ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

Monsoon Session of Parliament: پہلی خوراک کے بعد اراکین پارلیمنٹ کو مانسون اجلاس میں شرکت کے لیے آر ٹی پی سی آر ٹسٹ ضروری نہیں!

وزارت صحت اور آئی سی ایم آر (health ministry and ICMR) کے ذریعہ پارلیمنٹ کو دیئے جانے والے جواب میں مشورہ دیا گیا ہے کہ جو رکن ویکسین کی ایک خوراک بھی نہیں لے پایا ہے، اسے لازمی طور پر آر ٹی پی سی آر ٹیسٹ کروانا چاہئے جو ہر دو ہفتوں سے زیادہ نہ ہو

  • Share this:
Monsoon Session of Parliament: پہلی خوراک کے بعد اراکین پارلیمنٹ کو مانسون اجلاس میں شرکت کے لیے آر ٹی پی سی آر ٹسٹ ضروری نہیں!
فائل فوٹو

پارلیمنٹ کے مانسون اجلاس (monsoon session of the Parliament) کے لیے محض ایک ہفتہ باقی ہے، اس دوران تمام اراکین پارلیمنٹ کو ایک نوٹیفکیشن بھیجا گیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ اگر انہیں ویکسین کی اپنی پہلی یا دوسری خوراک مل گئی ہے تو انہیں پارلیمنٹ میں داخلہ کے لیے لازمی طور پر آر ٹی پی سی آر ٹیسٹ (RT-PCR test) کرانے کی ضرورت نہیں ہوگی۔


پہلے یہ غور و خوض کیا جارہا تھا کہ اراکین پارلیمنٹ اور دیگر عملے سے اجلاس کی شروعات سے قبل آر ٹی پی سی آر ٹیسٹ کرانے کو لازمی کردیا جائے، تاکہ کووڈ کے پھیلاؤ سے بچا جاسکے، کیونکہ کچھ لوگوں میں دونوں خوراک لینے کے بعد بھی کووڈ۔19 مثبت پایاگیاتھا۔


سی این این نیوز 18 کے ذریعہ خصوصی طور پر حاصل ہونے والے تفصیلات کے مطابق اراکین پارلیمنٹ کو مطلع کیا گیا ہے کہ جن اراکین نے میڈیکل کے علاوہ کسی اور وجہ کے سبب ویکسین نہیں لی ہے وہ پارلیمنٹ میں قائم سینٹر یا کسی اور جگہ پر جلد سے جلد ویکسین حاصل کریں۔


پارلیمنٹ آف انڈیا کی عمارت۔(فائل فوٹو: نیوز18)۔
پارلیمنٹ آف انڈیا کی عمارت۔(فائل فوٹو: نیوز18)۔


وزارت صحت اور آئی سی ایم آر (Health Ministry and ICMRٓ) کے ذریعہ پارلیمنٹ کو دیئے جانے والے جواب میں مشورہ دیاگیا ہے کہ جو ارکان ویکسین کی ایک خوراک بھی نہیں لے پائیں ہے، اسے لازمی طورپر آر ٹی پی سی آر ٹیسٹ کروانا چاہئے جو ہردو ہفتوں سے زیادہ نہ ہو۔ اس اصول کا اطلاق نہ صرف اراکین پارلیمنٹ پر بلکہ جو بھی پارلیمنٹ میں داخل ہورہاہے اس پر ہوگا۔

واضح رہے کہ راجیہ سبھا (Rajya Sabha) میں 206 سے زیادہ اراکین پارلیمنٹ کو ویکسین کی دونوں خوراکیں موصول ہوچکی ہیں اور ان میں سے صرف 6 طبی وجوہات کی وجہ سے ویکسین کی ایک خوراک لینے سے قاصر ہیں۔ لوک سبھا (Lok Sabha) کے 450 سے زیادہ اراکین کو بھی ویکسین ملی ہے۔

پارلیمنٹ کا مانسون اجلاس 19 جولائی سے شروع ہوگا جو 13 اگست 2021 تک جاری رہے گا جس میں تمام کووڈ۔19 پروٹوکول کے نفاذ یقینی بنایا جائے گا، جس میں تمام اراکین کے لئے شرکت شامل ہے۔ اراکین پارلیمنٹ کو یہ بھی مشورہ دیا گیا ہے کہ وہ بڑی تعداد میں ایک ساتھ جمع نہ ہوں یا مظاہرے نہ کریں۔ سینٹرل ہال کے اراکین کے علاوہ کسی اور ہال کے استعمال کی سفارش نہیں کی جاتی ہے اور سماجی دوری کے ساتھ بلوں کے دستاویزات کے لئے کاغذات کے استعمال میں کمی لانے کی بھی سفارش کی گئی ہے۔

پیر اور جمعہ کی درمیانی شب صبح 11 بجے سے شام 6 بجے کے درمیان دونوں ایوانوں میں بیک وقت کام کرنے کے ساتھ سیشن کا وقت معمول کے مطابق شروع ہوگا۔
Published by: Mohammad Rahman Pasha
First published: Jul 11, 2021 10:46 AM IST