ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

ہوشیار ! اگر اب میرٹھ میں کیا یہ کام تو دینا پڑسکتا ہے بھاری جرمانہ

نگر نگم کے تازہ فرمان کے مطابق اب سڑک پر تھوکنے سے لیکر کچرا پھیلانے اور نالی میں غلیظ بہانے پر نگر نگم سو روپے سے لیکر بیس ہزار روپے تک کی رقم جرمانے کے طور پر وصول کریگا ۔

  • Share this:
ہوشیار ! اگر اب میرٹھ میں کیا یہ کام تو دینا پڑسکتا ہے بھاری جرمانہ
ہوشیار ! اگر اب میرٹھ میں کیا یہ کام تو دینا پڑسکتا ہے بھاری جرمانہ

میرٹھ کو اسمارٹ سٹی بنانے کے ارادے کے ساتھ ہی شہر کی صاف صفائی کو لیکر بھی ضلع انتظامیہ اور نگر نگم کی جانب سے کئی منصوبے بنانے گئے تھے ۔ اسی مہم کے تحت اب نگر نگم گندگی پھیلانے والوں پر جرمانہ لگا کر شہر کو صاف ستھرا اور اسمارٹ بنانا چاہتا ہے ، لیکن شہر سے کوڑا اٹھانے سے لیکر پچھڑے علاقوں میں صاف صفائی ، سیویج اور پینے کے پانی کے انتظام کو بہتر بنانے میں ناکام نگر نگم اب ان اسکیموں کے ذریعہ اپنی ناکامی چھپانے کی کوشش کر رہا ہے ۔


نگر نگم کے تازہ فرمان کے مطابق اب سڑک پر تھوکنے سے لیکر کچرا پھیلانے اور نالی میں غلیظ بہانے پر نگر نگم  سو روپے سے لیکر بیس ہزار روپے تک کی رقم جرمانے کے طور پر وصول کریگا ۔ میونسپل کمشنر کے مطابق ایسا میرٹھ کو اسمارٹ سٹی بنانے کے شروعاتی اقدام کو دیکھتے ہوئے شہر میں صاف صفائی رکھنے کی عادت پیدا کرنے کے مقصد سے کیا جا رہا ہے ۔


وہیں مقامی افراد اور خود نگر نگم کارپوریٹر  نگر نگم کے اس تازہ فرمان کو محض دکھاوا قرار دیتے ہیں اور صاف صفائی کے بدتر حالات کے لئے خود نگر نگم اور انتظامیہ کو ذمہ دار مانتے ہیں ۔


کسی بھی شہر کو اسمارٹ یا صاف ستھرا بنانے کے لئے ضلع انتظامیہ کو عام شہریوں کے ساتھ مل کر  مشترکہ کوششیں انجام دینے کی ضرورت ہوتی ہے ، لیکن جب نگر نگم جیسا اہم محکمہ اپنی ذمہ داریوں کا دائرہ محض جرمانہ وصولنے تک محدود کر لیتا ہے ، تو کسی بھی اسکیم کا کامیاب ہونا مشکل ہو جاتا ہے ۔
First published: Feb 06, 2020 11:34 PM IST