانچ سالوں میں مودی حکومت نے کیا ہے ۔اگر مودی دوبارہ اقتدار میں آتے ہیں تو ملک بربادی کے دہانے پر آجائے گا۔عوام کو بھی احساس ہے کہ مودی حکومت کی واپسی کی صورت میں ملک کا متحد رہنا مشکل ہوجائے گا۔
      وزیرا علیٰ نے کہا کہ یہ ریفرنڈم ہی ہوگا کیوں کہ ملک کا ہر ایک باشندہ بی جے پی کے خلاف ہے ۔2019میں مودی کو اقتدار سے بے دخل کرنے کیلئے ملک کے عوام متحد ہیں ۔اگر انتخابات بیلٹ پیپر سے ہوتے ہیں تو بی جے پی کو شکست سے کوئی نہیں بچا سکتا ہے ۔
      وزیرا علیٰ ممتا بنرجی نے کہا کہ ’’بنگال گلوبل بزنس سمٹ کا بہت ہی رول رہا ہے اور اس سمٹ کی وجہ سے بنگال میں بڑے بڑے صنعت کار سرمایہ کاری کیلئے رضامند ہوئے ہیں ۔کئی بڑے صنعتکاروں نے یہاں سرمایہ کاری کی ہے جس کی وجہ سے جوانوں کو روزگار ملیں ہے۔یہ کوئی مذاق نہیں ہے کہ 35سے 40ممالک کے نمائندے اس سمٹ میں شریک ہوتے ہیں ۔
      First published: