ہوم » نیوز » وسطی ہندوستان

مسلمان ،نمازجمعہ کے لیے گھر سے وضو کرکے جائیں مسجد:علمائے دین کی اپیل

نماز جمعہ کے موقعہ پر تمام ہی مساجد میں آئمہ وکورونا وائرس کے خطرات اور اس بچاؤ کے احتیاطی تدابیر کے بارے میں خصوصی بیان کرینگے

  • Share this:
مسلمان ،نمازجمعہ کے لیے گھر سے وضو کرکے جائیں مسجد:علمائے دین کی اپیل
نمازیوں سے گھر سے وضو کر کے مسجد جانے کا مشورہ

کورونا وائرس کی زد میں اس وقت پوری دنیا ہے ۔مرکزی حکومت کےساتھ صوبائی حکومتوں نے بھی شہریوں کے تحفظ کے پیش نظر جہاں اسکول،کالج،سنیما ہال ،آنگن باڑی کو بند کرنے کا فیصلہ کیا ہے -وہیں مدھیہ پردیش سے مہاراشٹر کو جانے والی بسوں کو بھی 31 مارچ تک  بند کرنے کا فیصلہ کیاگیاہے۔ عالمی شہرت کی حامل باگلا مکھی مندر کے پٹ کو کورونا وائرس کے خطرات کے پیش نظر دو اپریل تک بند کرنے کا فیصلہ کیاگیا ہے۔مندر میں آرتی تو ہوگی لیکن  عام لوگ مندر کی آرتی میں شریک نہیں ہو سکیں گے۔ بھوپال مساجد کمیٹی میں بھی کورونا وائرس کے خطرات کے پیش علمائے دین کی میٹنگ کا انعقاد کیاگیا ۔ میٹنگ میں علمائے دین نے نمازیوں سے جہاں گھر سے وضو کر کےمساجد آنے کا مشورہ دیا ۔


وہیں مساجد کی صفائی اور مساجد کے آس پاس جراثیم کش ادویات کے چھڑکاؤ کے لئے بھی نگر نگم اور تمام اضلاع کے کلکٹرس کو خط لکھ کر درخواست کی گئی ۔ نکاح ،شادی ،منگنی کی رسم کو سادگی سے کرنے کے ساتھ ہر جگہ پر مساک پہننے اور سینٹا ئزر کا استعمال کرنے کا بھی مشورہ دیا گیا۔مساجد کمیٹی کے سکریٹری ایس ایم سلمان کہتے ہیں کہ میٹنگ میں کورونا وائرس کے خطرات کے پیش نظر نمازیوں سے گھر سے وضو کر کے مسجد جانے کا مشورہ تو دیا ہی گیا ہے وہیں آئمہ کو کورونا وائرس کے خطرات کے بارے میں نمازیوں کو آگاہ کرنے کا بھی مشورہ دیا گیا ہے۔


 نماز جمعہ کے موقعہ پر تمام ہی مساجد میں آئمہ وکورونا وائرس کے خطرات اور اس بچاؤ کے احتیاطی تدابیر کے بارے میں خصوصی بیان کرینگے
نماز جمعہ کے موقعہ پر تمام ہی مساجد میں آئمہ وکورونا وائرس کے خطرات اور اس بچاؤ کے احتیاطی تدابیر کے بارے میں خصوصی بیان کرینگے


کل نماز جمعہ کے موقعہ پر تمام ہی مساجد میں آئمہ وکورونا وائرس کے خطرات اور اس بچاؤ کے احتیاطی تدابیر کے بارے میں خصوصی بیان کرینگے ۔ساتھ ہی سبھی نگرنگم اور ضلع کلکٹرس سے مساجد کی صفائی اور جراثیم کص ادویات کے چھڑکاؤ کی مانگ کی گئی ہے۔ نکاح،منگنی اور دوسری خوشی کی تقریب میں کم سے کم لوگوں کی شرکت کا مشورہ دیا گیا ہے ۔احتیاطی تدابیر کی روشنی میں علمائے دین کی قیادت میں ہم اس وبا پر بہت جلد قابو پانے میں مدد ملے گی ۔
First published: Mar 19, 2020 11:24 PM IST