سماجوادی پارٹی کے سینئر لیڈر اعظم خان کی گرفتاری کی خبر سوشل میڈیا پر وائرل ، جانیں کیا ہے سچ ؟

سماجوادی پارٹی کے سینئر لیڈر اعظم خان کو اتوار دیر رات مولانا جوہر علی یونیورسٹی کیمپس سے گرفتار کئے جانے کی خبر سوشل میڈیا پر کافی وائرل ہوگئی ۔

Oct 28, 2019 10:55 PM IST | Updated on: Oct 28, 2019 10:58 PM IST
سماجوادی پارٹی کے سینئر لیڈر اعظم خان کی گرفتاری کی خبر سوشل میڈیا پر وائرل ، جانیں کیا ہے سچ ؟

ایس پی لیڈر اعظم خان کی گرفتاری کی خبر سوشل میڈیا پر وائرل ، جانیں کیا ہے سچ ؟

سماجوادی پارٹی کے سینئر لیڈر اعظم خان کو اتوار دیر رات مولانا جوہر علی یونیورسٹی کیمپس سے گرفتار کئے جانے کی خبر سوشل میڈیا پر کافی وائرل ہوگئی ۔ یہ خبر رام پور میں ان وہاٹس ایپ گروپ میں بھی پہنچ گئی ، جس میں رام پور پولیس سے وابستہ متعدد اعلی افسران موجود تھے ۔ جب بات زیادہ بگڑتی نظر آئی تو اے ڈی جی بریلی کے حکم پر رام پور پولیس کو اس معاملہ میں ٹویٹر پر وضاحت کرنی پڑ گئی ۔

رام پور کے سماجی کارکن دانش خان نے بتایا کہ رام پور میں ڈیبیٹ گروپ کے نام سے وہاٹس ایپ پر ایک گروپ چلتا ہے ۔ رات کو اچانک ایس پی لیڈر اعظم خان کی گرفتاری کے مسیجز وائرل ہونے لگے ۔ حالانکہ گروپ میں رام پور سے وابستہ پولیس کے کئی سب انسپکٹر اور دیگر رینک کے افسران بھی شامل ہیں ، لیکن میسجز کے سلسلہ میں کہیں سے کوئی آفیشیل تصدیق نہیں ہورہی تھی ۔

Loading...

اس کے بعد دانش خان نے رام پور پولیس کے افسران سے گرفتاری سے متعلق معلومات حاصل کرنے کے بعد سوشل میڈیا پر بتایا کہ یہ صرف ایک افواہ ہے اور اس پر یقین نہ کریں اور نہ ہی اس کو آگے فارورڈ کریں ۔ بعد ازاں دانش خان کی جانب سے اے ڈی جی بریلی ، آئی جی بریلی اور رام پور پولیس کو ٹویٹر پر اس طرح کے میسیج وائرل ہونے کی جانکاری دی اور اس کے بارے میں معلومات حاصل کرنی چاہی ۔

دانش خان کے ٹویٹ پر اے ڈی جی بریلی نے رام پور پولیس کو ہدایت دی کہ وہ اس معاملہ کی جانچ کریں اور جو لوگ بھی جھوٹا میسیج وائرل کررہے ہیں ، ان کے خلاف کارروائی کریں ۔ ہدایت ملتے ہی رام پور پولیس فورا حرکت میں آگئی ۔ تھانہ کوتوالی میں جھوٹا میسیج وائرل کرنے کے الزم میں نامعلوم افراد کے خلاف مقدمہ درج کیا جارہا ہے ۔ ساتھ ہی ساتھ رام پور پولیس نے ٹویٹ کرتے ہوئے جانکاری دی کہ اعظم خان کی گرفتاری سے وابستہ کوئی معاملہ نہیں ہے ، یہ ایک جھوٹی خبر ہے ۔

اس سلسلہ میں گنج کوتوالی رامپور انچارج نے بتایا کہ سوشل میڈیا پر اعظم خان کی گرفتاری سے متعلق جھوٹی خبر پھیلانے کے الزام میں ایف آئی آر درج کی جارہی ہے ۔ ساتھ ہی ملزم نوجوان کے بارے میں جانچ کی جارہی ہے ۔

Loading...