ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

مرد میرے ساتھ اچھا برتاو نہیں کرتے ہیں اور وہ صرف سیکس کے لئےکرتے ہیں میرا استعمال

مرد میرے ساتھ اچھا برتاو نہیں کرتے ہیں اور وہ صرف سیکس کے لئے میرا استعمال کرتے ہیں۔ مجھے تو اتنا بھی نہیں پتہ ہے کہ جب وہ مجھ میں دلچسپی لیتے ہیں تو میں ان کے ساتھ کیسے بات کروں۔ میں کیا کروں۔

  • Share this:
مرد میرے ساتھ اچھا برتاو نہیں کرتے ہیں اور وہ صرف سیکس کے لئےکرتے ہیں میرا استعمال
مرد میرے ساتھ اچھا برتاو نہیں کرتے ہیں اور وہ صرف سیکس کے لئےکرتے ہیں میرا استعمال

سوال:  مرد میرے ساتھ اچھا برتاو نہیں کرتے ہیں اور وہ صرف سیکس کے لئے میرا استعمال کرتے ہیں۔ مجھے تو اتنا بھی نہیں پتہ ہے کہ جب وہ مجھ میں دلچسپی لیتے ہیں تو میں ان کے ساتھ کیسے بات کروں۔ میں کیا کروں۔


ہم کسی کے برتاو کو کنٹرول نہیں کرسکتے، لیکن کسی کو ہم خود کے ساتھ برا برتاو کرنے کی اجازت دینا جاری رکھیں یا نہیں، اس کے برے برتاو کو شہہ دیں یا نہیں، یا جان بوجھ کر اس سے دور جائیں اور اپنے عزت نفس کو ٹوٹنے سے بچائیں، ان باتوں کو ہم ضرور کنٹرول کرسکتے ہیں۔ اگر مردوں کے ساتھ آپ کے تعلقات اچھے نہیں ہونے کی تاریخ رہی ہے تو یہ ضروری ہے کہ آپ اپنی سرحدوں کے بارے میں آتم منتھن کریں اور یہ دیکھنے کی کوشش کریں کہ بغیر کچھ سمجھے آپ اپنے پارٹنر کے ہاتھ میں اپنا کتنا کنٹرول کیسے دے دیتی ہیں۔


ہمارے درمیان دنوں کے برتاو ہمیں بہت کچھ سکھاتے ہیں اور یہ ہمارے موجودہ کو آکار دے سکیں گے اور یہاں تک کہ ہمارے مستقبل کو بھی۔ دیکھئے کہ کیا جن مردوں سے آپ ملتی ہیں، ان سے آپ نے اپنی خواہش شروع میں ہی واضح کردی ہیں کہ آپ نے ان تعلقات ے کیا امید رکھتی ہیں۔ کئی بار کسی تعلق کو جاری رکھنے کی ہتاشا میں کئی بار ہم اپنے پارٹنروں کے برے برتاو کو جائز ٹھہرانے کے لئے کئی طرح کے بہانے بناتے ہیں۔ اپنے مفاد کو بچانے کے لئے ہمیں صحتمند سرحدوں کو طے کرنا چاہئے جو کہ ہمارے بھلے کے لئے ہو اور یہ ہمیں ہمارے ممکنہ پارٹنروں کے ساتھ جڑنے میں مدد کرے۔ کیونکہ جب آپ کی اہمیت کو کوئی پہچانتا ہے اور آپ کے بارے میں اچھا سوچتا ہے، تبھی آپ کسی کو وہ دے پائیں گی، جو وہ آپ کو دے رہا ہے۔


تو اس طرح کی سرحدوں کے عزم اور اس کو لاگو کرنے کی بات کو کس طرح نافذ کریں؟ پہلا قدم یہ ہے کہ کسی ریلیشن شپ میں ایسے کون سی قیمت ہیں، جن پر کوئی سمجھوتہ نہیں ہوسکتا۔ مثال کے لئے: اگر کوئی شخص ریلیشن شپ کو یکطرفہ سمجھتا ہے، جس میں وہ لیتا سب کچھ ہے، لیکن کچھ بھی دینے سے چوک جاتا ہے۔ ایک بار جب آپ یہ طے کرلیتی ہیں کہ آپ کے لئے کون سی قیمت بیش قیمتی ہیں، تو اگلا قدم یہ ہے کہ خاص طور پر جب بھی اس سرحد کا پہلی بار خلاف ورزی ہوتی ہے کہ آپ اس بارے میں اسے بتا دیں۔

 
Published by: Nisar Ahmad
First published: Mar 09, 2021 10:56 PM IST