رانچی میں پھرہجومی تشدد، فٹبال کھیل رہے تین مسلم نوجوانوں کی کردی گئی پٹائی، پولیس نے بچائی جان

ہجومی تشدد کا شکارہوئے مسلم نوجوانوں کا کہنا ہے ہم لوگ گراونڈ میں کھیل رہے تھے، اسی وقت بھیڑآتی ہے اورہماری پٹائی کرنے لگتی ہے۔ پولیس نےکسی طرح سے ان کی جانچ بچائی ہے۔

Jul 06, 2019 09:34 PM IST | Updated on: Jul 06, 2019 09:36 PM IST
رانچی میں پھرہجومی تشدد، فٹبال کھیل رہے تین مسلم نوجوانوں کی کردی گئی پٹائی، پولیس نے بچائی جان

رانچی میں تین مسلم نوجوانوں کی موب لنچنگ کا معاملہ سامنے آیا ہے۔

رانچی ایئرپورٹ کے برابرمیں واقع کھیل گراونڈ میں کھیل کے دوران تین مسلم نوجوانوں کی پٹائی کردی گئی۔ اطلاعات کے مطابق کرتے پاجامے میں فٹبال کھیل رہے تین مسلم نوجوانوں کو 30-25 لوگوں کا ہجوم آتا ہے اوران کی پٹائی کردی جاتی ہے۔ پولیس نے کسی طرح سے تین نوجوانوں کی جان بچائی۔ اہل خانہ کےذریعہ  نورنڈا تھانےمیں معاملہ درج کرایا ہے۔ ساتھ ہی مقامی لوگوں نے اہل خانہ کے ساتھ ورنڈا تھانہ کا گھیراو غنڈوں کی گرفتاری کا مطالبہ کیا۔ کانگریس نے بھی معاملے کی مذمت کرتے ہوئے سخت کارروائی کا مطالبہ کیا ہے۔

مسلم نوجوانوں کا کہنا ہے کہ جس وقت ہم گراونڈ میں کھیل رہے تھے، اس وقت بھیڑآتی ہے اورجلوس نکلوانے اورریلی نکلوانے کی بات کرتے ہوئے پٹائی کرنے لگتی ہے۔ ایک نوجوان کا یہ بھی کہنا ہے کہ دوڑا کرہمارے سروں پرپتھرسے مارا گیا۔ انہوں نے یہ بھی بتایا کہ ہجوم میں شامل لوگ دھاردارہتھیاربھی لائے تھے۔ اطلاعات کے مطابق گزشتہ روز مسلم متحدہ محاذ کی جانب سے جھارکھنڈ کےتبریز انصاری موب لنچنگ کے خلاف اورہجومی تشدد معاملےکو لےکرجمع ہوئے تھے، اس کے بعد جلسے سے واپس جاتے ہوئے لوگوں کو بھی کچھ شرپسند عناصر کے ذریعہ بھڑکانے کی کوشش کی گئی تھی، جس کے بعد امن پسند لوگوں اورپولیس کی مداخلت سے معاملے کوپرامن بنایا گیا تھا۔ اس کے بعد پھر یہ دوسرا  واقعہ رونما ہوا ہے۔

Loading...

اس پورے معاملے میں تینوں نوجوانوں کو چوٹ لگی ہے۔ حادثہ کے بعد مسلم گروپ کی طرف سے بڑی تعداد میں پہنچے لوگ نورنڈا تھانہ کا گھیراو کردیا اورقصورواروں کے خلاف سخت کارروائی اورگرفتاری کا مطالبہ کیا۔ وہیں رات میں نورنڈا تھانہ سے بھیڑاقرا مسجد کے پاس جمع ہوگئی اورمین روڈ کوجام کردیا۔ اس دوران مشتعل لوگوں نے میڈیا کوریج بھی نہیں کرنے دیا۔ پولیس نے سجاتا چوک کے پاس سے ہی البرٹ ایکا چوک جانے والی گاڑیوں کا راستہ تبدیل کردیا ہے اورمشتعل لوگوں کو سمجھانے کی کوشش کررہی ہے۔

Loading...