اپنا ضلع منتخب کریں۔

    تمل ناڈو، آندھراپردیش اور پڈوچیری کی جانب بڑھ رہا ’منڈوس‘طوفان،12اضلاع میں آرینج الرٹ

    تمل ناڈو، آندھراپردیش اور پڈوچیری کی جانب بڑھ رہا ’منڈوس‘طوفان،12اضلاع میں آرینج الرٹ

    تمل ناڈو، آندھراپردیش اور پڈوچیری کی جانب بڑھ رہا ’منڈوس‘طوفان،12اضلاع میں آرینج الرٹ

    محکمہ موسمیات نے تمل ناڈو میں 8 دسمبر کے لیے 13 اضلاع میں ریڈ الرٹ اور 9 دسمبر کے لیے 12 اضلاع میں آرینج الرٹ جاری کیا ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Tamil Nadu | Andhra Pradesh | Puducherry (Pondicherry)
    • Share this:
      خلیج بنگال سے شروع ہوا منڈوس طوفان تمل ناڈو، آندھراپردیش اور پڈوچیری کی جانب بڑھ رہا ہے۔ طوفان کی وجہ سے ان ریاستوں میں زبردست بارش، بجلی اور تیز ہوا کا اندیشہ ظاہر کیا جارہا ہے۔ خطرے کے اندیشے کے پیش نظر این ڈی آر ایف، نیوی اور دیگر ادارو کو تیار رہنے کے لیے کہا گیا ہے۔

      خبر رساں ایجنسی این آئی اے کے مطابق، طوفان منڈوس کو لے کر تیاری کے بارے میں اطلاع دیتے ہوئے این ڈی آر ایف اراککونم، 4 بٹالین، کے سب انسپکٹر اور کمانڈر سندیپ کمار نے بتایا کہ ہماری ٹیم ہر طرح کے آلات کے ساتھ تیار ہے۔ ہماری ٹیم کے ارکان کو ان کے علاقوں میں تربیت دی جاتی ہے۔ جب بھی ہمیں مدد کے لیے فون آئے گا، ہم فوری موقع پر پہنچیں گے۔

      یہ بھی پڑھیں:
      اسلام ۔ عیسائی مذہب اپنانے والے دلتوں کو 'ایس سی' کا درجہ نہیں دے سکتے، مرکز نے SC سے کہا

      یہ بھی پڑھیں:
      سرحد تنازع کو لے کر احتجاج جاری، کرناٹک نے مہاراشٹر کیلئے بس خدمات روکیں

      سدھو موسے والا قتل کیس: سنگر ببو مان اور منکیرت اولکھ سے ایس آئی ٹی نے کی پوچھ گچھ

      تمل ناڈو کے 12 اضلاع میں جاری کیا گیا آرینج الرٹ
      8 اور 9 دسمبر کو تمل ناڈو کے چنئی سمیت تمام ساحلی علاقوں میں بھاری بارش اور تیز ہوائیں چلنے کے آثار ہیں۔ محکمہ موسمیات نے تمل ناڈو میں 8 دسمبر کے لیے 13 اضلاع میں ریڈ الرٹ اور 9 دسمبر کے لیے 12 اضلاع میں آرینج الرٹ جاری کیا ہے۔ نیشنل کرائسس مینجمنٹ کمیٹی کے کابینہ سکریٹری راجیو گابا نے تیاریوں کا جائزہ لینے کے بعد کہا کہ ہماری کوشش ہے کہ طوفان کی وجہ سے جانی و مالی نقصان کم سے کم ہو۔ منڈوس طوفان کا نام متحدہ عرب امارات (یو اے ای) کی جانب سے دیا گیا ہے۔ ہندی میں اس کا مطلب ’خزانہ‘ ہے۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: