ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

رمضان المبارک کو لے کر مرکزی وزارت اقلیتی امور نے تیار کیا روڈ میپ ، اپنایا جائے گا یہ طریقہ

مختار عباس نقوی نے سبھی ریاستی وقف بورڈ کے عہدیداروں سے رمضان کے مقدس مہینے کے دوران عبادات ، افطار ، تراویح اور دیگر مذہبی سرگرمیوں کی عبادت میں مرکزی وزارت داخلہ ، ریاستی حکومتوں اور مرکزی وقف کونسل کی ہدایتوں کی تعمیل کو یقینی بنانے کے لئے فعال کردار ادا کرنے کو کہا ۔

  • Share this:
رمضان المبارک کو لے کر مرکزی وزارت اقلیتی امور  نے تیار کیا روڈ میپ ، اپنایا جائے گا یہ طریقہ
رمضان المبارک کو لے کر وزارت اقلیتی امور نے تیار کیا روڈ میپ ، اپنایا جائے گا یہ طریقہ

ملک میں کورونا کو لے کر برتی جارہی احتیاط اور موجودہ حالات میں سماجی دوری بنائے رکھنے کو لے کر بیداری پیدا کرنے کے لئے وزارت اقلیتی امور حکومت ہند نے رمضان المبارک کے لئے روڈ میپ تیار کیا ہے ۔ تاکہ رمضان میں کورونا وائرس کے سلسلے میں کوئی بد احتیاطی نہ ہو اور کسی طرح کی گڑبڑی سامنے نہ آئے ۔ مرکزی وزیر مختار عباس نقوی نے 30 سے زیادہ ریاستی وقف بورڈ کے افسران اور چیئرمین کے ساتھ ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعہ بات چیت کرتے ہوئے وقف افسران کو ذمہ داری دی ہے کہ وہ اس سلسلے میں مسلمانوں میں بیداری پیدا کرنے میں اہم کردار ادا کریں ۔ مختار عباس نقوی نے سبھی ریاستی وقف بورڈ کے عہدیداروں سے رمضان کے مقدس مہینے کے دوران عبادات ، افطار ، تراویح اور دیگر مذہبی سرگرمیوں کی عبادت میں مرکزی وزارت داخلہ ، ریاستی حکومتوں اور مرکزی وقف کونسل کی ہدایتوں کی تعمیل کو یقینی بنانے کے لئے فعال کردار ادا کرنے کو کہا ۔


مسٹر نقوی نے کہا کہ کورونا کے چیلنجوں کے پیش نظرملک کے تمام مندروں ، گردواروں ، گرجا گھروں اور دیگر مذہبی سماجی مقامات پر تمام مذہبی اور معاشرتی سرگرمیاں رک گئیں ہیں ۔ اسی طرح تمام مساجد اور دیگر مسلم مذہبی مقامات پر پرہجوم مذہبی سرگرمی نہیں ہورہی ہے ۔


مسٹر نقوی نے کہا کہ کورونا کی تباہی کی وجہ سے رمضان کے مقدس مہینے کے دوران ملک کے تمام خطوں سے آئے ہوئے مذہبی رہنماؤں اور ملی و سماجی تنظیموں کو گھروں میں سماجی دوری بنائے رکھنے کو یقینی بنانا ہوگا ۔ کیونکہ دنیا کی بیشتر مسلم اقوام نے رمضان المبارک میں مساجد اور دیگر مذہبی مقامات پر ہجوم یا سرگرمیوں پر بھی پابندی عائد کردی ہے ۔


مسٹر نقوی نے تمام ریاستی وقف بورڈس ، مذہبی اور سماجی تنظیموں سے کہا کہ ہمیں فرضی خبروں اور سازش کو سمجھنا چاہیے ۔ بغیر کسی امتیاز کے تمام شہریوں کی بھلائی کے لئے کام کرنا ہے ۔  اس طرح کی سازش کورونا کے خلاف ملک کی اجتماعی جنگ کو کمزور کرنے کی کوشش ہے ۔  یکجہتی کے ساتھ ایسی سازشوں ، پروپیگنڈوں ، افواہوں پر قابو پانے اور کورونا کے خلاف اس جنگ کو جیتنے کے لئے ہم سب کو چوکنا اور چوکس رہنا ہوگا ۔  واضح رہے کہ ملک کے مختلف وقف بورڈ کے تحت 7 لاکھ سے زیادہ رجسٹرڈ مساجد ، عید گاہیں ، درگاہیں ، امام باڑہ اور دیگر مذہبی سماجی مقامات موجود ہیں ۔ مرکزی وقف کونسل ریاستوں کے وقف بورڈ کی ریگولیٹری باڈی (ریگولیٹری باڈی) ہے
First published: Apr 16, 2020 08:59 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading