உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ’گجرات حکومت مہا آرتی پر اپنا موقف واضح کرے‘ Loudspeaker سے متعلق یہ ہیں تازہ پیش رفت

    اذان پر تنازعہ کیوں؟

    اذان پر تنازعہ کیوں؟

    سماج وادی پارٹی (ایس پی) کی خواتین ونگ کی صدر روبینہ خان نے کہا کہ اگر ہندو کارکن علی گڑھ کے 21 کراسنگ پوائنٹس پر ہنومان چالیسہ پڑھتے ہیں، جیسا کہ پہلے اعلان کیا گیا تھا، تو مسلم خواتین مندروں کے سامنے قرآن پڑھیں گی۔ تبصروں کے بعد خان کے خلاف ایف آئی آر درج کی گئی ہے۔

    • Share this:
      لاؤڈ اسپیکر سے متعلق تازہ پیش رفت (Loudspeaker Row Updates): مذہبی مقامات پر لاؤڈ اسپیکر کے استعمال کو لے کر ایم این ایس کے سربراہ راج ٹھاکرے (MNS chief Raj Thackeray) کے طرف سے شروع ہونے والے تنازعہ کے درمیان مہاراشٹر کے ڈائریکٹر جنرل آف پولیس نے اس معاملے پر ضلع کمشنریٹس کے ساتھ میٹنگ کی۔ وزیر داخلہ دلیپ والسے پاٹل نے کہا کہ لاؤڈ اسپیکر سے متعلق رہنما خطوط دو دن میں تیار کیے جا سکتے ہیں۔

      ادھر ریاست اتر پردیش میں وزیر اعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ (Yogi Adityanath) نے رات گئے پولیس کو سخت احکامات جاری کر دیئے۔ افسران کو ہدایت دی گئی ہے کہ وہ چوکسی رکھیں اور اس بات کو یقینی بنائیں کہ کسی بھی سڑک اور عوامی مقام کو مذہبی جلوس کے لیے بلاک نہ کیا جائے۔ حکم نامے میں کہا گیا ہے کہ کسی بھی نئی جگہ پر مائیک نہیں لگائے جائیں گے، جبکہ افسران اس بات کو یقینی بنائیں گے کہ پہلے سے موجود مائیک اجازت کی حد کے اندر ہوں۔ تمام فیلڈ پولیس اہلکاروں کی چھٹیاں 4 مئی تک منسوخ کر دی گئی ہیں۔

      لاؤڈ اسپیکر کا تنازع کیسے شروع ہوا؟

      یہ تنازعہ اس ماہ کے شروع میں مہاراشٹر نونرمان سینا (MNS) کے سربراہ راج ٹھاکرے کے مساجد کے لاؤڈ اسپیکرز کو بند کرنے کا مطالبہ کرنے کے بعد شروع ہوا اور کہا کہ اگر اسے بند نہیں کیا گیا تو مساجد کے باہر زیادہ آواز میں ہنومان چالیسہ بجانے والے اسپیکر ہوں گے۔ اس بیان پر کئی لیڈروں کی طرف سے ردعمل سامنے آیا، جب کہ کچھ گروپوں نے 'اذان بمقابلہ ہنومان چالیسہ' معاملہ کو ہوا دینے لگا۔

      لاؤڈ سپیکر قطار سے متعلق تمام تازہ ترین اپڈیٹس یہ ہیں:

      • جیسے جیسے لاؤڈ سپیکر پر تنازعہ گرم ہو رہا ہے۔ کیرالہ میں ایک نیا تنازعہ اس وقت کھڑا ہو گیا ہے جب کننور کے کنہیمنگلم میں واقع ایک مندر مالیودو پالوتو کاو کے باہر ایک بورڈ نے کہا کہ تہوار کے وقت مسلمانوں کو احاطے کے اندر جانے کی اجازت نہیں ہے۔ 14 اور 19 اپریل کے درمیان مندر میں ویشو سے متعلق تہوار کے دوران لگائے گئے بورڈ نے علاقے میں احتجاج شروع کر دیا ہے۔ دی نیوز منٹ کی ایک رپورٹ کے مطابق، یہ پہلی بار نہیں ہے کہ ویشو کے دوران مندر کے باہر اس طرح کا بورڈ دیکھا گیا ہو۔ پچھلے سال بھی مندر کے باہر اسی پیغام کے ساتھ ایک ایسا ہی بورڈ لگایا گیا تھا۔

      • راج ٹھاکرے نے لاؤڈ اسپیکر کے معاملے پر اپنی اگلی حکمت عملی طے کرنے کے لیے صبح 10.30 بجے اپنی رہائش گاہ 'شیوتیرتھ' پر اپنی پارٹی کے تمام عہدیداروں کے ساتھ میٹنگ کی۔ ایم این ایس لیڈر نتن سردیسائی نے کہا کہ پارٹی کارکن اکشے ترتیا کے موقع پر 3 مئی کو ریاست بھر میں اپنے مقامی مندروں میں 'مہا آرتی' کریں گے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ’’آرتی لاؤڈ اسپیکر کا استعمال کرتے ہوئے کی جائے گی۔

      مزید پڑھیں: TMREIS: تلنگانہ اقلیتی رہائشی اسکول میں داخلوں کی آخری تاریخ 20 اپریل، 9 مئی سے امتحانات

      • راج ٹھاکرے نے لاؤڈ اسپیکر کے معاملے پر اپنی اگلی حکمت عملی طے کرنے کے لیے صبح 10.30 بجے اپنی رہائش گاہ 'شیوتیرتھ' پر اپنی پارٹی کے تمام عہدیداروں کے ساتھ میٹنگ کی۔ ایم این ایس لیڈر نتن سردیسائی نے کہا کہ پارٹی کارکن اکشے ترتیا کے موقع پر 3 مئی کو ریاست بھر میں اپنے مقامی مندروں میں 'مہا آرتی' کریں گے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ’’آرتی لاؤڈ اسپیکر کا استعمال کرتے ہوئے کی جائے گی۔

      • ایک دن پہلے مہاراشٹر کے وزیر داخلہ دلیپ والسے پاٹل نے کہا تھا کہ پولیس کے ڈائریکٹر جنرل اور ممبئی کے پولیس کمشنر عوامی مقامات پر لاؤڈ اسپیکر کے استعمال کے لیے رہنما اصول وضع کریں گے۔ اگلے 1 دو دنوں میں رہنما خطوط جاری کیے جائیں گے۔ ہم نے ریاست میں امن و امان کی صورتحال پر نظر رکھی ہے۔ ریاست میں امن کو خراب کرنے کی کوشش کرنے والوں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔

      مزید پڑھیں: Jobs in Telangana: تلنگانہ میں 80 ہزار نئی نوکریوں کا اعلان، لیکن پہلے سے وعدہ شدہ اردو کی 558 ملازمتیں ہنوز خالی!

      • علی گڑھ میں انتظامیہ نے کہا ہے کہ لاؤڈ اسپیکر پر مذہبی اعلانات کرنے کے لیے کوئی نئی اجازت نہیں دی جائے گی اور نہ ہی نئی روایت شروع کرنے کی اجازت دی جائے گی۔ اگر کوئی لاؤڈ سپیکر استعمال کرنا چاہتا ہے تو اسے مجسٹریٹ سے اجازت لینا ہوگی۔ متعلقہ محکمہ علاقے کی صورتحال پر نظر رکھنے اور پولیس کی رپورٹ پر غور کرنے کے بعد ہی اجازت دے گا۔

      • سماج وادی پارٹی (ایس پی) کی خواتین ونگ کی صدر روبینہ خان نے کہا کہ اگر ہندو کارکن علی گڑھ کے 21 کراسنگ پوائنٹس پر ہنومان چالیسہ پڑھتے ہیں، جیسا کہ پہلے اعلان کیا گیا تھا، تو مسلم خواتین مندروں کے سامنے قرآن پڑھیں گی۔ تبصروں کے بعد خان کے خلاف ایف آئی آر درج کی گئی ہے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: