ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

کرناٹک میں کورونا ہوگیا ہائی پرفائل، اراکین پارلیمنٹ اور اراکین اسمبلی کورونا کی زد میں

اراکین اسمبلی اور اراکین پارلیمنٹ بھی کرناٹک میں کورونا کے شکار ہو رہے ہیں۔ وزراء کے گھروں پر بھی کورونا نے قبضہ جما لیا ہے۔ تازہ معاملہ ضلع گلبرگہ کے دو اراکین اسمبلی کا ہے۔ ضلع گلبرگہ کے تعلقہ وحلقہ اسمبلی جیورگی کے رکن اسمبلی ڈاکٹر اجے سنگھ اس کا نشانہ بنے ہیں۔

  • Share this:
کرناٹک میں کورونا ہوگیا ہائی پرفائل، اراکین پارلیمنٹ اور اراکین اسمبلی کورونا کی زد میں
کرناٹک میں کورونا ہوگیا ہائی پرفائل، اراکین پارلیمنٹ اور اراکین اسمبلی کورونا کی زد میں

کرناٹک: کہا جا رہا کہ کورونا کا کوئی مذہب نہیں ہے۔ نہ اس کی کوئی ذات ہے اور نہ ہی اس کے سامنے امیر غریب کا فرق نہ عام و خاص کی تفریق۔ کرناٹک کی صورتحال دیکھ کر اس بات کو یقین کرنے کو جی بھی چاہتا ہے۔ کرناٹک میں کورونا سے جہاں عام آدمی پریشان ہے۔ وہیں ہائی پروفائل سیاستدان بھی اس کی زد میں آگئے ہیں۔ اراکین اسمبلی اور اراکین پارلیمنٹ بھی کرناٹک میں کورونا کے شکار ہو رہے ہیں۔ وزراء کے گھروں پر بھی کورونا نے قبضہ جما لیا ہے۔ تازہ معاملہ ضلع گلبرگہ کے دو اراکین اسمبلی کا ہے۔ ضلع گلبرگہ کے تعلقہ وحلقہ اسمبلی جیورگی کے رکن اسمبلی ڈاکٹر اجے سنگھ اس کا نشانہ بنے ہیں۔ ڈاکٹر اجے سنگھ نے جمعہ کو ٹوئٹ کرکے اپنے کورونا پوزیٹیو ہونےکی  تصدیق کی ہے۔ساتھ ہی اپنےحلقہ احباب کو چوکس رہنے اوراحتیاط کرنے کا مشورہ دے ڈالا۔


اجے سنگھ جو کہ خود ایک ایم ڈی ڈاکٹر ہیں، وہ بھی لاکھ جتن کے باوجود خود کو کورونا سے محفوظ نہیں رکھ سکے۔ وہیں ضلع گلبرگہ کے ہی تعلقہ و حلقہ اسمبلی سیڑم کے رکن اسمبلی راجکمار پاٹل تیلکور بھی کورونا کی لپیٹ میں آگئے ہیں۔ اراکین اسمبلی کے علاوہ ان کی اہلیہ اور 8 سالہ لڑکے کی رپورٹ جمعرات کو پوزیٹیو آئی ہے۔ کورونا وائرس پارٹی خطوط کو بھی نظر انداز کر رہا ہے۔ راجکمار پاٹل تیلکور بی جے پی کے رکن اسمبلی ہیں۔ وہیں ڈاکٹر اجے سنگھ کانگریس کے ایم ایل ہیں۔ اتنا ہی نہیں آزاد ایم ایل اے بھی کورونا کی زد سے باہر نہیں ہیں۔ ہوسا کوٹے سے تعلق رکھنے والے آزاد ایم ایل اے شرت بچے گوڈا  اور ان کی اہلیہ بھی کورونا کی چپیٹ میں آگئے ہیں۔


کرناٹک میں کورونا سے جہاں عام آدمی پریشان ہے۔ وہیں ہائی پروفائل سیاستدان بھی اس کی زد میں آگئے ہیں۔ اراکین اسمبلی اور اراکین پارلیمنٹ بھی کرناٹک میں کورونا کے شکار ہو رہے ہیں۔ وزراء کے گھروں پر بھی کورونا نے قبضہ جما لیا ہے۔
کرناٹک میں کورونا سے جہاں عام آدمی پریشان ہے۔ وہیں ہائی پروفائل سیاستدان بھی اس کی زد میں آگئے ہیں۔ اراکین اسمبلی اور اراکین پارلیمنٹ بھی کرناٹک میں کورونا کے شکار ہو رہے ہیں۔ وزراء کے گھروں پر بھی کورونا نے قبضہ جما لیا ہے۔


منگلورو نارتھ ایم ایل اے وائی بھرت شیٹی بھی کورونا کا شکار ہو چکے ہیں۔ ایک اور ایم ایل اے ایچ ڈی رنگناتھ بھی پوزیٹیو پائے گئے ہیں۔ ایچ ڈی رنگناتھ کونیگل حلقہ اسمبلی سے نمائندگی کرتے ہیں۔ کورونا صرف اراکین اسمبلی ہی کو نہیں بلکہ اراکین پارلیمنٹ کو بھی اپنے گھیرے میں لے رہا ہے۔ حلقہ لوک سبھا منڈیا سے رکن پارلیمنٹ سوم لتا امبریش کورونا پوزیٹیو پائی گئی ہیں۔ سوم لتا کا تعلق بھی نہ کانگریس سے ہے اور نہ ہی بی جے پی سے بلکہ وہ آزاد اراکین پارلیمنٹ، اس کے باوجود کورونا انھیں آزاد نہیں رکھا۔ اتنا ہی نہیں کورونا کے دائرے سے وزراء کے گھر بھی محفوظ نہیں رہے۔

کرناٹک کے وزیر طبی تعلیم ڈاکٹر کے سدھا کرکے والد، بیوی اور ان کی بیٹی کورونا سے متاثر ہو چکے ہیں۔ ایسا ہی نہیں کہ کورونا صرف بر سر اقتدار سیاستدانوں کو اپنی لپیٹ میں لے رہا ہے۔ سابق اراکین قانون ساز کونسل اور سابق اراکین پارلیمنٹ اور سابق مرکزی وزیر بھی اس کی زد میں ہیں۔ سابق ایم ایل سی پٹنا اور سابق رکن پارلیمنٹ جناردن پجاری بھی کورونا کی زد میں ہیں۔ جناردن پجاری مرکزی وزیر بھی رہ چکے ہیں۔ اس کے علاوہ کرناٹک پردیش کانگریس کمیٹی کے صدر بھی رہ چکے ہیں۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Jul 10, 2020 10:22 PM IST