ہوم » نیوز » وطن نامہ

حوثی باغیوں کا مکہ مکرمہ پرراکٹ حملہ ، کہیں گھیرا بندی کرکے سعودی عرب کو کمزور کرنے کی سازش تو نہیں؟

یمن میں موجودحوثی باغی ایران کی شہ پرآئینی حکومت کاتخت پلٹنے کی کوشش کی اورکئی شہروں پربزورطاقت حملہ کیااوروہاںکی آبادیوں اورمکانات کوتہس نہس کردیا۔

  • Pradesh18
  • Last Updated: Oct 31, 2016 10:09 AM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
حوثی باغیوں کا مکہ مکرمہ پرراکٹ حملہ ، کہیں گھیرا بندی کرکے سعودی عرب کو کمزور کرنے کی سازش تو نہیں؟
YouTube

یمنی حوثی باغیوں کے ذریعہ گزشتہ برس یمن میں جمہوری طرزپرقائم حکومت کوسپوتاژکرنے کی ناپاک کوشش نے جنت نشان ملک کوکشت وخون میں غلطاں کردیاہے۔یمن میں موجودحوثی باغی ایران کی شہ پرآئینی حکومت کاتخت پلٹنے کی کوشش کی اورکئی شہروں پربزورطاقت حملہ کیااوروہاںکی آبادیوں اورمکانات کوتہس نہس کردیا۔ حوثی باغی لیڈروں کوحزب اللہ کی بھرپورحمایت حاصل ہے اس لیے عرب اتحادکی افواج کئی مہینوں سے اس پرقابوپانے میں ناکام ثابت ہورہی ہیں ۔ اس جنگ میںجہاں ایک طرف عرب اتحادقوتیں متحدہوکریمن کی حمایت میںبرسرپیکارہیں وہیں دوسری طرف صہیونیت، صلیبیت اورمجوسیت مل کراسلامی ملک یمن میں بربادی کے جشن میں شامل ہے۔دراصل ایران اپنے دیرینہ خواب کوپایۂ تکمیل تک پہونچانے کے لیے عرب ممالک پرناجائزتسلط قائم کرناچاہتاہے تاکہ سعودیہ عربیہ کی گھیرابندی کرکے آسانی کے ساتھ ان کوکمزورکیاجاسکے جس کے لئے اس نے روس اوردرپردہ دوسری مغربی طاقتوں کے ساتھ مل کرشام میںسنیوںکے قاتل بشاراسدکے کندھے سے اپنی بندوق چلارہاہے تاکہ شام میں مکمل طورپر شیعہ اورایران نوازحکومت قائم کی جاسکے۔ اسی طرح عراق میں صدام کی سنی حکومت کوامریکہ اوردیگرصہیونی طاقتوں کے ساتھ مل کرملیامیٹ کردیاگیاجس کی وجہ سے آج تک وہاں امن وامان قائم نہیں ہوسکا۔ خودساختہ اسلامی جمہوریہ اورتقیہ پرورایران کے آنکھ میں سنی اوردیگراسلامی حکومتیں شہ تیرلگتی ہیں جس کی وجہ سے وہ ہرحال میں اپنے ناپاک اورگندے عزائم کوپایہ ٔتکمیل تک پہونچاناچاہتاہے۔ایران کی مسموم سیاست کی وجہ سے یمن چکی کے پاٹ میں برسوں سے پس رہاہے ۔علاوہ ازیں مملکت توحیدسعودی عرب میں موجودشیعہ آبادی والے علاقوں میں اپنی فوجی طاقت بڑھانے کی گھٹیاکوشش کرتاہے جس کے لیے وقفہ وقفہ سے ان شیعہ زدہ علاقوں سے مملکت سعودیہ عربیہ کے خلاف آوازیں اٹھتی رہتی ہیں۔ امسال حج کے موقع پرایرانیوں نے خود حج میں شامل نہ ہونے کافیصلہ کیاجس کی وجہ سے الحمدللہ پورے حج کاماحول پرامن وپرسکون رہا۔

ایران نوازحوثی باغی مسلسل کئی مہینوں سے سعودی عرب کی قیادت میں عرب خلیجی اتحادکے جواب میں سعودیہ کی مختلف مقامات پرراکٹ سے حملہ کررہے ہیں،اس دفاعی قوت کوایران اورروس بھرپورغذافراہم کررہے ہیں جس کی واضح شہادت مکہ حملہ اوردیگرحملوں میں استعمال ہونے والے راکٹ ہیں کیونکہ روس کے پاس سکڈڈی میزائیل ۸۰۰؍کلومیٹرتک مارکرنے کی صلاحیت رکھتاہے ،اسی لیے ہم ونوالہ وہم پیالہ دونوں طاقتیں حوثیوںکی تغذیہ بہم میں کمی نہیں آنے دے رہی رہیں ۔ اس شہ کی وجہ سے حوثی باغی جوابھی تک سعودیہ کے مختلف شہروں کونشانہ بنانے تک محدودگزشتہ روز یمن میں حکومت کے خلاف سرگرم ایران نوازحوثی باغیوں کی طرف سے مہبط وحی ،قلب مؤمن مکہ مکرمہ کوبیلسٹک میزائل کے ذریعہ نشانہ بنانے کی ناکام کوشش کی ۔لیکن الحمدللہ عرب اتحادی افواج کے دفاعی نظام نے حوثی ملیشیاؤں کی جانب سے داغے گئے بیلسٹک میزائل کو مکہ مکرمہ سے۶۵؍ کلومیٹر کی دوری پر فضا میں تباہ کر دیا۔ عرب اتحاد کے مطابق یمن کے صوبے صعدہ سے مکہ مکرمہ کی سمت آنے والے میزائل کو بنا کسی نقصان کے ہدف پر پہنچنے سے قبل ہی ناکارہ بنا دیا گیا۔

عالم اسلام اس وقت صلیبیت،صہیونیت اورمجوسیت کے گرداب میں ہیں ایران نوازباغیوں کے ذریعہ مقامات مقدسہ کونشانہ بنانے کی اس ناپاک کوشش سے پورے عالم اسلام کے جذبات مجروح ہوئے ہیںکیونکہ یہ کوئی معمولی مسئلہ نہیں ہے جس سے آنکھ پھیرلی جائے بلکہ پوری قوت کے ساتھ اس کی مزاحمت ضروری ہے۔ ایران اپنے دیرینہ مسموم عزائم کوحاصل کرنے کے لیے شام ،عراق اوریمن کوفوجی چھاؤنی میں تبدیل کرکے بلادحرمین شریفین کے تقدس کوپامال کرنے کے درپے ہے کیونکہ یہ وہ سرزمین ہے جہاںپرانبیاء کرام اورصحابہ رضوان اللہ علیھم اجمعین مدفون ہیں اورصحابہ کرام کے بارے میںشیعوںکے بیشترمذموم عقائددنیاکے سامنے ہیں۔معلوم ہوکہ خانہ کعبہ کی طرف درپردہ ایران کی یہ پہلی بے ہودہ کوشش نہیں ہے بلکہ اس پہلے بھی ایران خانہ کعبہ پرحملہ کرچکاہے ۔ابوطاہرقرامطی نے حجراسودکوخانہ کعبہ سے چراکربحرین لے کرچلاگیااور۲۲؍سال تک یہ مبارک پتھر انہیں مجوسیوں کی تحویل میں رہابالآخرسخت مزاحمت کے بعددوبارہ حجراسودخانہ کعبہ میں لاکرنصب کیاگیا۔پوری اسلامی تاریخ انہیں کے سیاہ کارناموں سے پُرہے جوکہ بظاہرامت مسلمہ پرداغ ہیں لیکن درحقیقت یہ زرتشت مجوسیوں کی کارستانی کانتیجہ ہیں ۔

ایران نواز حوثی باغیوں کی طرف سے مکہ مکرمہ پر راکٹ حملے کی ناکام مجرمانہ کوشش پر عالم اسلام اور عرب ممالک کی طرف سے سخت غم وغصے کا اظہار کیا جا رہا ہے۔ حوثیوں کی طرف سے مکہ معظمہ کو بیلسٹک میزائل سے نشانہ بنائے جانے کی ناکام کوشش کے بعد عرب ممالک اور اسلامی دنیا کی طرف سے سعودی عرب کے ساتھ اظہار یکجہتی میں بھی اضافہ ہوا ہے جوکہ ایک مستحسن قدم ہے۔بتادیںکہ جمعہ کے روز سعودی فورسز نے یمن سے مکہ مکرمہ پر داغے گئے ایک بیلسٹک میزائل کو فضاء ہی میں تباہ کردیا تھا۔ خلیجی تعاون کونسل نے مکہ پر راکٹ حملے کی کوشش کو کروڑوں مسلمانوں کے جذبات کو مشتعل کرنے کی گھناؤنی سازش قرار دیتے ہوئے عالمی برادری سے حوثیوں کے خلاف سخت پالیسی اختیار کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

دوسری طرف ہندوستان میں موجودتحفظ حرمین شریفین کادعوی کرنے والی جماعتوں نے کعبہ پرایران کے ذریعہ کیے گئے حملہ پرایک لفظ بھی نہیں بولے ،ورنہ اس سے قبل دوران حج پیش آنے والے کرین حادثہ اورمنیٰ میں بھگدڑحادثہ کے موقع پراسی طرح حالیہ دنوں سعودی عرب میں عیسوی کلینڈرکے نفاذ کولیکران تنظیموں کی جانب سے احتجاج اورنعرے بازی کی گئی تاہم مکہ پرہوئے حملہ میں ایک لفظ سننے میں نہیں آرہاکیونکہ انہیں اس بات کاخدشہ ہے کہ ان کے آقاان کی باتوں سے نالاں ہوجائیں گے اوران کاحقہ پانی بندہوجائے گا۔دراصل یہ لوگ تحفظ حرمین کے نام پرامت کے ایک طبقہ کودھوکہ دیتے ہیں جس کے پس پردہ توحیدپرست سعودی حکومت کے خلاف آوازیں کستے ہیں۔ ورنہ اگرحقیقت میں یہ لوگ تحفظ حرمین کے دعویدا رہوتے توعلم لے کرسڑکوں پراتر جاتے اورشیعہ نوازحوثی باغیوں کی مذمت میں چندالفاظ ضروربولتے۔ اسی طرح ہندوستان میں مسلمانوں کی نمائندگی کرنے والی اردومیڈیابھی اس مذموم حرکت میں بہت حدتک شامل ہے ،مکہ مکرمہ پرہوئے حملہ کی خبرکوتاخیرسے شائع کیااوروہ بھی غیراہم اور معمولی واقعہ وحادثہ کی شکل میں بناکرپیش کیا ،جس سے یہ شک یقین میں تبدیل ہوجاتاہے کہ جہاں عالمی میڈیاپریہودیوںکاتسلط قائم وہیں ہندوستانی میڈیاپرکہیں نہ کہیں شیعی تسلط برقرارہے۔ کہاجاتاہے کہ پوری دنیاسمٹ کرایک میزاورموبائل میں آگئی لیکن افسوس ہوتاہے ان خودساختہ مسلم قوم کی نمائندگی کرنے روزناموں کے حرکت پر۔

آج عالم اسلام شیعوں کی تقیہ پروری کی وجہ سے تمام مصائب ومشکلات کاسامناکر رہاہے خودساختہ اسلامی جمہوریہ بظاہر امریکہ، اسرائیل اوردیگرمغربی ممالک کے خلاف آوازیں کستاہے لیکن اندرونی طورپران کی خوش کپیاں جگ ظاہرہیں۔ خانہ کعبہ کئی بارمجوسیوں کے نشانہ پررہاہے ،ولادت نبوی سے قبل ملعون ابرہہ جو یمن سے تعلق رکھتا تھا کعبہ کومسمارکرنے کی نیت سے اپنی ہاتھیوں کے ذریعہ بڑھالیکن اللہ نے اپنی جلالی قوت سے پوری دہشت گردابرہہ کی فوج کوچبائے ہوئے بھوسے میں تبدیل کردیاجس کامکمل تذکرہ قرآن کریم کی سورۃ الفیل میں مذکورہے۔اور آج کے موجودہ عالم شیعیت اور مجوسیت جنہوں نے عالم اسلام کو کشت وخون میں ڈبو رکھا ہے اپنے ناپاک عزائم کے ذریعہ یمنی مجوسی حوثیوں کو خانہ کعبہ پر میزائیل داغنے کا حوصلہ دیا لیکن ’’واللہ خیر الماکرین‘‘ نے اس ناپاک عزائم کو ملیامیٹ کردیا اور مملکت توحید جو پوری دنیا کی آنکھوں میں کھٹکتا ہے کی بھرپور مدد کی۔
مضمون نگار : ہلال احمدسلفی
(نوٹ : یہ مضمون نگار کی ذاتی رائے ہے ۔ پردیش 18اردو مضمون نگار کی رائے کی نہ تو حمایت کرتا ہے اور نہ ہی اس کی مخالفت کرتا ہے۔ )۔
First published: Oct 31, 2016 10:08 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading