کھٹر دوسری بار بنیں گے ہریانہ کے وزیر اعلی، کل دوپہر 2 بجے لیں گے حلف، ریاست میں ہو گا ایک نائب وزیر اعلیٰ

ذرائع کے مطابق، کھٹر کل یعنی اتوار کو دوپہر دو بجے چندی گڑھ واقع راج بھون میں وزیر اعلیٰ عہدہ کا حلف لیں گے۔

Oct 26, 2019 02:10 PM IST | Updated on: Oct 26, 2019 02:17 PM IST
کھٹر دوسری بار بنیں گے ہریانہ کے وزیر اعلی، کل دوپہر 2 بجے لیں گے حلف، ریاست میں ہو گا ایک نائب وزیر اعلیٰ

وزیراعلی منوہر لال کھٹر دوسری بار ہریانہ کے وزیر اعلی بنیں گے۔

چندی گڑھ ۔ وزیراعلی منوہر لال کھٹر دوسری بار ہریانہ کے وزیر اعلی بنیں گے۔ انہیں آج یہاں بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کی قانون ساز پارٹی کا متفقہ طور پر لیڈر منتخب کر لیا گیا۔ پارٹی کے 40 نو منتخب اراکین اسمبلی کی یہاں یونین گیسٹ ہاؤس میں تقریبا 11.30 بجے میٹنگ ہوئی۔ میٹنگ میں مرکزی وزیر روی شنکر پرساد اور پارٹی کے قومی جنرل سکریٹری ارون سنگھ بطور مرکزی مشاہد اور ریاستی معاملات کے انچارج انل جین بھی موجود تھے۔ تقریباً دس منٹ تک جاری رہنے والی اس میٹنگ میں پارٹی اراکین کے لیڈر کے عہدہ کے لئے کھٹر کے نام کی تجویز پیش کی گئی جس پر سب نے متفقہ طور پر رضامندی کا اظہار کیا۔

Loading...

میٹنگ کے بعد کھٹر ہریانہ کے گورنر ستیہ دیو نارائن سے ملاقات کریں گے اور ریاست میں اگلی حکومت سازی کا دعویٰ پیش کریں گے۔ ذرائع کے مطابق، کھٹر کل یعنی اتوار کو دوپہر دو بجے چندی گڑھ واقع راج بھون میں وزیر اعلیٰ عہدہ کا حلف لیں گے۔ ذرائع نے ساتھ ہی بتایا کہ ریاست میں دو نائب وزیر اعلیٰ ہو سکتے ہیں۔ حالانکہ بی جے پی کے سینئر لیڈر اور مرکزی وزیر روی شنکر پرساد نے واضح کیا کہ ریاست میں ایک ہی نائب وزیر اعلیٰ ہو گا۔

اس سے پہلے بی جے پی صدر امت شاہ بھی یہ واضح کر چکے ہیں۔ نائب وزیر اعلیٰ کا عہدہ پارٹی کی حلیف دشینت چوٹالہ کی جننائک جنتا پارٹی ( جے جے پی) کو دیا جا رہا ہے۔ اس بیچ جے جے پی سے منسلک ذرائع نے بتایا کہ پارٹی نینا چوٹالہ کو نائب وزیر اعلیٰ بنانے پر غور کر رہی ہے۔ نینا دشینت کی ماں اور ابھے چوٹالہ کی اہلیہ ہیں۔

بی جے پی کو اس اسمبلی انتخابات میں 40 سیٹیں ملی تھیں اور اس طرح وہ اکثریت کےاعداد و شمار سے چھ سیٹ پیچھے رہ گئی ہے۔ ایسے میں ریاست میں مستحکم حکومت بنانے کے لئے اس نےجے جے پی کے ساتھ آزاد اسمبلی ارکان كو بھی اپنےساتھ لیا ہے۔ جے جے پی نے 10 سیٹیں جیتی ہیں جبکہ سات آزاد ممبران اسمبلی ہیں۔ ریاست کی 90 رکنی اسمبلی میں حکومت کے پاس اب 57 ممبران اسمبلی ہوں گے تو اکثریت کے جادو کے اعداد و شمار سے 11 زیادہ ہیں۔2014 کے اسمبلی انتخابات میں بی جے پی کو 47 سیٹیں ملی تھیں اور ریاست میں اس نے سب سے پہلے اپنے دم پرحکومت بنائی تھی۔

یو این آئی، اردو کے ان پٹ کے ساتھ

Loading...
Listen to the latest songs, only on JioSaavn.com