ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

مشن یوپی 2022: مسلم - دلت رائےدہندگان کواپنےحق میں لانے کےلئےپرینکا گاندھی نےسنبھالی کمان

سیاسی ماہرین کہتے ہیں کہ فی الحال کانگریس (Congress) کا منتھن مسلم، دلت اوربرہمن ووٹ بینک پر چل رہا ہے۔ پہلے بھی یہ کانگریس کا ووٹ بینک (vote bank) ہوا کرتا تھا، لیکن منڈل اور کمنڈل کی سرگرمی بڑھنے کے بعد کانگریس کا روایتی ووٹرچلا گیا۔

  • Share this:
مشن یوپی 2022: مسلم - دلت رائےدہندگان کواپنےحق میں لانے کےلئےپرینکا گاندھی نےسنبھالی کمان
پرینکا گاندھی مشن یوپی 2022 میں پوری محنت کے ساتھ مصروف ہیں۔ فائل فوٹو

لکھنؤ: دہلی اسمبلی انتخابات ختم ہوتے ہی ایک بارپھر پرینکا گاندھی (Priyanka Gandhi) مشن یوپی (mission UP) کے ایجنڈے پرہیں۔ اترپردیش میں آئندہ اسمبلی انتخابات 2022 میں ہونے ہیں۔ کانگریس جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی نے مشن 2022 کی کمان خود سنبھال رکھی ہے۔ پرینکا گاندھی کےدوروں میں مسلم - دلت رائے دہندگان (ووٹروں) کو اپنے حق میں لانے کی کوشش واضح طور پر دکھائی دے رہی ہے۔ ایجنڈے کو کامیاب بنایا جاسکے اس کےلئےکانگریس نے مسلم اور دلت ایجنڈے پر کام کرنا شروع کردیا ہے۔


مساوات پسندمعاشرہ کےعلمبردار ہیں سنت روی داس


کہا جارہا ہےکہ اسی سلسلے میں کانگریس لیڈر پرینکا گاندھی آج اتوارکو وارانسی کےسیرگووردھن پور پہنچیں گی۔ کانگریس اب مساوات پسند معاشرہ بنانےکی بات کررہی ہے۔ ریاستی کانگریس صدر اجےکمار للو نے اس موضوع پر بات چیت میں کہا 'روی داس جینتی کے موقع پر وہ سیر گووردھن پور میں ماتھا ٹیک کر آشیرواد لیں گی۔ دلت ووٹ بینک کو اپنےحق میں لانےکی کوشش کے سوال پر انہوں نےکہا کہ 'پرینکا گاندھی کی بہت دنوں سے خواہش تھی کہ وہ سنت شرومنی گرو روی داس کی جائے پیدائش سیرگاؤں میں ان کی جینتی پر عقیدت کے ساتھ ماتھا ٹیکیں۔


کانگریس جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی کی پوری توجہ اترپردیش پرہے۔ وہ آئندہ اسمبلی انتخابات سے قبل کانگریس کے قدیم روایتی ووٹ بینک کو پارٹی سے دوبارہ جوڑنا چاہتی ہیں۔
کانگریس جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی کی پوری توجہ اترپردیش پرہے۔ وہ آئندہ اسمبلی انتخابات سے قبل کانگریس کے قدیم روایتی ووٹ بینک کو پارٹی سے دوبارہ جوڑنا چاہتی ہیں۔


کانگریس ریاستی صدر نے کہا کہ سنت روی داسنے سماجی مساوات، بھائی چارہ اور مزدوری کی اہمیت کا پیغام پوری دنیا کو دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان کی بہت قدیم روایت رہی ہے، جو انسان کو انسانی نظریے سے دیکھتی ہے، مذہب اور ذات پات کے چشمے سے نہیں دیکھتی۔ گرو روی داس اس روایت کے علمبردار رہے ہیں، اسی لئے ان کی خیالات اور نظریہ مثالی ہے تاکہ سماج میں مساوات قائم ہوسکے۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ بار بھی پرینکا گاندھی بنارس گئی تھیں تو روی داس مندر گئی تھیں اور پیشانی جھکایا تھا۔

دورہوگئے ووٹ بینک کو واپس لانےکی کوشش

فی الحال کانگریس کا منتھن دلت، مسلم اور برہمن ووٹ بینک پر چل رہا ہے۔ پہلے بھی یہ کانگریس کا ووٹ بینک ہوا کرتا تھا، لیکن منڈل اور کمنڈل کی سرگرمی بڑھنے کے بعد کانگریس کا روایتی ووٹر چلا گیا مسلم سماجوادی پارٹی اور بہوجن سماج پارٹی کی طرف گیا جبکہ دلت بہوجن سماج پارٹی کے ساتھ اور برہمن ووٹ بینک سیاست کو بیلنس کرتا رہا۔ مودی کے اثرنے سیاسی اور سماجی حالات کو بدل کر رکھ دیا۔ مرکز اور ریاست میں دو تہائی اکثریت کےساتھ حکومت بنائی۔ ذرائع کےمطابق اب کانگریس کی ٹیم اسی پرکام کررہی ہےکہ کیسے ان کے روایتی رائے دہندگان واپس آئیں۔
First published: Feb 09, 2020 07:39 AM IST