ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

تبلیغی جماعت مرکز معاملہ: سی بی آئی جانچ سے متعلق مودی حکومت سے جواب طلب

درخواست گزار نے کورونا وائرس سے لوگوں کی زندگی کی حفاظت میں لاپرواہی کا رویہ اپنانے کے تعلق سے مرکزی اور دہلی حکومت پرغیر فعالیت کا الزام عائد کیا۔

  • UNI
  • Last Updated: May 28, 2020 12:28 AM IST
  • Share this:
تبلیغی جماعت مرکز معاملہ: سی بی آئی جانچ سے متعلق مودی حکومت سے جواب طلب
تبلیغی جماعت مرکز معاملہ: سی بی آئی جانچ سے متعلق مودی حکومت سے جواب طلب

نئی دہلی: سپریم کورٹ نے نظام الدین مرکز معاملے کی مرکزی تفتیشی بیورو (سی بی آئی)سے جانچ کرائے جانے سے متعلق درخواست پر مرکزی حکومت سے بدھ کو جواب طلب کیا۔ چیف جسٹس شرد اروند بوبڑے، جسٹس اے ایس بوپنا اور جسٹس ہریشکیش رائے کی بنچ نے وکیل سپریا پنڈت کی درخواست پر مرکزی ودہلی حکومت کو نوٹس جاری کیا۔


درخواست گزار نے کورونا وائرس سے لوگوں کی زندگی کی حفاظت میں لاپرواہی کا رویہ اپنانے کے تعلق سے مرکزی اور دہلی حکومت پرغیر فعالیت کا الزام عائد کیا۔ بنچ نے سالیسیٹر جنرل تشار مہتا سے حکومت کاموقف جاننا چاہا،جس پر انہوں نے ایک ہفتہ کا وقت طلب کیا جسے عدالت نے منظور کرلیا۔


چیف جسٹس شرد اروند بوبڑے، جسٹس اے ایس بوپنا اور جسٹس ہریشکیش رائے کی بنچ نے وکیل سپریا پنڈت کی درخواست پر مرکزی ودہلی حکومت کو نوٹس جاری کیا۔
چیف جسٹس شرد اروند بوبڑے، جسٹس اے ایس بوپنا اور جسٹس ہریشکیش رائے کی بنچ نے وکیل سپریا پنڈت کی درخواست پر مرکزی ودہلی حکومت کو نوٹس جاری کیا۔


درخواست گزار کا کہنا ہے کہ آخر کورونا کے سبب نافذ لاک ڈاؤن کے باوجود ملکی وغیرملکی کیوں بڑی تعداد میں مرکز میں جمع ہوئے،جبکہ پروگرام لاک ڈاؤن سے ایک ہفتہ قبل ختم ہوگیا تھا۔ درخواست گزار کا کہنا ہے کہ نظام الدین مرکز میں غیر ملکی نمائندوں سمیت بڑے پیمانے پر لوگوں کو اکٹھا ہونے کی اجازت کیسے دی گئی؟جبکہ دنیا بھر میں کورونا وبا کا خطرہ پیدا ہورہا تھا۔درخواست گزار نے دہلی پولیس کے کردار پر بھی سوال کھڑے کئے ہیں۔
First published: May 28, 2020 12:28 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading