உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    یوم وفات پر یاد کئے گئے عظیم مجاہد آزادی مولانا ابولکلام آزادؒ

    یوم وفات پر یاد کئے گئے عظیم مجاہد آزادی مولانا ابولکلام آزادؒ

    یوم وفات پر یاد کئے گئے عظیم مجاہد آزادی مولانا ابولکلام آزادؒ

    عظیم مجاہد آزادی اور ملک کے پہلے وزیر تعلیم مولانا ابوالکلام آزادؒ کی یوم وفات کے موقع پر سوموار 22 فروری کو مولانا ابوالکلام آزاد کے ذریعہ قائم کردہ مدرسہ اسلامیہ رانچی میں انہیں یاد کیا گیا۔ اس موقع پر قرآن خوانی اور دعا کے لئے خصوصی اجلاس کا اہتمام کیا گیا۔

    • Share this:
    رانچی: عظیم مجاہد آزادی اور ملک کے پہلے وزیر تعلیم مولانا ابوالکلام آزادؒ کی یوم وفات کے موقع پر سوموار 22 فروری کو مولانا ابوالکلام آزاد کے ذریعہ قائم کردہ مدرسہ اسلامیہ رانچی میں انہیں یاد کیا گیا۔ اس موقع پر قرآن خوانی اور دعا کے لئے خصوصی اجلاس کا اہتمام کیا گیا۔ اجلاس میں مدرسہ اسلامیہ کے پرنسپل مولانا محمد رضوان قاسمی، مولانا محمد حماد قاسمی، مولانا صلاح الدین  مظاہری، مولانا شجاع الحق، ماسٹر محمد ارشاد، شرف الدین رشیدی، آل جھارکھنڈ مدرسہ ٹیچرس ایسوسی ایشن کے جنرل سکریٹری حامد غازی، محمد نسیم خان وغیرہ موجود تھے۔

    نشست سے خطاب کرتے ہوئے محمد رضوان قاسمی نے کہا کہ ہم بہت ہی خوش نصیب ہیں کہ مولانا ابوالکلام آزادؒ کے ذریعہ قائم کردہ مدرسہ اسلامیہ میں خدمات انجام دے رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ مولانا آزادؒ کا رانچی سے خصوصی لگاؤ ​تھا۔ نظربندی کے دوران مولانا ابوالکلام آزادؒ نے یہاں کے لوگوں کی تعلیمی پسماندگی کو دور کرنے کے مقصد سے مدرسہ اسلامیہ کی بنیاد رکھی۔ آج ہمیں مولانا کے خوابوں کو پورا کرنے کے لئے جدوجہد کرنے کی ضرورت ہے۔

    اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے مولانا محمدحماد قاسمی نے کہا کہ وزیر تعلیم کے عہدے پر فائز رہتے ہوئے مولانا ابوالکلام آزادؒ نے ملک کی پہلی انڈین انسٹی ٹیوٹ آف ٹکنالوجی (آئی آئی ٹی) کے قیام سمیت کئی تاریخی کام انجام دیئے ہیں۔ تاہم، 22 فروری 1958 کو ان کا انتقال ہوگیا۔ بھارت رتن مولانا ابوالکلام آزادؒ ہندو مسلم اتحاد کی علامت  بنے رہیں گے۔ انہوں نے ملک میں اتحاد کو فروغ دینے کے لئے جو بھی کام کیا ہے، ملک انہیں کبھی بھی فراموش نہیں کر سکتا۔ انہیں ہمیشہ یاد رکھا جائےگا۔
    Published by:Nisar Ahmad
    First published: